PDA

View Full Version : تم نے اچھا ہی کیا مجھ کو جو پوچھا بھی نہیں



گلاب خان
12-21-2010, 04:10 PM
تم نے اچھا ہی کیا مجھ کو جو پوچھا بھی نہیں

ویسے اس شہر سے میرا کوئی رشتہ بھی نہیں

کب سے روشن ہیں مری آنکھوں میں اشکوں کے دیئے

اک نظر جاتے ہوئے آپ نے دیکھا بھی نہیں

بے نیازِ غم دوراں ہوں یہ سچ ہے لیکن

آپ نے مجھ کو کبھی ٹوٹ کے چاہا بھی نہیں

اتنا آسان ہوا راہِ وفا پر چلنا

کہیں ٹھوکر لگے ایسا کوئی رستہ بھی نہیں

جس سے بھٹکے ہوئے لوگوں کو ٹھکانہ ملتا

اک چراغ ایسا میری را ہوں میں جلتا بھی نہیں

میں تو کیا چیز ہوں یہ شام و سحر رک جائیں

اسی انداز سے پھر تم نے پکارا بھی نہیں

نازؔ اب کس سے کہوں دیدۂ ترکی باتیں

اس بھری بزم میں اب کوئی شناسا بھی نہیں

٭٭٭

تانیہ
12-21-2010, 04:11 PM
واہ.....

این اے ناصر
03-31-2012, 01:35 PM
واہ بہت خوب۔ شکریہ