PDA

View Full Version : پاک چین دوستی - نیا افق



بےباک
04-21-2015, 06:49 AM
http://dailycapital.pk/wp-content/uploads/2015/01/pak-china11111-640x480-770x470.jpghttp://i1.tribune.com.pk/wp-content/uploads/2011/10/266162-PakChina-1317675115-413-640x480.jpg

چین کے صدر شی جن پنگ نے کہا ہے کہ پاکستان اور چین کے درمیان طے پانے والے منصوبوں میں 30 سے زائد منصوبے اقتصادی راہداری سے متعلق ہیں۔

دو روزہ دوسرے پر اسلام آباد پہنچنے کے بعد پاکستانی وزیراعظم میاں نواز شریف سے ملاقات کے بعد ان کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کی۔
اپنے خطاب میں پاکستان کے وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان اور چین نے 51 معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں پر دستخط کیے ہیں۔
انھوں نے کہا کہ ’آج ہم نے مستقبل کی منصوبہ بندی کی ہے اور ہمارے تعلقات کا اہم جزو مستقل مزاجی ہے۔‘
اقتصادی راہداری کے منصوبے پر بات کرتے ہوئے پاکستان کے وزیراعظم نے کہا کہ اس سے تمام صوبوں کو فوائد ملیں گے اور اس سے پاکستان خطے میں اقتصادی لحاظ سے مضبوط ہو گا۔
پاکستان کے وزیراعظم نے کہا کہ اقتصادی راہداری چین کے لیے بھی ایشا کے مختلف ممالک سمیت مشرقِ وسطیٰ اور افریقہ کے ممالک تک رسائی اور وہاں تجارت اور سرمایہ کاری کے لیے ایک سستا راستہ ثابت ہو گا۔ انھوں نے کہا کہ ’یہ راہداری امن اور خوشحالی کی علامت بنے گی۔‘

چین کے صدر شی نے پاکستان کے عوام اور حکومت کا پرجوش استقبال کرنے پر شکریہ ادا کیا۔
انھوں نے کہا کہ کہ دورے کا مقصد دو طرفہ تعلقات کو مضبوط کرنا ہے۔
شی جن پنگ نے انسدادِ دہشت گردی کے لیے پاکستان کی کوششوں کو سراہا اور کہا کہ واس سلسلے میں پاکستان کی مدد جاری رکھیں گے۔
صدر شی نے بھی وزیراعظم نواز شریف کی طرح اپنے ملک کی خارجہ پالیسی میں پاکستان کو اہم قرار دیا: ’ہم پاکستان کے ساتھ تعلقات کو چین کی خارجہ پالیسی میں ہمیشہ ترجیحی رخ پر رکھتے ہیں۔‘
اپنے خطاب میں چین کے صدر نے پاکستان کے بانی محمد علی جناح کا ذکر بھی لیا اور کہا کہ وہ کہتے تھے کہ صرف مشترکہ اور مسلسل محنت ہی ہمارے خوابوں کو حقیقت میں تبدیل کر سکتی ہے۔
چین کے صدر نے اپنے خطاب میں پاکستان کے ہمسایہ ملک افغانستان کا ذکر بھی کیا اور کہا کہ پاکستان اور چین افغانستان میں مفاہمتی عمل کے لیے تعمیری کردار ادا کرنے پر متفق ہیں تاکہ وہاں امن اور استحکام ہو۔
چین کے صدر نے اعلان کیا کہ ان کا ملک بلوچستان کی تعمیرو ترقی کے لیے میں مفت معاشی مدد فراہم کرے گا۔
ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور چین کے درمیان طےپانے والے معاہدوں میں سے 30 سے زائد اقتصادی راہ داری سے متعلق ہیں۔
انھوں نے بتایا کہ اس میں گوادر پورٹ، قراقرم ہائی وے کی اپ گریڈنگ کے پروجیکٹ کا دوسرا مرحلہ، کراچی اور لاہور موٹر وے سمیت انرجی سمیت مختلف منصوبے شامل ہیں۔
اس سے قبل پاکستان کے وزیراعظم اور چین کے صدر نے مل کر آٹھ منصوبوں کا سنگِ بنیاد رکھا۔
اس سلسلے میں منعقد ہونے والی خصوصی تقریب میں دونوں ممالک کے سربراہان سمیت وزرا اور دیگر متعلقہ حکام موجود تھے۔

بےباک
04-21-2015, 06:53 AM
چینی صدر شی جن پنگ کے دورۂ پاکستان کے موقع پر پاکستان اور چین نے 51 دستاویزات، معاہدوں اور مفاہمت کی یاداشتوں پر دستخط کیے ہیں۔
اسی موقع پر دونوں ممالک نے آئندہ تین سال میں اپنے تجارتی حجم کو 15 ارب ڈالر سے بڑھا کر 20 ارب ڈالر تک لے جانے کا اعلان بھی کیا ہے۔
پاکستانی وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کے دفتر سے جاری ہونے والے تحریری بیان میں بتایا گیا ہے کہ ان دستاویزات، مفاہمتی یاداشتوں اور معاہدوں میں پاک چائنا راہ داری کے منصوبے کے تحت توانائی، بنیادی ڈھانچے، مواصلات جیسے شعبوں میں اہم ترقیاتی منصوبے شامل ہیں۔
پیر کو جن منصوبوں کی افتتاحی تختیوں کی نقاب کشائی کی گئی ان میں سے


