PDA

View Full Version : بگڑے نہ کہیں یہ افسانہ



عبدالرحمن سید
12-25-2010, 01:49 PM
دعاء کرو دل سے کبھی، ٹوٹے نہ کہیں یہ یارانہ
یاد رہے ھمیشہ کبھی، بگڑے نہ کہیں یہ افسانہ

سمیٹ سارے انکے دکھ، جو مل جائے غنیمت جان
پیار کی ہے دولت سوچ لے، ڈوبے نہ کہیں یہ خزانہ

بھنورے گھومے پھریں اُدھر، جل رھی شمع جدھر
خیال تو رکھنا اسکا شمع، جلے نہ کہیں یہ پروانہ

قسمت میں ہے جو لکھا، بدل نہیں سکتے کبھی
کوشش تمام کئےجا بس، ڈولے نہ کہیں یہ پیمانہ

دل میں انہیں بٹھالے اور ، گوشہ جگر میں جگہ دے
دیر نہ کرنا دیکھو اکیلا، رہ جائے نہ کہیں یہ آشیانہ

بےباک
12-25-2010, 07:14 PM
دعاء کرو دل سے کبھی، ٹوٹے نہ کہیں یہ یارانہ
یاد رہے ھمیشہ کبھی، بگڑے نہ کہیں یہ افسانہ

سمیٹ سارے انکے دکھ، جو مل جائے غنیمت جان
پیار کی ہے دولت سوچ لے، ڈوبے نہ کہیں یہ خزانہ
............................

بہت ہی خؤب بھائی عبدالرحمن سید صاحب

عبدالرحمن سید
12-26-2010, 07:15 PM
دعاء کرو دل سے کبھی، ٹوٹے نہ کہیں یہ یارانہ
یاد رہے ھمیشہ کبھی، بگڑے نہ کہیں یہ افسانہ

سمیٹ سارے انکے دکھ، جو مل جائے غنیمت جان
پیار کی ہے دولت سوچ لے، ڈوبے نہ کہیں یہ خزانہ
............................

بہت ہی خؤب بھائی عبدالرحمن سید صاحب



بہت بہت شکریہ،!!!
بےباک جی،!!!!
خوش رہیں،!!!

کا کا سپاہی
12-27-2010, 06:39 PM
بہت ہی خؤب بھائی عبدالرحمن سید صاحب

تانیہ
12-27-2010, 08:52 PM
بہت خوب ....واہ

عبدالرحمن سید
12-30-2010, 11:43 AM
بہت ہی خؤب بھائی عبدالرحمن سید صاحب


بہت بہت شکریہ کاکا جی ،!!!!

خوش رہیں،!!!!

عبدالرحمن سید
12-30-2010, 11:44 AM
بہت خوب ....واہ


بہت بہت شکریہ تانیہ جی،!!!!

خوش رہیں،!!!