PDA

View Full Version : بےباک کی پسند



بےباک
12-24-2010, 11:20 PM
مشیت کو ہوئی منظور جب تخلیق عورت کی

مشیت کو ہوئی منظور جب تخلیق عورت کی
اشارہ پا کے یوں گویا ہوئی ہر چیز فطرت کی
زمین بولی ،الٰہی اس کو میری عاجزی دینا
فلک بولا اسے میرا مذاقِ سرکشی دینا

کہا سورج نے اس پر روشنی قربان کرتا ہوں
قمر کہنے لگا، میں چاندنی قربان کرتا ہوں
پکاری کہکشاں اس پر، میری بیداریاں صدقے
ثریا نے کہا، میرا بھی تاجِ زرفشاں صدقے

کہا شب نے کہ میں اس کو ستاروں سے جِلا دوں گی
شفق بولی کہ میں رنگیں قبا اس پر لٹا دوں گی
صبا کہنے لگی ، اس میں خرام ناز میرا ہو
کلی بولی چٹک کر، شعلہِ آواز میرا ہو

کہا قوس و قزاح نے چھین لو رنگینیاں میری
کہا خلدِ بریں نے، لُوٹ لو شیرینیاں میری
گھٹاؤں نے کہا، معصوم رقت چاہیے اس میں
ٹرپ کر بجلیاں بولیں، شرارت چاہیے اس میں

بہاروں نے ادب سے عرض کی ، رعنائیاں حاضر
وہیں صبحِ قیامت بول اٹھی ، انگڑائیاں حاضر
سحر بولی میری نور افشانی اسے دینا
کہا شبنم نے میری پاک دامانی اسے دینا

کہا چشموں نے ، بےتابی ہماری بخش دے اس کو
پہاڑوں نے کہا، کچھ استواری بخش دے اس کو
کہا صبح وطن نے ، روحِ عشرت پیش کرتی ہوں
پکاری شام ِ غربت، داغِ حسرت پیش کرتی ہوں

حیاداری صدف نے پیش کی ،گوہر نے تابانی
خلش کانٹوں نے، شوخی لالہ نے، نرگس نے حیرانی
مشیت کے لبوں پر اک تبسم ہو گیا پیدا
اسی ہلکے تبسم سے ، تکلم ہو گیا زیادہ

صدائے کن سے ظاہر ہو گیا، شاہکار فطرت کا
ہزاروں ڈھنگ سے ڈھالا گیا پیکر لطافت کا
خدا نے بزمِ فطرت میں یہ شکل نازنین رکھ دی
تو الفت نے وفورِ شوق مین اپنی جبین رکھ دی

جب اس تصویر کی رخ پر خوشی کی لہر سی دوڑی
عناصر کے جمودِ آہنی میں زندگی دوڑی

ہم آغوشی کو اُٹھیں ،نو بہاریں لالہ زاروں سے
صداۓ دل ربا آنے لگی فطرت کے تاروں سے

اوشو
12-24-2010, 11:24 PM
واہ بے باک جی بہت عمدہ نظم شیئر کی آپ نے
بہت اعلی تخلیق ہے جس کی بھی ہے.
شکریہ اس عمدہ شیئرنگ کے لیے

ہم تم
12-25-2010, 12:04 AM
واہ بے باک جی
بہت عمدہ
نظم شیئر کی آپ نے

بےباک
12-25-2010, 09:07 PM
عورت کی تخلیق پر حسب وعدہ دوسری نظم

دل میں صانعِ ازل کے ایک دن آیا خیال
اہلِ دنیا کو دکھائے اپنی حکمت کے کمال
آب و گِل کو دلبری کا اک نیا انداز دے
،پیکرِ بے بال و پر کو طاقتِ پرواز دے

یہ خیال آتے ہی، قدرت ہو گئی مصروف کار
چاند سے سیمیں شعاعیں ، چند لے لیں مستعار
اخذ کی قدرے حرارت ، مہر پُر تنویر سے
کج روئ تھوڑی سی مانگی، آسمان ِپیر سے

