PDA

View Full Version : فیصل آباد کے طالب علم اور کلر کہار میں حادثہ



بےباک
09-28-2011, 05:49 PM
کلر کہار کے قریب فیصل آباد کی بس کو خوفناک حادثہ
http://www.canada.com/news/5461099.bin?size=620x400


کلر کہار کے نزدیک ایک بدقسمت بس کے حادثہ میں 37طلباء کی ہلاکت ایک ایسا سانحہ ہے جس نے ملک بھر کے عوام کو غمزدہ کرایا فیصل آباد کے ایک نجی سکول کے بچے کلر کہار میں سیر وتفریح کے بعد واپس جا رہے تھے کہ سالٹ رینج میں اترائی پر تیز رفتاری کے باعث ڈرائیور بس پر قابو نہ رکھ سکا اور وہ کھائی میں جا گری جس کے نتیجے میں اپنے جگر گوشوں کی واپسی کا انتظار کرنے والی مائوں کو معصوم لاشے دیکھنے کو ملے موٹر وے پولیس کے مطابق حادثہ ڈرائیورکی ناتجربہ کاری کی وجہ سے پیش آیا جس میں طلباء اور اساتذہ سمیت ایک سو پانچ افراد سوار تھے جاں بحق ہونے والوں میں سکول کے وائس پرنسپل حفیظ انور اور سٹاف کے دیگر ارکان بھی شامل ہیں موٹروے پولیس کے ترجمان کا کہنا ہے کہ بس کی بریک فیل ہو جانے کے باعث حادثہ رونما ہوا’حادثہ کی اطلاع جونہی فیصل آبادپہنچی بچوں کے گھروں میں قیامت صغریٰ برپا ہو گئی اس سانحہ کی وجہ سے فیصل آباد کے تمام سرکاری ادارے اور کاروباری مراکز منگل کے روز بند رہے اگرچہ وزیر اعلیٰ شہباز شریف نے حادثے کی تحقیقات کے لئے چیئرمین وزیر اعلیٰ معائنہ ٹیم کی سربراہی میں ایک تین رکنی تحقیقاتی کمیٹی قائم کر دی ہے تاہم کمیٹی ممبر بھی تحقیقاتی رپورٹ مرتب کرے جن گھروں کے پھول مرجھا گئے جہاں صف ماتم بچھ گئی جن کے سینے غم سے چھلنی ہو گئے کو تحقیقاتی رپورٹ ان کے زخموں کا مداوا نہیں کر سکتی اس سانحہ کے اس پہلو کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا کہ سکول کی انتظامیہ نے جس بس کو کرائے پر لیاوہ بہت پرانی تھی اور اس میں 72افراد کی گنجائش تھی مگر اس میں ایک سو پانچ افراد کو سوار کرایا گیا اس لئے اوور لوڈنگ اور بس کی خستہ حالی کو حادثے کی وجوہات سے الگ نہیں کیا جا سکتا اگرچہ موٹروے پولیس نے ڈرائیور کی نا تجربہ کاری کو بھی حادثے کی وجہ قرار دیا ہے لیکن پرانی بس کی بریکوں کے فیل ہونے اور اوور لوڈنگ نے بھی ہنستے مسکراتے معصوم پھولوں کو موت کے منہ میں دھکیلنے میں اہم کردار ادا کیا’ ہمیں یہ کہنے میں کوئی تامل نہیں کہ عام طور پر پرائیویٹ سکولوں کی انتظامیہ طلباء کو پکنک پر لے جانے کے لئے پرانی بسوں کو کرائے پر لیتی ہے جو اسے نسبتاً سستے کرائے پر مل جاتی ہیںجبکہ بدعنوانی کی نیت سے دو بسوں کی بجائے ایک ہی بس کرائے پر لیکر بچوں کو ان میں ٹھونسا جاتا ہے موٹر وے پر ہونے والا یہ حادثہ اس رحجان کی عکاسی کرتا ہے صوبائی حکومت کو یہ حکم جاری کرنا چاہیے کہ تعلیمی اداروں کی طرف سے بچوں کو پکنک پر لے جانے کے سلسلے میں اعلیٰ بسوں کا انتظام ہوناچاہیے اور مطلوبہ تعداد سے زیادہ افراد کو نہیں بٹھاناچاہیے جب تک اس حکم پر عمل درآمد کو یقینی نہیں بنایا جائے گا ایسے واقعات کی روک تھام ممکن نہیں ہے .

اردو منظر کے سب ساتھیوں کی طرف سے اظہار تعزیت ، انا للہ و انا الیہ راجعون ، ہم غمزدہ خاندانوں کے غم میں شریک ہیں ، اللہ تعالی آپ سب کو صبر کی توفیق عطا فرمائے ، اور معصوم شہید بچوں کی روح کو ایصال ثواب پہنچے ، آمین آمین آمین

اذان
09-28-2011, 08:44 PM
انا اللہ و انا علیہ راجعون ۔
اللہ تمام مرحومین کو جنت میں جگہ دے اور ان کے لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے ۔ آمین ۔
اللہ تمام زخمی ہونے والے بچوں* اور اساتذہ کو صحت عطا فرمائے ۔ آمین ۔
اللہ ہم سب کی ہدایت فرمائے ۔ آمین ۔

محمدمعروف
09-28-2011, 09:00 PM
انا اللہ وانا الیہ راجعون
اللہ تعالیٰ مرحومین کو اپنی جوار رحمت میں جگہ عطا فرمائے ان کے والدین عزیزواقارب کو صبر و استقامت عطا فرمائے اور زخمیوں کو جلد از جلد صحت و تندرستی عطا فرمائے آمین ۔

لاجواب
09-28-2011, 11:27 PM
انا اللہ و انا علیہ راجعون

عبادت
09-29-2011, 01:18 AM
انا اللہ وانا الیہ راجعون

نورمحمد
10-01-2011, 04:03 PM
انا اللہ وانا الیہ راجعون