PDA

View Full Version : عراقی بچو ں کو عیسا ئی بنا نے کےلئے مشنر یا ں سر گر م



گلاب خان
01-21-2011, 04:50 PM
امر یکی ظلم کی چکی میں پس رہے عراق میں اب ارتدا د کی لہریں بڑی تیزی سے اٹھنے لگی ہیں۔عیسا ئی مشنر یا ں سا رے عراق میں دندنا تی پھر رہی ہیں اور ان کے نشا نے پر وہ بچے ہیں جن کے وا لد ین جنگ کی بھینٹ چڑھ چکے ہیں ۔اطلا عا ت ہیں کہ فلو جہ اور اس کے اطرا ف کے علاقو ں اور دیگر شہروں میں اتحا دی افوا ج کے ہا تھو ں جا ں بحق ہو نے والے عرا قیو ں کے لا وا رث بچو ں کو عیسا ئی مشنر یا ں اغوا کر تی ہیں اور اگر ان لا وا رث بچوں کے رشتے دا را ن کی طلبی کر تے ہیں تو انہیں یہ جواب دے کر چلتا کر دیا جا تا ہے کہ بچے بھی جنگ کا شکار ہو ئے ہیں اور انہیں دفنا دیا گیا ہے۔رشتے دا رو ں سے جھو ٹ بو ل کر اغواشدہ بچوں کو پہلے فو ج کے حوا لے کیا جا تا ہے اور وہا ں سے ا نہیں عیسا ئی مشنر یا ں اپنے تا بع میں لے لیتی ہیں ،پھر ان بچو ں کی ’ذہن سا زی‘شروع کر دی جا تی ہے اور انہیں باقاعدہ عیسا ئی مذ ہب میں دا خل کر لیا جا تا ہے ۔عیسا ئی مشنر یا ں ان دنو ں امر یکہ کی ’اس صلیبی جنگ‘کو اپنے لئے ایک چیلنج سمجھ کر عراق میں سر گر م ہیں۔اس لئے عراق بھر میں بائبل کے نسخے پچا س پیسے فی نسخہ کے حسا ب سے وہا ں تقریباً مفت تقسیم کئے جا رہے ہیں جبکہ قر آن پا ک کا ہد یہ کئی سو رو پئے ہے۔ امر یکی ریا ست اریزون کی راجدھا نی ”وینکس“میںمنعقدہ ایک کا نگر یس کے دوران مشنر یو ں کے ایک عہدیدار نے کہا کہ ہما ری تنظیم کو عراق کی تا ریخ کو بد ل کر رکھنے کا سنہری مو قع حاصل ہے ۔مذ کو رہ عہدیدار نے انٹرنیشنل میشین یو نٹ بو رڈ نا می چینل کو انٹر ویو دیتے ہو ئے عراق کے ان شہروں کی نشا ند ہی کی جن میں عیسا ئی مشنر یا ں عیسا ئی انقلا ب بر پا کر نا چا ہتی ہیں۔شما لی کرد ستان مو صل کر کک تکر یت کربلا اور نجف دہ علا قے ہیں جہا ں عیسا ئی مشنر یر تا ریخ کا یا پلٹ دینے کے عزا ئم رکھتی ہیں۔امریکہ کی ٹا ئم میگز ین نے ”ڈا ون“نا می ایک عیسا ئی تنظیم کے رکن ریچ ھا نی کے حوا لہ سے لکھا ہے کہ گز شتہ ایک دہے سے زا ئد عر صہ کے دوران عیسائی مشنریوں کو کا م کے ویسے موا قع حاصل نہ ہو سکے جیسے موا قع عراق میں حاصل ہو رہے ہیں ۔انہو ں نے کہا کہ عراق جنگ ہم مسیحیت کی تبلیغ کر نے وا لو ں کے لیے نعمت غیرمتر قبہ ہے ۔مسیحیت کے کسی بھی مبلغ کو عراق میں دا خل ہو نے کے لیے صرف امر یکی پاسپورٹ کی ضروت ہو تی ہے ۔بر طا نو ی صحا فی ڈا ویڈر ینی کا کہنا ہے کہ عراق میں امر یکی مشنری کا رند ے خفیہ اور منظم طریقے پر انسا نی امداد کے پر دے میں کا م کر رہے ہیں ۔ڈاویڈ ینی کہتا ہے کہ عراق میں کا م کر نے وا لی امر یکی عیسا ئی مشنر یا ں یسوع مسیح کی ویڈ یو فلم اور بائبل کے عر بی تر جمے بری تعداد میں عراق منتقل کر چکی ہیں۔اس مہم کا نا م ”مسلمانوں کی بے دینی سے حفا ظت“رکھا گیا ہے ۔”