لطف زہرہ سے لیا، مریخ سے قہر و غضب
مشتری سے نور،، ظلمت زحل سے کی طلب
رنگ و بوُ پھولوں سے مانگا، شاخ سے انگڑائیاں
برگِ گُل سے تازگی، شمشاد سے رعنائیاں

آنکھ نرگس سے طلب کی، سوسن سے زبان
لاجونتی سے حیاء ، بادِ صبا سے شوخیاں
ناز نافرماں سے،، کلیّوں سے تبسم کی ادا
پیچ و خم سنبل سے مانگا،داغ لالہ سے لیا

آبرو ،گوہر سے مانگی ، موج سے مانگی شکن
جذب مقناطیس سے، مرجان سے مانگا بانکپن
اخذ فرمایا تلّون ، چرخ ِ نیلی فام سے
بادہءگلگوں سے مستی، اور گردش جام سے

برف سے مانگی برودت ،، خامشی تصویر سے
سنگ و آہن سے درشتی، دل خراشی تیر سے
زہر ناگن سے لیا، روباہ سے مکاریاں،
شمع سے سوز نہاں ، بلبل سے اندازِ فغاں

لذتیں فردوس سے ، حوروں سے حسنِ دلنواز
اخذ کی غلماں سے اطاعت، اور فرشتوں سے نیاز
جب فراہم ہو چکے اجزاء یہ سارے ایک ساتھ
ان کی آمیزش کو اُٹھا، صانع قدرت کا ہاتھ

اس مرکب سے بنائی ، ایک تمثالِ حسیں
ماہ سیما، دلرباء، شیریں ادا، ناز آفریں

دیکھ کر یہ پیاری پیاری شکل ، صانع ہنس پڑا
اور اس کافر ادا کا نام عورت رکھ دیا،،

عتیق
12-26-2010, 12:53 AM
واہ جی واہ بے باک بھاءی کے باباکانہ شعررررررررررررررررررررررر ررررررر کمال کردیا ہے شاعر نے لفظوں میں اور جناب نے ادھر لاکر ھمیں ڈکشنری سے بے نیاز کردیا

عتیق
12-26-2010, 01:00 AM
،،وجود زن سے ہے تصویر کائنات میں رنگ،، کی اچھی تشریح ہے یہ اس لیے کہ اس قدر چیزوں نے جب اپنی اپنی خاصیتیں دینے کی پیشکش کی ہے اور دیں ہیں(ھاھاھا) تو پھر تو تصویر میں رنگ ہی نھیں پوری تصویر ہی کہہ لو کائنا ت کی

کا کا سپاہی
12-26-2010, 10:47 AM
بہت ہی عمدہ کلام ہے
شیئر کرنے کا شکریہ

اوشو
12-26-2010, 10:04 PM
میرا خیال تھا مصوری صرف رنگوں کے ساتھ کی جاتی ہے. لیکن یہ دو نظمیں پڑھ کر مجھے پتا چلا کہ الفاظ کے ساتھ مصوری کرنا کیسا کمال کا فن ہے. بہت ہی زبردست.
عمدہ ، کمال ، آفریں

بےباک
12-28-2010, 02:00 AM
وہ زمانہ گزر گیا کہ جب پسینہ گلاب تھا
اب عطر بھی ملو تو پسینہ کی بُو نہیں جاتی

بےباک
03-28-2011, 06:01 PM
منفعت ايک ہے اس قوم کی ‘ نقصان بھی

ايک ايک ہی سب کا نبی دين بھی ايمان بھی ايک

حرم پاک بھی ، قرآن بھی ، اللہ بھی ايک

کچھ بڑی بات تھی ہوتے جو مسلماں بھی ايک

فرقہ بندی ہے کہيں اور کہيں ذاتيں ہيں

کيا زمانے ميں پنپنے کی يہی باتيں ہيں

این اے ناصر
03-28-2011, 10:36 PM
اچھی شاعری ہے، لیکن عطر والا شعرپڑھ کرتو ہنسی آتی ہے۔

