PDA

View Full Version : مَیں تجھ کو دیکھنے کی تمنا میں چوُر تھا



ایم-ایم
11-14-2011, 04:03 PM
مَیں تجھ کو دیکھنے کی تمنا میں چوُر تھا
تو میرے آس پاس خراماں ضرور تھا

ناگاہ برق میرے نشیمن پہ آ گری
مَیں سوچتا رہا کہ میرا کیا قصُور تھا

پچھلی رات خواب میں وہ مُسکرائے تھے
یا میرے آنسوؤں کے ستاروں کا نُور تھا

اے خلوتِ شعور میں سمٹے ہوُئے حسیں
تو سرحدِ خیال سے کس درچہ دُور تھا

لو بُجھ گیا کِسی کی تمناّ لیے ہوُئے
وہ دل کہ جس پہ کون و مکاں کو غرور تھا

تانیہ
11-16-2011, 06:50 PM
واہ.....

این اے ناصر
04-17-2012, 08:12 PM
بہت خوب جناب ۔ شئیرنگ کاشکریہ۔