PDA

View Full Version : بے کلی، بے خودی کچھ آج نہیں



تانیہ
12-22-2010, 11:54 AM
بے کلی، بے خودی کچھ آج نہیں
ایک مدت سے وہ مزاج نہیں
درد اگر یہ ہے تو مجھے بس ہے
اب دوا کی کچھ احتیاج نہیں
ہم نے اپنی سی کی بہت لیکن
مرضِ عشق کا علاج نہیں
شہرِ خوبی کو خوب دیکھا میر
جنسِ دل کا کہیں رواج نہیں
شاعر میر تقی میر

این اے ناصر
04-03-2012, 09:44 AM
واہ بہت خوب۔ شئیرنگ کاشکریہ۔