PDA

View Full Version : شوگر کے مریض رمضان میں احتیاط کے ساتھ روزے رکھ سکتے ہیں



محمدمعروف
07-31-2011, 03:34 PM
کراچی (اسٹاف رپورٹر) ذیابیطس کے مریض روزہ رکھ سکتے ہیں مگر چند احتیاطیں لازمی مد نظر رکھیں۔ ان خیالات کا اظہار ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کراچی میں ذیابیطس اور رمضان کے موضوع پر منعقدہ ایک روزہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ڈایا بیٹس اینڈ انڈوکرنولوجی کے ڈائریکٹر پروفیسر زمان شیخ نے کیا۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ذیابیطس کے مرض میں مبتلا کچھ مریضوں کو روزہ رکھنے میں خصوصی مسائل کا سامنا ہوتا ہے۔ جن سے آگہی شوگر کے مریضوں اور جنرل پریکٹیشنر دونوں کیلئے ضروری ہے۔ پروفیسر زمان شیخ نے کہا کہ پوری دنیا کے دو بلین مسلمان رمضان کے مہینے میں روزے رکھتے ہیں۔ جو پوری دنیا کی آبادی کا 25 فیصد ہیں۔ انہوں نے ذیابیطس کے مریضوں کو روزہ رکھنے کے رسک کے لحاظ سے چار حصوں میں تقسیم کیا۔ جن کو ماہ صیام میں خصوصی مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ پروفیسر زمان شیخ نے کہا کہ شوگر کے مریضوں کے روزہ رکھنے کی صورت میں بعض اوقات خون میں شوگر کی بہت زیادہ کمی بھی لاحق ہو سکتی ہے جو غنودگی اور بعد ازاں بے ہوشی میں تبدیل ہو سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ خون میں شوگر اگر 60mg/di سے کم ہو تو روزہ فوراً توڑ دینا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ روزے کے دوران تین دفعہ شوگر گلوکومیٹر سے چیک کرنا چاہئے۔ ایک افطار سے پہلے اور دو گھنٹے افطار کے بعد اور تیسری سحری کے دو گھنٹے کے بعد۔ غذا کے بارے میں انہوں نے کہا کہ افطاری کے بعد اور سحری سے پہلے پانی بہت زیادہ پینا چاہئے اور سحری اور افطاری میں میٹھی اور مرغن چیزوں سے پرہیز کرنا چاہئے جس میں کھجوریں اور جوسز کا استعمال بھی شامل ہے۔
بشکریہ روزنامہ جنگ

این اے ناصر
04-03-2012, 11:29 AM
مفیدمعلومات کے لیے بہت بہت شکریہ۔