اوکلا ہا ما “ریا ست کے مشنر ی عہدیدارسا م پو رٹر نے بر ملا اعلا ن کیا کہ ان کی تنطیم عراق میں انسا نی امداد کا کا م کر رہی ہے لیکن اس کا م کا مقصد صرف انسا نی امداد ہی نہیں بلکہ یہ کا م رب کی محبت کو عا م کر نے کی مہم ہے۔ایک رپو رٹ کے مطا بق 100 سے زا ئد عیسا ئی تنظیمیں عراق میں دا خل ہو چکی ہیں جن میں سب سے بڑی اور نما یا ں تنظیمیں در ج ذیل ہیں۔(۱)انٹر نیشنل عیسا ئی مشنر ی بو رڈ ۔یہ امر یکہ کے پر ٹسٹنس عیسا ئیو ں کی سب سے بڑی تنظیم ہے ۔(۲)مشرقی وسطیٰ اور شما لی افر یقین کو نسل (۳)نا رتھ کا رولینا صو بہ کا عیسا ئی گروپ(۴)امریکین تعا ون بو رڈ(۵)کر شنا نیٹی ورلڈ نیشن انٹرنیشنل تنظیم(۶)با ئبل عا لمی برا دری تنظیم(۷)ڈا ون تنظیم(۸)سا مر ٹیا ن پیرس تنظیم(۹)پروٹسٹا ننت عیسا ئی مبگغین تنظیم(۱۰)پو پ جا ن حنا (اوھا یو صو بہ)(۱۱)عیسا ئی مبلغہ جا کی کو ن (۱۲)بین الا قوا می گلو بل مشین یو نٹ عیسا ئی تنظیمیہ سا ری عیسا ئی تنظیمیں عراق میں سر گر م ہیں ،اور ان سب کی نگرا نی IRCO (عراق ریلیف سنٹر آفس)نا می مر کز ی ادا رہ کر رہا ہے ۔اور ان سا ری تنظیمو ں کا عراق میں دا خلہ انسا نی امداد کے عنوا ن سے ہوا ہے ۔عا م انسا نی بر ادری کا ان تنظیمو ں کے تعلق سے یہی تاثر ہے کہ یہ جنگ اور تشدد کے متا ثرین کی امداد کر رہی ہیں۔عراق میں مو جو دہ امر یکی عہدیدارو ں کو عراق میں عیسا ئی مشنریوں کی سر گر میو ں کاا عتراف ہے کہ لیکن یہ عہدیداران تنظیمو ں کے تعلق سے یہی تا ثر دیتے ہیں کہ یہ عراق میں ریلیف سر گر میا ں انجام دے رہی ہیں نہ کہ عیسا ئیت کی تبلیغ ۔امر یکی عہدیدار کہتے ہیں کہ عرا قی با شند ے ان عیسا ئی تنظیمو ں سے خوش ہیں ایک حکو متی ذمہ دا ر نے امر یکہ کے ٹا ئم میگز ین سے ذ کر کیا کہ چو نکہ صدر بش اور صہیو نی مسیحی دا ئیں با زو کے در میا ن خو شگوار تعلقا ت ہیں اس لیے وا ئٹ ہاوز کے لئے ممکن نہیں کہ عیسا ئی تنظیمو ں کو عراق میں دا خلہ سے منع کر ے ۔حیدر آبا د کے مصنف کے کا لم نگار سعید احمد ومیض ند وی کی رپو رٹ کے مطا بق عراق میں کام کر نے وا لی عیسا ئی تنظیمو ں کا یہ ایک اہم ذریعہ ہے ۔عراق میں سر گر م ایک اہم عیسا ئی کارکن جیم ووا کر جو 45 ہزار صندوق غذا ئی مواد لے کر عراق میں دا خل ہوا تھاکہتا ہے کہ میری کئی ایسے عراقی بچو ں سے ملا قا ت ہو ئی جو بھو ک سے قر یب المر گ ہو چکے ہیںلیکن میں سمجھتا ہو ں کہ ان کی او لین ضرورت کھانا نہیں بلکہ یسو ع کی محبت کو پہچا ننا ان کی اصل ضرورت ہے ۔عیسا ئی تنظیمیںجنگ سے متا ثر عراقیو ں کو مفت علا ج فرا ہم کر کے ان سے قریب ہو ئی ہیں ۔نیز آپر یشن کے ضرورت مندو ں کا فری آپر یشن کر ایا جا تا ہے ۔علا ج و معا لجہ اور طبی امداد کی فرا ہمی عیسا ئی مشنر یو ں کا انتہائی مو ثر حر بہ ہے ۔بیما ریو ں سے کرا ہتے ہو ئے افراد کو جب فر ی علا ج کرا کے انہیں نئی زند گی عطا کی جا تی ہے تو وہ اپنے محسنو ں کی ہر چیز قبو ل کر نے کے لیے آما دہ ہو جا تے ہیں۔ عراق میں متا ثر ین کو غذا ئی مواد فرا ہم کرنے وا لے عیسا ئی مبلغین اس کا خاص اہتما م کر تے ہیں کہ مقا می تعلیم یا تہ طبقہ سے روابطہ بڑ ھا ئے جا ئیں ۔اس لیے کہ تعلیم یا فتہ طبقہ اگر عیسا ئیت سے متا ثر ہوا تو اس کے دور رس اثرات مرتب ہو تے ہیں ۔عیسا ئی مشنر یو ں کا مقصد عیسا ئیت سے متا ثر ایک تعلیم یا فتہ نسل تیا ر کر نا ہے۔چنانچہ اب تک عیسائی مشنر یو ں کی جا نب سے تعلیمی ادا رو ں اور مدا رس اور اسکو لو ں کو ملینو ں ڈا لر کی امداد کی جا چکی ہے ۔عراق میں سر گر م عیسا ئی مشنر یا ں عیسا ئی لٹریچر کی تر ویج کا خاص اہتما م کرتی ہیں۔جو چھو ٹی چھو ٹی کتابو ں پمفلٹس اور ویڈ یو فلمو ں پر مشتمل ہو تا ہے ۔حضرت عیسیٰ علیہ السلا م کے غیر مصدقہ وا قعات کی فلم بند ی کر کے ایک فلم ”یسوع“کے نا م سے بنا ئی گئی اور70 سے زا ئد زبا نو ں اور200 سے زا ئد مقا می لہجو ں میں اس فلم کو نقل کیا گیا ۔عراق میں یہ فلم عرا قی لہجہ میں نقل کی گئی ہے ۔کہا جا تا ہے کہ ار بیل کے را ستہ سے عراق میں با ئبل کے ایک لا کھ سے زا ئد نسخے عراق منتقل ہو چکے ہیں ۔عراق میں با ئبل کی نسخوں کی قیمت انتہا ئی کم ہو تی ہے ۔جبکہ قر آنی نسخوں کی قیمت بہت زیا دہ ہے ۔بچو ں کے اذ ہا ن صا ف تختی ہو تے ہیں جن پر جو کچھ لکھا جا ئے نقش ہو جاتا ہے ۔بچوں کی نفسیات کے پیش نظر مشنر یا ں ان میں با تصویر عیسا ئی کہا نیا ں تقسیم کر تی ہیں۔جس سے بچے عیسا ئیت سے قر یب ہو تے جا تے ہیں۔سا رے عا لم میں مشنر یا ں عیسا ئیت کی تر ویج کے لیے ٹی وی چینلو ں اور ریڈ یو اسٹیشنو ں کا قیا م عمل میں لا رہی ہیں۔عراق میں بھی اس قسم کے چینلس کا آغاز کیا جا رہا ہے ۔مثلاً ”محبت کی آواز“اور ریڈ یویو سوا کے نا م سے دو ریڈ یو عراق میں کا م کر رہے ہیں ۔اسی طر ح ”الحرہ“اور ”آثور“نا می دو عیسا ئی چینلس 24گھنٹے عیسائیت کے پر چا ر میں مصروف ہیں۔شروع ہی سے ان مشنر یو ں کو اقوا م متحدہ کا بھر پو ر تعا ون حاصل ہے۔اقوام متحدہ مغر بی مما لک کا دست نگر ادا رہ ہے اس لیے اسے ہر اس پا لیسی کی تا ئید ناگزیر ہوتی ہے جو مغر بی مما لک کے منشا کے مطا بق ہو ۔اقوا م متحدہ کے سا بق سکر یٹری جنر ل کو فی عنا ن نے عراق میں عیسا ئی مشنر یو ں کے کردار کی بھرپو ر ستا ئش کی تھی ۔شما لی عراق میں مشنر یو ں کو اقوا م متحدہ کا بھر پو ر تعا ون حاصل ہے ۔عراق کے کرد علا قہ میں عیسا ئی سر گر میا ں عروج پر ہیں۔کردستان کا علا قہ بر ی طر ح عیسا ئی مشنر یو ں کی زد میں ہے۔گلو بل مشین یو نٹ عا لمی عیسا ئی سنٹر نے اپنی ایک رپورٹ میں ان تما م عیسا ئی تنظیمو ں کی فہرست پیش کی ہے جو شما لی عراق اور کردستا ن میں سرگر م ہیں۔جس کی تفصیل حسب ذیل ہیں۔۱۔جمعیت کتا ب مقدس:اس تنظیم کا آفس عرا قی شہر ار بیل میں وا قع ہے ۔اس کا سا را لٹریچر عراقی وزارت ثقا فت کے پر یس سے شا ئع ہو تا ہے اور یہ تنظیم منظم انداز میں عیسائیت کی تبلیغ کر رہی ہے۔