تانیہ
03-28-2011, 11:27 PM
واہ واہ بےباک جی ...بہت خوب

وی جے
03-29-2011, 01:58 PM
مزا آ گیا بے باک انکل بہت اچھے:-):-):-)

بےباک
08-17-2011, 10:46 PM
اگر محبت سے نہ انسان آشنا ہوتا
نہ مرنے کا مزہ ہوتا نہ جینے کا مزہ ہوتا

ہزاروں جان دیتے ہیں بتوں کی بے وفائی پر
اگر ان میں سے کوئی با وفا ہوتا تو کیا ہوتا

:th_rose::th_rose::th_rose::th_rose::th_rose:

بےباک
08-17-2011, 10:47 PM
پرائے درد کو اپنا ہی درد جانا ہے ،
ہم اہلِ درد کا رشتہ بہت پرانا ہے ،

بےباک
08-17-2011, 10:49 PM
اثر دل پر کرے شکوہ شکایت ہوتو ایسی ہو
گلے لگ کر کوئی روئے،ندامت ہوتو ایسی ہو
یہی محسوس ہوجیسے کہ صدیاں گزاری ہیں
فقط اک پل کی فرقت میں اذیت ہوتو ایسی ہو
مجھے کانٹا چبھے اور اس کی آنکھوں سے لہو نکلے
تعلق ہوتو ایسا ہو محبت ہوتو ایسی ہو

سیما
08-18-2011, 02:49 AM
:clap:بہت خوب

بےباک
08-18-2011, 03:46 AM
ایک مہتاب ہے یادوں کے افق پر روشن
ایک چہرہ ہے جو آنکھوں سے نہ دیکھا جائے
ہاں یہی ٹھہری ہے گر جرم محبت کی سزا
شوق سے پائے طلب کو بیڑیاں پہنائیے''

بےباک
08-18-2011, 03:47 AM
دل میں آیا ہی تھا تجدید محبت کا خیال
آنکھ سے آنسو گرا شرح تمنا کر گیا

بےباک
08-18-2011, 03:49 AM
دوستو: شکریہ آپ سب کا ۔ یہ آپ سب کی محبت ہے ،ورنہ میں کیا ہوں ۔

جو سمجھ آئے ذہن میں بٹھا لیتا ہوں
بس ایسے ہی، قلم کو چلا لیتا ہوں

من موجی ہوں ہر کوئی لگتا ہے پیارا
پیار سے جو پکارے، اسے اپنا بنا لیتا ہوں

نہ میں شاعر ہوں نہ کوئی ہوں ادیب
بس ہر غم کو اپنے دل سے لگا لیتا ہوں

بےباک
08-18-2011, 03:50 AM
ابھی تو مل کرچلتےہیں سمندر کی مسافت میں
پھر اس کے بعد دیکھیں گے کنارہ کون کرتا ہے
گٹھائیں کون لاتا ہے میری آنکھوں کے موسم میں
پھر اس کے بعد بارش کا نظارہ کون کرتا ہے

بےباک
08-20-2011, 06:38 PM
جن سے مل کر زندگی سے پیار ہو جائے وہ لوگ
آپ نے شاید نہ دیکھے ہوں مگر ایسے بھی ہیں

این اے ناصر
03-31-2012, 01:14 PM
واہ بہت خوب۔ شکریہ

بےباک
04-01-2012, 08:43 PM
جانے کیسا رشتہ ہے میرا اس کی ذات کے ساتھ
وہ ذرا بھی خاموش ہو تو سانس ٹھہر سی جاتی ہے

سیما
04-01-2012, 08:48 PM
زبردست بہت اچھا لکھا آپ نے ۔
شکریہ چاچاجی

abrarhussain_73
04-01-2012, 10:36 PM
ماشاء اللہ