PDA

View Full Version : ماں



محمدانوش
03-30-2015, 05:37 PM
1747

ماں
ماں سے متعلق کچھ اشعار آپ سب دوستوں کی خدمت میں ارسال کر رہا ہوں۔ امید کرتا ہوں پسند آئیں گے

اے اندھیرے دیکھ لے تیرا منہ کالا ہوگیا
میری ماں نے آنکھیں کھول دیں گھر میں اجالا ہوگیا

اس طرح وہ میرے گناہوں کو دھو دیتی ہے
ماں بہت غصے میں ہو تو رو دیتی ہے

کسی کو گھر ملا حصے میں کسی کو دُکاں آئی
میں گھر میں سب سے چھوٹا تھا میرے حصے میں ماں آئی

بلندی دیر تک کس کے حصے میں رہتی ہے
بہت اونچی عمارت ہرگھڑی خطرے میں رہتی ہے
بہت جی چاہتا ہے قید جہاں سے ہم نکل جائیں
تمہاری یاد بھی لیکن اسی ملبے میں رہتی ہے
یہ ایسا قرض ہے جو میں ادا کر ہی نہیں سکتا
میں جب تک گھر نہ لوٹوں میری ماں سجدے میں رہتی ہے

میری خواہش ہے کہ میں پھر سے فرشتہ ہوجاوں
میں سے اسطرح لپٹ جاوں کہ بچہ ہوجاوں
کم سے کم بچوں کے ہونٹوں کی ہنسی کی خاطر
ایسے مٹی میں ملانا کہ کھلونا ہوجاوں

مجھ کو ہر حال میں بخشے گا اجالا اپنا
چاند رشتے میں نہیں لگتا ہے ماما اپنا
میں نے روتے ہوئے پونچھے تھے کسی دن آنسو
مدتوں ماں نے نہیں دویا ڈوپٹہ اپنا

عمر بھر خالی یونہی مکان رہنے دیا
تم گئے تو دوسرے کو کب یہاں رہنے دیا
میں نے کل شب چاہتوں کی سب کتابیں پھاڑ دیں
صرف ایک کاغذ پر لکھا (شبد) لفظ ماں رہنے دیا

اللہ پاک سب کی ماوں کا سایہ ان پر تا حیات قائم و دائم رکھے ۔ اور میرے سمیت جن کی مائیں چلی گئی ہیں انکو اپنی جوار رحمت (جنت الفردوس) میں اعلی و ارفع مقام نصیب فرمائے ۔ آمین

تانیہ
03-31-2015, 03:34 PM
آمین ثم آمین
بہت خوب
زبردست۔۔۔۔۔واہ

محمدانوش
04-01-2015, 03:47 PM
شکریہ لاڈو