۲۔بر طا نو ی تنظیم برا ئے فرو غ خد ما ت مشر قی وسطیٰ:اس کا صدر دفتر قا ہر ہ میں ہے۔اس کی تین آفس عراق میں ہیں۔ایک ار بیل میں دو سری ”دھو ک “اور تیسری سلیما نیہ شہر میں ،یہ تنطیم اپنی ساری سر گر میا ں تنظیم کے نا ظم اعلیٰ ڈا کٹر الکسندرل رسل کی نگرا نی میں کا م کرتی ہے ۔ڈا کٹر الکسندرل رسل ار بیل کی صلا ح الد ین یو نیورسٹی کے آرٹ کا لج میں بحیثیت استاد خد ما ت انجا م دیتے ہیں ۔۳۔تنظیم سر چشمہ¿ حیا ت :یہ ایک امر یکن عیسا ئی تنظیم ہے جس کا دفتر اربیل شہر سے قر یب ثقلا وہ شہر میں ہے۔اس تنظیم کو امر یکی وزارت خا رجہ کے تحت چلنے وا لے انسا نی امداد کے ادا رہ OFDAسے را ست امداد حاصل ہو تی ہے ۔۴۔بین الا قوا می طبی کا روا ن تنظیم:اس کا صدر دفتر امر یکہ کے بو رتلا نڈ شہر میں وا قع ہے۔خلیج کی دو سری جنگ میں اس تنظیم سے وا بستہ ڈا کٹر وں کی ٹیم امر یکی فو ج کے سا تھ عراق پہو نچی تھی ۔یہ بھی OFDA سے را ست امداد حاصل کر تی ہے ۔اس کے عراق کے سلیمانیہ ار بیل زا کو اور دھو ک شہرو ں میں چا ر آفسس کا م کرتے ہیں۔۵۔المصا در بر طا نو ی تنظیم:یہ تنطیم کمپیو ٹر اور انگر یزی سکھا نے کا کا م کر تی ہے۔اس کی بہت سی شاخیں کا م کر تی ہیں ۔صدر دفتر ثقلا وہ شہر میں قا ئم ہے ۔۶۔کا رتیاس :قا ہرہ سے شا ئع ہو نے وا لے ایک عیسا ئی میگز ین نے اپنے شما رہ نمبر 47میں لکھا ہے کہ کا رتیاس نا می کیتھو لک عیسا ئی تنظیم نے اپنے عرا قی آفیسس کے تعاون اسی طر ح ترکی شام لبنا ن اور القدس میں قا ئم اپنی شا خوں کے تعا ون سے انسانی امداد کا کا فی مواد جمع کیا ہے جس سے نصف ملین عرا قی با شندو ں کی ضروریا ت کی تکمیل کی جا سکتی ہے ۔کا رتیاس کے قا ہر ہ آفس کے ایک عہدیدار نے بتا یا کہ کا رتیاس عراق میں گزشتہ 20سا ل سے کا م کر رہی ہے لیکن دوسری خلیجی جنگ کے بعد اس کی سر گر میو ں میں کئی گنا اضا فہ ہوا ہے ۔با لخصوص شما لی عراق میں جو عیسا ئی سر گر میو ں کے لیے زر خیز علا قہ تصور کیا جا تا ہے ۔۷۔ACORNتنظیم:یہ ویٹیکن سٹی کے تعا ون سے چلتی ہے ۔اس نے اب تک دسیوں کر د مسلما نو ں کو عیسا ئی مشنر ی کیمپو ں میں تر بیت دیا ہے۔ما ہا نہ 600ڈا لر مشا ہرہ کے سا تھ کرد مسلمانو ں کو عیسا ئیت کی تبلیغ کے لیے استعما ل کر تی ہے ۔ممتاز قا بلیت رکھنے والے مسلما نو ں کا انتخاب کر کے انہیں ویٹیکن سٹی روا نہ کیا جا تا ہے تا کہ وہا ں ایک عر صہ تک تر بیت پا کر عیسا ئی مبلغ بن کر آئیں ۔الوعی الا علا می نا می میڈ یا سنٹر کے مطا بق اس تنظیم کے تر بیتی کیمپ تین علا قوں میں قا ئم ہیں ۔۱۔دھو ک شہر میں جہا ں کا ذمہ دار یو سف نا می عیسا ئی ہے ۔۲۔عنیکا وہ شہر جس کا ذمہ دار فر ید نا می عیسا ئی ہے یہ اٹا لین ہے ار بیل میں مقیم ہے ۔۳۔محلتہ آشتی ،سلیما نیہ شہر کا ایک علا قہ ہے اس کاذ مہ دار کاظم بغدادی نا می شخص ہے جو کچھ عر صہ قبل عیسا ئی بن گیا تھا ۔ ٭٭