PDA

View Full Version : خوش مزاج خواتین کا دل مضبوط ہوتا ہے



بلال جٹ
06-28-2011, 04:26 PM
خوش مزاج خواتین کا دل مضبوط ہوتا ہے
ہنسنا زندہ لوگوں کی شخصیت کا خاصہ ہوتاہے.ہمارے ہاں اگر خواتین خوش مزاج ہوں یا ہنسنے والی ہوں تو انہیں فورا یہ کہہ کر ٹوک دیتے ہیں کہ زیادہ مت ہنسو کیونکہ ہنسی سے دل مردہ ہوجاتے ہیں. لیکن حالیہ تحقیق نے یہ بات غلط ثابت کر دی . ان کے مطابق زندگی کے روشن پہلو دیکھنے والی اور خوش مزاج خواتین کا دل مضبوط ہوتاہے.ان خواتین میں دل کے حملوں یاموت کے خطرات سنجیدہ یا رنجیدہ رہنے والی خواتین کی نسبت کم ہوتےہیں.
یونیورسٹی آف پیٹس برگ کے ماہرین نے ایک تازہ ترین مطالعاتی جائزے کی روشنی میں بتایا ہے کہ خوش رہنا اور روشن پہلوؤں کو دیکھنا یقینا صحت کے لئے مفید ہوتا ہے. ڈاکڑ ٹنیڈل نے نئی تحقیق کی رو سے کہاہے کہ میں بحیثت ڈاکڑ لوگوں کو مشورہ دوں گا کہ وہ زندگی کے تاریک پہلوؤں کو دیکھنے کی عادت ترک کر دیں. بہت سے مطالعاتی جائزوں سے یہ بات واضح ہو چکی ہے کہ منفی انداز فکر صحت کے لئے نقصان دہ ہے. مثبت انداز فکر کے صحت پراثرات کے بارے میں اب تک کئے گئے سب سے بڑے مطالعاتی جائزے میں ماہرین نے طویل عرصے پر محیط ایک بڑی ریسرچ کے حصے کےطور پر 97 ہزار خواتین کی صحت اور ان کے انداز فکر کے درمیان مطالعہ کیا تو انہیں پتہ چلا کہ
جو خواتین چیزوں کے روشن پہلودیکھنے کی عادی تھیں یا جو رجائیت پسندی سے کام لیتی تھی ان میں دل کی بیماری میں مبتلا ہونے کا خطرہ منفی رکھنے والی خواتین کی نسبت 9 فیصد کم تھا.
ماہرین نے آٹھ سال بعد ان تمام خواتین کی صحت اور شرح زندگی کا جائزہ لیا تو معلوم ہوا کہ مثبت سوچ رکھنےوالی خواتین میں کسی بھی وجہ سے مرنے کا خطرہ ان خواتین سے 14 فیصد کم تھا جو چیزوں کے صرف تاریک اور منفی پہلو دیکھنے کی عادی تھیں.
اس تحقین کے نتائج کی روشنی میں یہ بھی واضح ہوا ہے کہ رجائیت پسند خواتین میں مایوسی اور تمباکونوشی جیسی عادت میں مبتلا ہونے کا امکان بھی کم تھا. وہ جوان تھیںان کی تعلیمی قابلیت اور آمدنی کی سطح بھی نسبتازیادہ تھی اور اس کے ساتھ ساتھ یہ خواتین زیادہ مذہبی بھی تھی. اس بات کے واضح ثبوت بھی ملے ہیں کہ ہماری صحت پر ہمارے رویے اور سوچ کس طرح اثرانداز ہو سکتی ہے. مزید یہ کہ صحت کو بہتر بنانے کے لیے رویوں کو کس طرح تبدیل کیا جا سکتا ہے.:-):-):-)

محمدمعروف
06-29-2011, 09:05 PM
آپ نے اچھی معلومات شئیر کی ہیں مگر یاد رہے کہ
زیادہ خوشی اور ہنسی بھی صحت کیلئے نقصان دہ ہوسکتی ہے زیادہ ہنسی انسان کو روحانی اور ذہنی طور پر بیمارکر دیتی ہے کینوکہ صحت نام ہے جسمانی اور روحانی و ذہنی صحت کا باقی سوچ ہمیشہ مثبت ہی رکھنی چاہئے منفی سوچ رکھنا ایک تندرست ذہن کا کام نہیں ۔

بلال جٹ
06-29-2011, 10:14 PM
آپ نے اچھی معلومات شئیر کی ہیں مگر یاد رہے کہ
زیادہ خوشی اور ہنسی بھی صحت کیلئے نقصان دہ ہوسکتی ہے زیادہ ہنسی انسان کو روحانی اور ذہنی طور پر بیمارکر دیتی ہے کینوکہ صحت نام ہے جسمانی اور روحانی و ذہنی صحت کا باقی سوچ ہمیشہ مثبت ہی رکھنی چاہئے منفی سوچ رکھنا ایک تندرست ذہن کا کام نہیں ۔



شکریہ معروف بھای :-):-)

بےباک
07-01-2011, 02:00 AM
زبردست معلوماتی مضمون پیش کیا بلال بھائی ،
جزاک اللہ

این اے ناصر
04-03-2012, 11:29 AM
مفیدمعلومات کے لیے بہت بہت شکریہ۔