چین کے انڈسٹریل اور کمرشل بینک کی ایک شاخ لاہور میں کھولی جائے گی
بہاولپور کے قائداعظم سولر پارک کے لیے 100 میگا واٹ کا شمسی پاور پلانٹ
ریڈیو پاکستان اور چائنہ ریڈیو انٹرنیشنل کے اشتراک سے ایف ایم 98 دوستی چینل
پاکستان میں چینی ثقافتی مرکز
اسلام آباد میں ایک چھوٹے ہائیڈروپاور پراجیکٹ کا ریسرچ سینٹر
پاک چین کراس باڈر آپٹیکل فائبر کیبل سسٹم پراجیکٹ
لاہور میں اورنج لائن میٹرو ریل ٹرانزٹ سسٹم

دونوں ممالک کے سربراہان نے ملکر پانچ معاہدوں کا سنگ بنیاد بھی رکھا جن میں کروٹ میں 720 میگا واٹ کا پن بجلی منصوبہ، جبکہ داؤد اور سچل میں 50، 50 میگا واٹ جبکہ جھمپر میں 100 میگا واٹ کا ہوا کے ذریعے بجلی پیدا کرنے کا منصوبہ اور زونرگی میں شمسی توانائی کا 900 میگا واٹ کا پراجیکٹ شامل ہیں۔
دونوں ممالک نے ہر قسم کے حالات میں سٹریٹیجک تعاون پر مبنی شراکت داری قائم رکھنے اور معاشی اور تکنیکی شعبوں میں تعاون کرنے کے معاہدہ کیا۔
پاکستان اور چین نے ’ڈیجیٹل ٹیریسٹریل ملٹی میڈیا برڈکاسٹ‘ کے لیے نمائشی منصوبے کے لیے پیشگی مطالعہ کرنے کا معاہدہ بھی کیا ہے۔
انسدادِ منشیات کے لیے سازوسان کی ایک دوسرے کے ہاں منتقلی پر بھی تحریری معاہد ہوا ہے۔ جبکہ دونوں جانب قانون نافذ کرنے والے اداروں کے لیے ضروری آلات کی فراہمی پر بھی اتفاق کیا گیا ہے۔
پاکستان اور چین کے درمیان گوادر ہسپتال بنانے کے لیے فیزیبیلٹی سٹڈی کرنے کے منصوبے پر بھی بات ہوئی ہے۔
چین کی وزارتِ کامرس نے پاکستان کی وزارتِ خزانہ کو قراقرم ہائی وے کی فیز ٹو جو کہ حویلیاں سے تھاکوٹ کے درمیان ہے کی مزید بہتری کے لیے رعایتی قرضے دے گی۔ اس کے علاوہ کراچی سے لاہور تک موٹر وے کے لیے رعایتی قرض فراہم کرنے کی یاداشت پر دستخط ہوئے ہیں۔
اسی طرح ایک ایسی مفاہمتی یاداشت پر بھی دستخط ہوئے ہیں جس کے تحت گوادر کی بندرگاہ کے مشرق میں ایکسپریس وے بنانے کے لیے چین آسان نرخ پر قرض دےگا۔ علاوہ ازیں گوادر میں بین القوامی ہوائی اڈے کے قیام کے لیے بھی دوست ملک نے پاکستان کو آسان شرائط پر قرض فراہم کرنے کی یاداشت پر دستخط کیے ہیں۔
دونوں ممالک نے موسمیاتی تبدیلیوں سے نمٹنے کے لیے آلات کی فراہمی کے سمجھوتے پر بھی دستخط کیے۔
چین کےنیشنل ڈیویلپمنٹ اینڈ ریفارم کمیشن اور پاکستان کی وزارت برائے منصوبہ بندی و ترقی کے درمیان تعاون کی یاداشت پر بھی دستخط ہوئے۔
گوادر سے نواب شاہ تک مائع گیس پہنچانے کے فریم ورک معاہدے پر بھی دستخط ہوئے۔
لاہور میں اورنج لائن میٹرو ٹرین پربجیکٹ بنانے میں مدد ور اس سلسلے میں کمرشل معاہدہ کنٹریکٹ پر دستخط ہوئے۔
پاکستان کے صوبہ سندھ میں تھر کے علاقے میں کوئلے کے ذریعے بجلی کے حصول کے منصوبے میں تعاون کا معاہدہ طے پایا جبکہ دونوں جانب پنجاب میں شمسی توانائی کے 900 میگاواٹ سولر پراجیکٹ کے بنیادی نکات طے پائے۔
پاکستان کی نمل یونیورسٹی اور چین کی زنجیانگ یونیورسٹی کے درمیان تعلیمی شعبے این آئی سی ای کے قیام کا منصوبہ طے پایا اس کے علاوہ اعلیٰ تعلیم کے لیے دونوں یونیورسٹیوں کے حوالے سے ایک مفاہمتی یاداشت پر بھی دستخط ہوئے۔

بےباک
04-21-2015, 07:26 AM
http://ichef.bbci.co.uk/news/ws/624/amz/worldservice/live/assets/images/2015/04/20/150420111410_xi_jin_ping_pak_visit_640x360_pid_noc redit.jpghttp://ichef.bbci.co.uk/news/ws/624/amz/worldservice/live/assets/images/2015/04/18/150418141719_china_pak_visit_624x351_afp.jpghttp://ichef.bbci.co.uk/news/ws/660/amz/worldservice/live/assets/images/2015/04/20/150420110918_xi_jin_ping_pak_visit_624x351_pid.jpg

سید انور محمود
04-23-2015, 01:39 AM
شکریہ جناب قیمتی اور آئندہ ریسرچ ورک میں کام آنے والی معلومات شکریہ۔