PDA

View Full Version : ملٹیپل اسکلوروسس کے مریضوں کے لیے امید



این اے ناصر
07-30-2011, 10:34 AM
لندن میں ڈاکٹر سٹیم سیلز کے ذریعے ملٹیپل اسکلوروسس ( ایم ایس ) کے مریضوں کے علاج کے لیے ایک بڑے تجربے کو جلد شروع کرنے کی تیاری کر رہے ہیں۔

http://wscdn.bbc.co.uk/worldservice/assets/images/2010/12/06/101206115558_brain226.jpg
امید کی جا رہی ہے کہ سٹیم سیل انسانی دماغ تک پہنچ کر ایم ایس کی وجہ سے پہچنے والے نقصان کو درست کر دیں گے۔

اس تجربے میں یورپ بھر سے ایک سو پچاس مریضوں کو شامل کیا جائے گا۔

اس تجربے میں اس بات کا جائزہ لیا جائے گا کہ آیا ملٹیپل اسکلوروسس کے مریضوں کے علاج کے لیے سٹیم سیلز کا محفوظ طریقے سے استعمال کیا جاسکتا ہے۔

ڈاکٹروں کو امید ہے کہ ایم ایس کی وجہ سے دماغ اور ریڑھ کی ہڈی کو پہچنے والے نقصان کو نہ صرف کم اور روکا جا سکتا ہے بلکہ صحت یابی بھی ممکن ہے۔

لندن کے امپیریل کالج سے منسلک ڈاکٹر پاولو مورارو کا کہنا ہے کہ اس بات کے پہلے سے شواہد موجود ہیں کہ اس بیماری کے علاج کے لیے سٹیم سیل موثر ذریعہ ہو سکتا ہے۔

تحقیق کار مریضوں کی ہڈیوں کے گودے سے سٹیم سیل حاصل کر کے لیباٹری میں ان کی پرورش کریں گے اور پھر انہیں مریضوں کی خون میں داخل کر دیں گے۔

اس بات کی امید کی جا رہی ہے کہ سٹیم سیل انسانی دماغ تک پہنچ کر ایم ایس کی وجہ سے پہچنے والے نقصان کو درست کر دیں گے۔

برطانیہ کی ایم ایس سوسائٹی نے بھی اس تحقیق کے لیے رقم فراہم کی ہے۔

ایم ایس سوسائٹی کو امید ہے کہ ان نئے تجربات سے ملٹیپل اسکلوروسس کے مریضوں کے لیے ایک باقاعدہ طریقۂ علاج سامنے آ سکے گا۔

اس مرض میں جسم کا دفاعی نظام دماغ میں موجود خلیوں اور مائلین نامی مادے کو نقصان پہچانا شروع کر دیتا ہے جس کے نتیجے میں دماغ اور جسم کے دیگر حصوں کے درمیان پیغام رسانی کا نظام متاثر ہو جاتا ہے۔

برطانیہ میں ملٹیپل اسکلوروسس نوجوانوں میں پائے جانے والے دماغی امراض میں سے سب سے زیادہ عام ہے۔

دنیا بھر میں اس مرض کے شکار افراد کی تعداد تیس لاکھ ہے جن میں سے ایک لاکھ برطانیہ میں ہیں۔

بی بی سی