PDA

View Full Version : آپ سب کی نظر میں



نازک حسین
03-28-2011, 03:35 PM
ورلڈ ویمن کانفرنس میں کئی ممالک کی خواتین مدعو تھیں ۔پہلی مندوب جس کا تعلق انگلینڈ سے تھا ، کھڑی ہوئی اور بولی ۔۔۔“ پچھلے سال ہم نے فیصلہ کیا تھا کہ خاوند سے گھر کا کام لیں گی ۔۔۔ کانفرنس کے بعدجب میں گھر گئی تو میں نے اپنے خاوند سے صاف صاف کہہ دیا کہ اب میں کھانا نہیں پکاؤں گی ۔۔۔ تم خود ہی پکایا کرو گے ۔۔۔ پہلے دن میں نے دیکھا اس نے کچھ نہیں کیا تھا ، دوسرے دن بھی یہی حال تھا مگر ۔۔۔ تیسرے دن میں کیا دیکھتی ہوں کہ اس نے بڑا اچھا کھانا تیار کیا تھا ۔“ سب خواتیں نے خوشی سے تالیاں بجائیں ۔
دوسری مندوب جو امریکہ سے تھی اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے بولی ۔۔۔“ پچھلی بار جب میں کانفرنس کے بعد گھر گئی تو اپنے شوہر سے جو اس وقت ٹی وی دیکھ رہا تھا ۔۔۔ کہا کہ میں آئندہ کپڑے نہیں دھویا کروں گی ۔۔۔ تم اپنے کپڑے خود دھویا کرو گے ۔۔۔ پہلے اور دوسرے دن تو اس نے کچھ نہیں کیا تھا ۔۔۔ مگر تیسرے دن یہ ہوا کہ ۔۔۔ وہ نہ صرف اپنے کپڑے دھو رہا تھا بلکہ میرے کپڑے بھی دھونے کے لئے پاس رکھے تھے ۔“ ۔۔۔ خواتین نے پھر تالیاں بجائیں ۔
تیسری مندوب جس کا تعلق پاکستان سے تھا بولی ۔۔۔“پچھلے سال کانفرنس میں شرکت کے بعد میں گھر گئی تو میں نے اپنے شوہر سے کہا ۔۔۔ میں اب تمہارے کپڑے استری نہیں کیا کروں گی ۔۔۔ بلکہ اپنا ہر کام تم خود کیا کرو گے ۔۔۔ پہلے دن کچھ نظر نہ آیا ۔۔۔ دوسرے دن بھی کچھ نظر نہ آیا ۔۔۔ تیسرے دن آنکھ کی سوجن کچھ کم ہوئی تو تھوڑا تھوڑا نظر آنے لگا ۔۔۔“ ( کہ حالات جوں کے توں ہیں ۔۔۔)


