PDA

View Full Version : امریکی حکومت سے امیر شخص کی موت ایک لمحہ فکریہ



محمدمعروف
12-07-2011, 03:03 PM
اپنی حیرت انگیز جدید ترین ایجاد آئی پوڈ اور آئی فون سے دنیا کو بدل دینے والا(Steve Jobs)6اکتوبر کو جگر کے کینسر سے وفات پاگیا۔ دنیاو ی اعتبار سے یہ کامیاب ترین شخص تھا، اس کی دولت کا یہ عالم ہے کہ اس کی کمپنی کے پاس امریکی محکمہ خزانہ سے زائد رقم موجود ہے ۔ تازہ ترین اعدادو شمار کے مطابق امریکی حکومت کے پاس 74ارب 70کروڑ ڈالر نقد رقم ہے،جبکہ سٹیو جابز کی کمپنی ایپل کے پاس 76ارب 40کروڑ ڈالر موجود ہیں۔ آئندہ کئی نسلوں بلکہ شاید اپنی ایجاد کے ذریعہ رہتی دنیا تک یاد رکھا جانے والے(Steve Jobs)کی موت ہمارے لئے کیا پیغام ہے؟
دنیا کی سپر طاقت سے زیادہ مال و دولت رکھنے والے کو موت نے چند لمحوں کی مہلت نہیں دی۔تمام تر وسائل کے باوجود 56سال کی عمر میں دنیا سے رخصت ہوگیا۔ وہ اپنے ساتھ کیا لے گیا؟سوچئے اور کئی بار سوچئے۔۔۔!
اس کی موت ہمیں پیغام دے رہی ہے کہ اگر انسان اپنی من چاہی زندگی گزارکر چلاگیاتوموت کے بعد اس کی دولت اور ایجادات اس کے کسی کام نہیں آتی آخرت میں کام آنے والی چیز صرف اللہ اور اس کے رسول کی اطاعت اور اعمال صالحہ ہیں۔
اللہ تعالی قرآن مجیدمیں ارشاد فرماتے ہیں ۔
﴿۱﴾مَنْ كَانَ يُرِيدُ حَرْثَ الْآخِرَةِ نَزِدْ لَهُ فِي حَرْثِه. وَمَنْ كَانَ يُرِيدُ حَرْثَ الدُّنْيَا نُؤْتِهِ مِنْهَا وَمَا لَهُ فِي الْآخِرَةِ مِنْ نَصِيبٍ
جو شخص آخرت کی کھیتی کا خواستگار ہو اس کو ہم اس میں سے دیں گے۔ اور جو دنیا کی کھیتی کا خواستگار ہو اس کو ہم اس میں سے دے دیں گے۔ اور اس کا آخرت میں کچھ حصہ نہ ہوگا (42:20)
﴿۲﴾الَّذِينَ ضَلَّ سَعْيُهُمْ فِي الْحَيَاةِ الدُّنْيَا وَهُمْ يَحْسَبُونَ أَنَّهُمْ يُحْسِنُونَ صُنْعًا
وہ لوگ جن کی سعی دنیا کی زندگی میں برباد ہوگئی۔ اور وہ یہ سمجھے ہوئے ہیں کہ اچھے کام کر رہے ہیں (18:104)
انسان مال ودولت اورحیرت انگیز ایجادات سے دنیاکی فانی زندگی میں توشاید کسی قدر کامیاب ہوجائے مگر اخروی زندگی جو کہ نہ ختم ہونے والی زندگی ہے اس زندگی میں اللہ کے حکموں اوراس کے آخری پیغمبرمحمدعربی صلی اللہ علیہ وسلم کے طریقوں پر عمل کیے بغیرنجات اور کامیابی ناممکن ہے۔
مال ودولت اور جدید اختراعات دنیاوی زندگی میں انسان کی ضرورت ہیں انسان انہیں پانے کی کوشش ضرور کرے مگر اللہ اور اس کے آخری پیغمبرمحمدعربی صلی اللہ علیہ وسلم کے حکموں کی اطاعت کرتے ہوئے ۔دنیاوی کوششوںمیں اگر انسان اپنے خالق کو بھول بیٹھا تو پھر ہمیشہ کا خسارہ اس کا مقدرہے۔اگرکوئی شخص دنیاوی کوششوں کے ساتھ ساتھ اپنے حالق حقیقی کو نہ صرف یاد رکھے بلکہ اس کے حکموں کی پیروی بھی کرتا رہے تو یقینا دنیاوی کامیابی کے ساتھ ساتھ آخروی نجات اور سرخروئی بھی ضرور پالے گا۔

گلاب خان
12-07-2011, 07:55 PM
[color=#000080][size=x-large] سچ کھا جو بھی آیا خالی ہات ہی جاے گا سواے اپنے اعمال کے اس سے پہلے بھی کی آے اور چلے گے اور بھی آیں گے اور خالی ہات چلے جایں گے شداد بھی ایک بادشاھ گزرا جس نے جنت بنا ڈا لی لیکن اس کو دیکھنی بھی نصیب نا ہوی فرعون نمرود کارون کتنے مسالے واقعات ہیں پر سمجھ اس ہی کو آتی ہے جس کو طلب جنت کی رب کی رزا کی ہو تی ہے اللہ ہم سب کو سچ کی پہچان نصیب کرے آمین بھت اچھا مزمون لگایا شکریہ