PDA

View Full Version : امریکہ کے قدیم شہر



حبیب صادق
10-29-2019, 04:35 AM
امریکہ کے قدیم شہر
http://www.oururdu.com/forums/index.php?attachments/upload_2019-10-29_4-32-35-jpeg.42281/&temp_hash=e884d441d6e6a7988d654396c5423fae
طیب رضا عابدی
چار جولائی 1776ء کو امریکہ معرضِ وجود میں آیا لیکن اس کے کئی شہر کئی سو سال پرانے ہیں۔ ان شہروں کی بنیاد یورپیوں نے رکھی۔ ذیل میں ہم اپنے قارئین کو امریکہ کے کچھ قدیم ترین شہروں کے بارے میں بتاتے ہیں۔ سینٹ آگسٹین، فلوریڈا (1565ء) سینٹ آگسٹین (فلوریڈا) کی بنیاد آٹھ ستمبر 1565ء میں رکھی گئی۔ 200 برس سے زیادہ عرصہ تک یہ سپین کے فلوریڈا کا دارالخلافہ رہا۔ 1763ء سے لے کر 1783ء تک اس کا کنٹرول برطانیہ کے پاس رہا۔ اس عرصے کے دوران سینٹ آگسٹین برٹش ایسٹ فلوریڈا کا دارالخلافہ رہا۔ 1783ء میں اس کا کنٹرول دوبارہ سپین کے پاس چلا گیا جو 1822ء تک جاری رہا۔ جب ایک معاہدے کے تحت اس کا الحاق متحدہ ہائے امریکہ کے ساتھ ہو گیا۔ سینٹ آگسٹین 1824ء تک علاقائی دارالخلافہ رہا۔ 1880ء میں ماہرتعمیرات ہنری فلیگلر نے مقامی ریلوے لائنیں خرید لیں اور پھر ہوٹل تعمیر کیے۔ اس طرح فلوریڈا سیاحوں کی توجہ کا مرکز بن گیا۔ اس طرح اس شہر نے ملکی معیشت میں اہم کردار ادا کرنا شروع کر دیا۔ جیمز ٹاؤن، ورجینیا (1607ء) جیمز ٹاؤن کا شمار امریکہ کے دوسرے قدیم ترین شہر میں ہوتا ہے اور یہ شمالی امریکہ میں انگریزوں کی پہلی مستقل نوآبادی تھا۔ 26 اپریل 1607ء کو اس کی بنیاد رکھی گئی اور اسے جیمز فورٹ کہا جاتا تھا۔ 1610ء میں اس شہر کی حالت بدل گئی جب ورجینیا برطانوی نوآبادی بن گیا۔ جیمز ٹاؤن ایک چھوٹا سا شہر بن گیا اور 1696ء تک یہ نوآبادیاتی دارالخلافہ رہا۔ 1865ء کی خانہ جنگی کے بعد شہر کا زیادہ تر حصہ کھنڈر میں تبدیل ہو گیا۔ 1900ء میں اس قدیم شہر کے تحفظ کے لیے کوششیں شروع کر دی گئیں۔ 1936ء میں اسے نیشنل پارک کا درجہ دے دیا گیا۔ 2007ء میں ملکہ الزبتھ دوم نے جیمز ٹاؤن کی 400 ویں سالگرہ کی تقریبات میں مہمان کے طور پر شرکت کی۔ جرسی سٹی، نیوجرسی (1617ء) آج کا جرسی شہر اس سرزمین پر واقع ہے جہاں ولندیزی تاجروں نے 1617ء میں نیونیدرلینڈ کی بستیاں تعمیر کیں۔ تاہم کچھ مؤرخین کے مطابق 1630ء میں ولندیزیوں نے اس شہر کو آباد کرنے کے لیے زمین دی تھی۔ اصل میں یہ علاقہ لی نیپ قبیلے کے پاس تھا۔ اگرچہ امریکی انقلاب کے وقت اس کی آبادی اچھی خاصی تھی لیکن 1920ء تک اسے رسمی طور پر نیوجرسی شہر کا درجہ نہیں دیا گیا تھا۔ 18 برس بعد انتظامی طور پر نیوجرسی شہر کا حصہ تسلیم کر لیا گیا۔ ہیمپٹن، ورجینیا (1610ء) ہیمپٹن کا آغاز پوائنٹ کمفرٹ کی حیثیت سے ہوا۔ انگریزوں نے اسے فوجی کیمپ کے طور پر قائم کیا تھا۔ اس کی بنیاد انہی لوگوں نے رکھی جنہوں نے جیمز ٹاؤن کی بنیاد رکھی۔ دریائے جیمز کے دہانے پر واقع یہ شہرامریکہ کی آزادی کے بعد سب سے اہم فوجی کیمپ بن گیا۔ اگرچہ امریکی خانہ جنگی کے بعد ورجینیا کنفیڈریٹ ریاستوں کا دارالخلافہ بن گیا، ہیمپٹن کا مونرائے قلعہ اس کشمکش کے دوران یونین کے ہاتھ میں رہا۔ یہ بہت قدیم شہر ہے لیکن اس کی قدرتی خوبصورتی سے انکار نہیں کیا جا سکتا۔ ہیمپٹن سیاحوں کے لیے بھی بڑی پُرکشش جگہ ہے اور یہاں دوردراز سے سیاح آتے ہیں۔ نیوپورٹ نیوز، ورجینیا (1613ء) نیوپورٹ نیوز کی بنیاد بھی انگریزوں نے رکھی لیکن 1880ء تک صورت حال بدل گئی جب ریلوے لائنوں نے بحری جہاز کی صنعت کیلئے کوئلہ لانا شروع کر دیا۔ آج نیوپورٹ نیوز بحری صنعت کے لیے بڑے پیمانے پر روزگار فراہم کرنے والا مقام ہے۔ البینی، نیویارک (1614ء) البینی نیویارک ریاست کا دارالخلافہ ہے اور اس کا قدیم ترین شہر ہے۔ یہ سب سے پہلے 1614ء میں آباد ہوا جب ولندیزی تاجروں نے دریائے ہڈسن کے کناروں پر ناساؤ قلعہ تعمیر کیا۔ انگریزوں نے 1664ء میں اس کا کنٹرول حاصل کر لیا اور ڈیوک آف البینی کے اعزاز میں اس کا دوبارہ نام رکھا۔ 1797ء میں یہ ریاست نیویارک کا دارالخلافہ بن گیا اور 20 ویں صدی کے وسط تک علاقے کی معاشی اور صنعتی طاقت بنا رہا۔ البینی میں حکومت کے زیادہ تر دفاتر ایمپائر سٹیٹ پلازہ میں واقع ہیں جس کا فنِ تعمیر عالمی معیار کا سمجھا جاتا ہے۔

Maria
10-29-2019, 11:50 AM
معلومات شیئر کرنے کا شکریہ

حبیب صادق
01-03-2020, 01:26 AM
پسند اور رائے کا شکریہ