منصوبے شروع کرنے سے قاصر ہیں،
29/کروڑ روپے واپس لے لیے جائیں، تخریب ملت ایسوسی ایٹ
ستیانہ بنگلہ (اسٹاف رپورٹر) تخریب ملت ایسوسی ایٹ نے تخریبی کاموں کے لے مختص 29/کروڑ روپے سے زائد رقم خرچ کرنے سے معذوری ظاہر کردی ہے جس پر حکومت نے رقم سٹی حکومت کے اکاؤنٹ میں منتقل کردی ہے۔ اب یہ رقم سٹی حکومت کا محکمہ تخریب ڈپارٹمنٹ شہر میں مختلف تخریبی منصوبوں پر خرچ کرے گا
باخبر ذرائع کے مطابق تخریب ملت ایسوسی ایٹ کی انتظامیہ نے صوبائی حکومت کو لکھے گئے ایک خط میں موقف اختیار کیا ہے کہ رواں مالیاتی سال ختم ہونے والا ہے منصوبے شروع کرنے سے قبل منصوبہ بندی مکمل نہیں ہوسکی جس کے باعث 296 ملین روپے کے تخریبی منصوبے شروع کرنے سے قاصر ہیں اس لیے رقم ہم سے واپس لے لی جائے۔
ذرائع نے بتایا کہ یہ صورتحال جب سٹی ناظم کے علم میں آئی تو انہوں نے حکومت سے رابطہ کیا اور یہ رقم حکومت کو منتقل کرنے کے بجائے سٹی حکومت کے اکاؤنٹ میں منتقل کرنے پر زور دیا ذرائع نے بتایا کہ حکومت نے سٹی ناظم کی تجویز منظور کرتے ہوئے یہ رقم سٹی حکومت کو فراہم کردی ہے
ذرائع نے بتایا کہ یہ رقم اب سٹی حکومت کے محکمہ تخریب ڈپارٹمنٹ کے تحت مختلف تخریبی منصوبوں پر خرچ کی جائے گی۔ محکمہ تخریب اینڈ سروسز کے ایک آفیسر نے بتایا کہ سٹی ناظم نے یہ رقم تخریبی کاموں پر خرچ کرنے کی اجازت دےدی ہے ہمارے متعدد منصوبے التواکا شکار ہیں اس رقم سے ان منصوبوں پر آئندہ چند دن میں کام شروع ہوجائے گا


ایک عامل کا بڑا چرچہ تھا کہ وہ روحوں سے بات کروادیتے ہیں ۔ ایک بچہ جو اپنی ذہانت سے ہوشیاری کی وجہ سے محلے بھر میں مشہور تھا ان عامل کے پاس پہنچا اور نذرانہ پیش کرنے کے بعد کہا ۔
’’میں اپنے دادا کی روح سے بات کرنا چاہتا ہوں ‘‘۔
اسے ایک اندھیرے کمرے میں لے جایا گیا جہاں اگر بتیاں جل رہی تھیں ۔چند لمحوں کے بعد ایک بھاری آواز سنائی دی ۔
کیوں آئے ہو برخوردار؟قریب سے عامل صاحب کے چیلے نے بچے کو ٹھوکا دیا یہ تمہارے دادا کی روح بول رہی ہے ۔ پوچھو کیا پوچھنا چاہتے ہو ؟
دادا جان ! بچے نے سر کھجاتے ہوئے کہا ۔
’’مجھے آپ سے صرف یہ پوچھنا ہے کہ آپ کی روح یہاں کیا کررہی ہے ؟ جبکہ آپ کا تو بھی انتقال بھی نہیں ہوا‘‘


برطانیہ کے وزیراعظم ٹونی بلئیر نے اعتراف کیا ہے کہ انہیں ‘Tomorrow‘ کے سپیلنگ آج تک نہیں آئے۔ ٹونی کا یہ اعتراف اس بات کا ثبوت ہے کہ انگریزوں کی بھی انگریزی نہیں آتی۔ میاں صاحب کہتے ہیں کہ ‘ٹونی صاحب صرف‘آج‘ پر نظر رکھتے ہیں اس لئے انہیں ‘Tomorrow‘ یاد نہیں رہتا۔‘ میں نے میاں صاحب سے پوچھا کہ ‘Tomorrow‘ تو کل کو کہتے ہیں ۔۔۔ ‘پرسوں‘ کو کیا کہتے ہیں؟‘
تھوڑی دیر سوچنے کے بعد بولے ‘Tomorrow کے اوپر ایک اور مارو‘

نورمحمد
03-28-2011, 04:40 PM
:-):-):-)

وی جے
03-28-2011, 05:35 PM
ھھھھھھھھھا سچ میں نہین آتی انگریجی کہ اویں مجاق ہے ٹومارو والا:-):-):-)

تانیہ
03-28-2011, 11:23 PM
ہاہا نازک حسین جی ...ہاہا بہت اچھی مزیدار شیئرنگ ہے ،،،زبردست

این اے ناصر
03-28-2011, 11:38 PM
ہا ہا ہا ہا ہا http://urdulook.info/imagehost/?di=813013374869