PDA

View Full Version : زباں محو ثناء ہےگنبد خضراء کےسائےمیں



تانیہ
11-28-2010, 02:49 PM
از: خالد محمود خالد نقشبندی

زباں محو ثناء ہےگنبد خضراء کےسائےمیں
مؤدب التجا ہےگنبد خضراء کےسائےمیں

ہم اپنا دامن مقصود بھر لائےمرادوں سے
ہمیں سب کچھ ملا ہےگنبد خضراء کےسائے میں

کلام پاک دیتا ہےگواہی اس حقیقت کی
مقدر جاگتا ہےگنبد خضراء کےسائے میں

ملےگا حشر کےدن بھی وہ میزان محبت پر
وہ آنسو جو گرا ہےگنبد خضرا کےسائےمیں

اگر سینےمیں ہوتا تو دھڑکنےکی صدا آتی
یہ دل کھویا ہوا ہےگنبد خضراء کےسائے میں

کبھی خود کوکبھی اُن (صلی اللہ تعالیٰ علیہ واٰلہ وسلم) کےکرم کو دیکھتا ہوں میں
کہ مجھ سا بےنوا ہےگنبد خضراء کےسائےمیں

سمجھتا ہےخموشی کی زباں اُن (صلی اللہ تعالیٰ علیہ واٰلہ وسلم) کا کرم خالد
خموشی بھی صدا ہےگنبد خضراء کےسائے میں