PDA

View Full Version : کیوں گنہگا ر بنوں 'ویزا فراموش رہو ں



گلاب خان
04-14-2011, 10:51 PM
کب تلک خوف زدہ صورتِ خرگوش رہوں
وقت کا یہ بھی تقا ضہ ہے کہ خامو ش رہوں
ہمنوا!میں کوئی مجرم ہوں کہ روپوش رہوں

شکوہ امر یکہ سے خاکم بدھن ھے مجھ کو
چونکہ اس ملک کا صحرا بھی چمن ہے مجھ کو

گر تیرے شہر میں آئے ہیں تو معذور ہیں ہم
وقت کا بو جھ اُٹھائےہوئے مزدور ہیں ہم
ا یک ہی جاب پہ مدّت سے بدستورہیں ہم
بش سے نزدیک مشرف سے بہت دُور ہیں ہم

یو ایس اے شکوہ اربابِ وفا بھی سن لے
لب ِتوصیف سے تھوڑا سا گلا بھی سُن لے

تیرے پر چم کو سرِ عرش اُڑایا کس نے؟
تیرے قا نون کو سینے سے لگایا کس نے؟
ہر سینٹر کو الیکشن میں جتایا کس نے؟
فنڈ ریزنگ کی محا فل کو سجایا کس نے؟

ہیلری سے کبھی پوچھو کبھی چک شومر سے
ہر سینیٹرکو نوازا ہے یہاں ڈا لر سے

جیکن ہا ئیس کی گلیوں کو بسا یا ہم نے
کوئی آ ئی لینڈ کی زینت کو بڑھا یا ہم نے
گوریو ں سے ہی نہیں عشق لڑا یا ہم نے
کا لیوں سے بھی یہاں عقد رچا یا ہم نے

آکے اس ملک میں رشتے ہی فقط جوڑے ہیں
بم تو کیا ہم نے پٹا خےبھی نہیں چھو ڑے ہیں

ہم نے کیا جرم کیا اپنی عبادت کے لیے
صرف میلاد کیا جشنِ ولا دت کے لیے

ہم نےر کھی ہے یہا ں امن اما ں کی بنیاد
ہر مسمان کو یو ایس میں پڑی ہے افتا د
اپنی فطرت میں ہیں نہیں دہشت و دنگا و فسا د
پھر ہم نے تیرے شہروں کو کیا ہے آ با د

ہر مسلماں ہےیہاں امن کا حامی دیکھو
ہیو سٹن جاؤ ' ایل اے دیکھو' میامی دیکھو

گر گیا اگر تیز ہواؤں سے اگر طیا رہ
پکڑ ا جا تا ہے مسلمان یہاں بے چارہ
کبھی گھورا ' کبھی تاڑا' تو کبھی للکارا
کبھی" سب وے" سے اُ ٹھا یا کبھی چھا پا مارا

تو نے یہ کہہ کے جہازوں کو کراچی بیھجا
یہ بھی شکلاً ہے مسلمان اسے بھی لے جا

میڈیا تیرا ' دوات اور قلم تیرے ہیں
جتنے بھی ملک ہیں ڈالر کی قسم تیر ے ہیں
یہ شہنشاہ یہ اربابِ حر م تیرے ہیں
تیرا دینار ' ریال اور درہم ترے ہیں

تو نے جب بھی کبھی مانگا ہے تجھے تیل دیا
تُجھے جب موقع لگا تو نے ہمیں پیل دیا

حالتِ جنگ میں ہم تیرے سا تھ رہے
تا کہ دُنیا کی قیا دت میں تیرا نام رہے
یہ ضروری تھا کہ تجد یدِ ملاقات رہے
دیکھیے کتنے برس چشمِ عنا یا ت رہے

ہم تیرے سب سے بڑے حلقہء احباب میں ہیں
پھر بھی طوفان سے نکلتے نہیں گرداب میں ہیں

ایڈ" دیتا ہے تر ی حو صلہ افزائی ہے"
تیرا یہ دستِ کرم سُود کا سودائی ہے
اسلحہ دے کے جو غیروں سے شناسائی ہے
ہے بھی اسلام کے دُشمن کی پذیرائی ہے

رحمتیں ہیں تیر ی ہرقوم کے انسانوں پر
چھاپا پڑ تاہے تو بے چا رے مسلمانوں پر

تانیہ
04-15-2011, 12:24 AM
واہ ...زبردست شیئرنگ ...بہت خوب