PDA

View Full Version : سمجھو



گلاب خان
12-26-2010, 08:29 PM
اللہ کے مقبول بندے وہی ہوتے ہيں جو اللہ تعالے کے دوست ہوتے ہيں۔ اللہ تعالے ان کو دوست رکھتا ہے جو اس کے پیارے محبوب علیہ الصلوۃ والسلام سے عشق کی حد تک محبت کرتے ہیں اور حضرت اویس قرنی رضی اللہ تعالی عنہ اس شرط پر پورے اترتے ہيں۔ حضرت عمر رضی اللہ تعالی عنہ فرماتے ہیں کہ حضور نبی کریم علیہ الصلوۃ والسلام نے فرمایا:
“اللہ کے بندوں میں سے کچھ ایسے لوگ ہیں جو نہ نبی ہيں نہ شہید پھر بھی انبیاء اور شہداء قیامت کے دن ان کے مرتبہ پر رشک کریں گے جو انہيں اللہ تعالی کے یہاں ملے گا لوگوں نے کہا: یارسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم! یہ کون لوگ ہوں گے؟ حضور علیہ الصلوۃ ولسلام نے فرمایا: کہ یہ وہ لوگ ہوں گے جو آپس میں ایک دوسرے کے رشتہ دار تھے اور نہ آپس میں مالی لین دین کرتے تھے بلکہ صرف اللہ کے دین کی بنیاد پر ایک دوسرے سے محبت کرتے تھے بخدا ان کے چہرے نورانی ہوں گے اور ان کے چاروں طرف نور ہی نور ہو گا انہیں کوئی خوف نہ ہو گا اس وقت جب کہ لوگ خوف میں مبتلا ہوں گے اور نہ کوئی غم ہو گا اس وقت جب کہ لوگ غم میں مبتلا ہوں گے۔” پھر آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے یہ آیت مبارک پڑھی:
الا ان اولیاء اللہ لا خوف علیھم ولا ھم یحزنون ۔
حضرت اویس قرنی رضی اللہ تعالی عنہ عاشقان رسول صلی اللہ تعالی علیہ وسلم کے سردار ہیں جو بھی مسلمان عشق مصطفی صلی اللہ تعالی علیہ وسلم سے سرشاد ہے وہ آپ رضی اللہ تعالی عنہ پر بجا طور پر فخر کرتا ہے۔ حضرت اویس رضی اللہ تعالی عنہ کے عشق مصطفی صلی اللہ تعالی علیہ وسلم کا ایک مشہور واقعہ جو کتب میں مذکور ہے وہ یہ ہے کہ مروی ہے جب غزوہ احد میں حضور نبی کریم علیہ الصلوۃ والسلام کو زخم آۓ تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم خون پاک کو صاف فرماتے تھے اور اسے زمین پر گرنے نہیں دیتے تھے اور فرماتے تھے کہ اگر خون سے ایک قطرہ بھی زمین پر گرا تو یقینا اللہ تعالی آسمانوں سے زمین والوں پر عذاب نازل کرے گا پھر فرمایا.

کا کا سپاہی
12-26-2010, 08:50 PM
جزاک اللہ
اچھی شیئرنگ کی ہے

آزاد خان
01-09-2011, 02:07 PM
ھاں بس ناسمجھ انسان ھے جو سمجھتا نھی جزاک اللہ

عبادت
01-09-2011, 04:03 PM
تھنکس اچھی شیئرنگ کا
جزاک اللہ
http://img808.imageshack.us/img808/5/99189xcitefun99180xcite.gif