PDA

View Full Version : سنبھل کر دیکھنا پانی گرا ہے



گلاب خان
11-26-2010, 08:42 PM
کبھی آپ برسات کے موسم میںگاﺅں کی پگڈنڈیوں سے گزرے ہیں؟اگر آپ ان پگڈنڈیوں سے گزرے ہوں گے تو آپ نے زمین پر اپنا ہر قدم بہت سنبھال کر رکھا ہوگا؟کیونکہ آپ جانتے ہوں گے کہ اگر آپ نے اپنے پاﺅں زمین پر بہت محتاط ہو کر نہیں رکھے، تو آپ منھ کے بل زمین پر آجائیں گے۔

مجھے یقین ہے کہ ان پگڈنڈیوں سے گزرتے ہوئے آپ کے پاﺅں لڑکھڑا ئے ضرور ہوں گے، لیکن آپ ایک دم سے زمین پر نہیں گرے ہوں گے ۔ کیونکہ آپ کے شعور اور احتیاط نے آپ کو زمین پر گرنے سے بچا لیا ہوگا۔ آپ ہر آن اس شعور کے ساتھ زمین پر اپنے پاﺅں رکھ رہے ہوں گے کہ آپ زمین پر نہیں بلکہ ہر لمحہ پھسلن پر اپنے پاﺅں رکھ رہے ہیں۔یہ شعور کہ آپ ہر لمحہ پھسلن پر اپنے پاﺅں رکھ رہے ہیں اسی شعور نے آپ کو گرنے سے بچا لیا ہوگا۔ ہر قوم ہر سوسائٹی اور ہر سماج کی زندگی میں ایک وقت ایسا آتا ہے جب اسے پھسلن پر پاﺅں رکھنا پڑتا ہے ۔اگر کوئی قوم اس شعور کے ساتھ پھسلن پر پاﺅں رکھے کہ وہ واقعی پھسلن پر پاﺅں رکھ رہی ہے تو شاید وہ گرنے سے بچ جائے۔ لیکن اگر معاملہ الٹا ہو، یعنی پاﺅں تووہ پھسلن پر رکھے اور سوچے کہ وہ سپاٹ زمین پراپنے پاﺅں رکھ رہی ہے تو اسے منھ کے بل گرنے سے کون بچا سکتا ہے؟
بدقسمتی سے آج ہماری قوم کا المیہ یہی ہے۔ ہماری قوم پاﺅں تو پھسلن پر رکھتی ہے اور سوچتی ہے کہ وہ سپاٹ زمین پر اپنے پاﺅں رکھ رہی ہے۔ نتیجتاً وہ دھڑام سے منھ کے بل زمین پر گر جاتی ہے۔ اس کے بعد ہنگامہ کرتی ہے کہ اسے دھکے دے کر زمین پر گرایا گیاہے ۔حالانکہ وہ اپنی نادانی اور بے شعوری کی وجہ سے گرتی ہے۔ آج پوری دنیا میں مسلمانوں کاحال یہی ہے مسلمان خود سے گرتے ہیں اور کہتے ہیں کہ انھیں دھکا مار کر گرایا گیا ہے۔ مسلمانوں کا حال یہ ہے کہ وہ پھسلن پر پاﺅں رکھتے ہیں اور وہ بھی اس شعور کے ساتھ کے وہ سپاٹ زمین پر اپنے پاﺅں رکھ رہے ہیں اور جب وہ اس عمل میں منھ کے بل دھڑام سے زمین پر گرتے ہیں تو کہتے ہیں کہ ان کے خلاف سازش ہو رہی ہے ۔ وہ خود سے نہیں گر ے ہیں بلکہ انھیں ایک سازش کے تحت گرا یاگیا ہے۔ پٹنہ کے ایک شاعر خورشید اکبر نے اپنے اس شعر میں شاید اسی صورت حال کی طرف اشارہ کیا ہے۔
سنبھل کر دیکھنا پانی گرا ہے!
یہاں ہربار سیلانی گراہے

تانیہ
12-15-2010, 09:49 PM
ہاہا جو کرواتا ہے امریکہ کرواتا ہے ...ہاہا

سرحدی
01-29-2011, 12:33 PM
بہت خوب گلاب بھائی، اچھا لکھا.....

عبادت
02-04-2011, 02:10 AM
نائس گلاب بھائی اچھی تحریر

سقراط
02-04-2011, 11:54 AM
کیا بات ہے واہ گلاب جی
اور تانیہ امریکہ کا نہیں مجھے انڈیا پر شک ہے

بےباک
02-05-2011, 09:16 AM
آج پوری دنیا میں مسلمانوں کاحال یہی ہے مسلمان خود سے گرتے ہیں اور کہتے ہیں کہ انھیں دھکا مار کر گرایا گیا ہے۔ مسلمانوں کا حال یہ ہے کہ وہ پھسلن پر پاﺅں رکھتے ہیں اور وہ بھی اس شعور کے ساتھ کے وہ سپاٹ زمین پر اپنے پاﺅں رکھ رہے ہیں اور جب وہ اس عمل میں منھ کے بل دھڑام سے زمین پر گرتے ہیں تو کہتے ہیں کہ ان کے خلاف سازش ہو رہی ہے ۔ وہ خود سے نہیں گر ے ہیں بلکہ انھیں ایک سازش کے تحت گرا یاگیا ہے۔ پٹنہ کے ایک شاعر خورشید اکبر نے اپنے اس شعر میں شاید اسی صورت حال کی طرف اشارہ کیا ہے۔
سنبھل کر دیکھنا پانی گرا ہے!
یہاں ہربار سیلانی گراہے

بہت ہی خوب ، شاندار ، گلاب خان آپ کی پیش کردہ تحریر لاجواب ہے ،