PDA

View Full Version : ڈینگی اور سیلاب کے باطنی اسباب ﴿ایک فکر انگیز تحریر﴾



محمدمعروف
10-11-2011, 10:48 PM
http://www.dailyislam.pk/dailyislam/images/2011/october/11-10-2011/editorial/mag-05.gif
http://www.dailyislam.pk/dailyislam/images/2011/october/11-10-2011/editorial/mag-05-2.gif
http://www.dailyislam.pk/dailyislam/images/2011/october/11-10-2011/editorial/mag-05-3.gif
بشکریہ روزنامہ اسلام

محمدمعروف
10-11-2011, 11:30 PM
تمام ساتھیوں سے گزارش ہے کہ مضمون پڑھ کر اپنی قیمتی آراء کا اظہار ضرور کریں ۔

بےباک
10-12-2011, 06:09 AM
واقعی دنیا والے مادی اسباب کی ہی تلاش میں رہتے ہیں ،
ہم بھول چکے ہیں ، کہ ہمارے اعمال اس قابل نہیں کہ اللہ تعالی ہم پر اپنا فضل کریں ، ہمیں اپنی خُو کو بدلنا ہو گا ،
معاشرے میں بگاڑ اسی صورت میں دور ہو سکتا ہے جب ہر بندہ اپنے نفس کا محاسبہ اسلامی اصولوں کے مطابق کرے ،
جزاک اللہ محترم جناب محمد معروف صاحب ،
مضمون واقعی سبق آموز ہے ،:-):-)

تانیہ
10-13-2011, 01:23 PM
معروف جی اپ نے بہت تلخ سچائی بیان کی ہے ہمارے لوگ ایک مچھر کو ختم کرنے کے درپے ہیں لیکن اپنے گناہوں کو چھوڑنے پہ تیار نہیں بلکہ سچ تو یہ ہے کہ گناہ کا احساس تک ناپید ہوتا ہے اکثر اسی لیے ہم اس زوال کی حالت میں ہیں ،،،اللہ تعالی کبھی کسی پر ظلم نہیں کرتا وہ ذات پاک اور رحیم ہے انسان ظالم ہے جو دوسروں کے ساتھ خود پہ بھی ظلم کرتا ہے آج اگر آپ غور فرمائیں حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے فرمان کی روشنی میں تو ہم لوگ اسی بری حالت میں ہیں فحاشی و بےحیائی عام ہے سینما(کیبل) گھر گھر میں ہے، وبائی امراض ہر طرف ہیں جنکا ہمارے لوگ شکار ہیں، آپ چھوٹے سے لیکر کسی بڑے طبقے کو بھی دیکھ لیں سب اپنی اپنی خواہشات کے پیچھے بھاگ رہے ہیں اس میں ہمارے عوام اور حتی کہ لیڈران تک شامل ہیں اسی لیے لوٹ کھسوٹ کی فضا ہے ہر طرف اور دشمنوں پہ ہمارا رعب کیا ہو گا الٹا ہم لوگ انکے رعب تلے دبے ہیں اور مجھے قائد کا فرمان یاد آ رہا ہے کہ جس میں انہوں نے فرمایا کہ اللہ نے ہمیں ایک خوبصورت ملک دیا ہے جس میں تمام خزانے موجود ہیں لیکن آج آپ دیکھو ہمارے لوگ کہیں روٹی کے لیے ترس رہے ہیں کہیں صاف پانی کے لییے

دعا ہے کہ اللہ تعالی ہمیں سیدھے اور سچے راستے پہ چلنے کی توفیق دے اور ہمیشہ اپنا کرم کرے ہم پر تا کہ ہم نہ صرف ان امراض سے دور ہوں بلکہ اللہ تعالی کے قرب میں ہوں ...آمین

محمدمعروف
10-13-2011, 09:48 PM
تحریر کو پڑھ کر اس پر جاندار تبصرہ کرنے پر مشکور ہوں ۔

این اے ناصر
04-03-2012, 11:21 AM
مفیدمعلومات کے لیے بہت بہت شکریہ۔