PDA

View Full Version : دل ابھی لوٹا نہیں



نازک حسین
03-22-2011, 03:40 PM
صبح سے نکلا ہوا ہے گھر سے
رات بھی بیت چلی ہے اب تو
جانے کس بیتے ہوئے وصل کے کملائےہوئے در پہ
پڑا ہو گا کہیں
جانے کس الجھے ہوئے ہجرزالو پہ ذرا ٹیک کے سر
چین سے سویا ہو گا
دل ابھی لوٹا نہیں
صبح سے نکلا ہوا ہے گھر سے
آگیا ہو گا کسی درد کے بہلاوے میں
اور کسی راہ کے ویران کنارے پہ پڑا خوب بلکتا ہو گا
آتے جاتے ہوئے ہر مسافر کی طرف
ایک سہمی ہوئی امید سے تکتا ہو گا
سوچتا ہو گا جدائی کی کوئی انت میں

این اے ناصر
03-31-2012, 01:03 PM
واہ بہت خوب۔ شکریہ