PDA

View Full Version : تجھ بن



سیما
01-07-2012, 07:01 AM
63072000 سیکنڈز ، 1051200 منٹس ، 17520 گھنٹے ، 730 دن ، 24 مہینے ، 2 سال بیت گئے ۔درد ، دبا ، آنسو ، ٹھنڈی آہیں ، زخمی دل اور مسلسل بے چینی ، تمہارے پیارے مجمع کے اندر بھی تنہائی کا شکار ۔ تم دور ہو بہت دور مگر ایک لمحے کے لیے بھی دل و دماغ سے دور نہ ہو سکے ۔کھا ، پی ، پہن اور ہنس بھی رہے ہیں مگر ” اندر “ زخمی ہے رو رہا ہے ۔” ظالم اغواءکندگان “ اور ان کی سرپرست ” بے رحم سپاہ “ تمہیں ہم سے چھین کر لے گئی مگر بزدل تمہیں ہمارے دلوں سے تو نہیں نکال سکتے ۔
ہم غمزدہ اور بے چین ضرور ہیں مگر کسی لمحے ” امید “ نہیں ٹوٹی ۔امید بھی اس سے ہے جو اس کائنات کا رب ہے ۔ جو بہت مضبوط ہے ۔جس کی طاقت کا کوئی مقابلہ نہیں ۔ وہ طاقت والا ” انہیں “ہدایت دے ۔تمہیں محفوظ رکھے اور راحت جان تمہیں واپس لا کر ہمارے دلوں کا چین لوٹا دے ۔”حسن “5 جنوری پھر آ گیا ۔ تمہاری ماں بے چین ، بہن فاطمہ اور بھائی معاذ جو ہم سے چھپ کر روتے تھے کہ کہیں ماں اور باپ کی بے چینی مزید نہ بڑھ جائے ، اب تو ان کے ضبط کے بندھن بھی ٹوٹ گئے ۔ فاطمہ کی آہوں نے میرے چاند ” اندر “ سے مجھے بھی توڑ کر رکھ دیا ہے ۔” عظیم حسن “ پاس تھے تو تمہاری عظمت کو سمجھ نہ سکے ۔ اب تو لوٹ آ یار،ہم اتنے بھی برے نہیں ۔جتنا برا ان ” مفتیان عظام “ نے ہمیں بنا دیا ہے ۔ کبھی کہا گیا باپ نے خود چھپایا ہوا ہے ۔ کبھی تمہارے باپ کو ” ذہنی مریض “ قرار دیا گیا ۔
خبر نگارشکیل انجم نے لکھا پریڈ لین کے ” ماسٹر مائنڈ “ کے ساتھ تم بھی پس دیوار زنداں ہو ۔ ٹھیک گیارہ مہینے بعد اسی خبر نگار نے لکھا تم نے ماں کے ساتھ آنے سے انکار کر دیا اور تم القاعدہ سے مل کر نیٹو فورسز کے خلاف ” جہاد “ کر رہے ہو ۔میرے چاند ! ہمارا دل بے چین ضرور ہے مگر ہم تھڑ دلے نہیں ۔ سب سن رہے ہیں ۔ سب برداشت کر رہے ہیں کہ
ہے جہاد صبر میں بھی،یہ جہاد کرتے رہنا
مگر عزیزی ہمیں کوئی غلط فہمی نہیں۔ بہت اچھی طرح معلوم ہے ۔ تم کہاں ہو اور اغواءکندگان کون ہیں ۔ اچھی طرح معلوم ہے ۔ یہ ” جہاد “ کیا ہے اور اس کی سرپرستی کون کر رہا ہے بہت اچھی طرح معلوم، تم میرے اعتقاد اور یقین کو بھول گئے ؟ نہیں مجھے تم پر بہت اعتماد ہے تم بھول نہیں سکتے، جی ہاں مجھے یقین ہے جو رتی برابر بھی ظلم کرے گا وہ اس کا بدلہ ضرور پائے گا ۔میرا مالک بہت مضبوط ہے ۔ بہت طاقت والا ۔ غفور، رحیم، ستار اور بہت صفات والا ۔ وہ رحمان ضرور رحم کرے گا اور تم کو ہم سے ضرور ملائے گا جلد بہت جلد۔ میرے عزیز! حفیظ کی امان میں ہو ۔ اسی سے دست بدعا ہیں کہ جہاں بھی ہو وہ ہمیشہ تمہیں اپنی حفاظت میں رکھے ۔آمین
فقط تمہارا ابو
دل کا کیا ہے یہ تو تیری یادوں کے سہارے جی لے گا
بات آنکھوں کی ہے جو ترستی ہیں ترے دیدار کے لیے
اور
دل کے افق میں گم شدہ ستارہ مل جائے
شب غم میں کوئی جینے کا اشارہ مل جائے
وہ ایک شخص بہت کم میسر ہے ہم کو
آرزو یہ ہے کہ کسی روز وہ سارا مل جائے
عین ممکن ہے کہ تعبیر بھی ایک جیسی ہو
تیرے خوابوں سے اگر خواب ہمارا مل جائے
اسے کہنا کہ ملاقات ادھوری تھی وہ
اسے کہنا کہ کبھی آ کے دوبارہ مل جائے
نفع زیست کی کب ہم نے تمنا کی ہے
کیا یہ کم ہے کہ محبت کا خسارہ مل جائی


شکیل احمد ترابی
(روز نامہ جسارت)

بےباک
01-08-2012, 08:27 AM
دل کا کیا ہے یہ تو تیری یادوں کے سہارے جی لے گا
بات آنکھوں کی ہے جو ترستی ہیں ترے دیدار کے لیے

خوب اچھا کام آپ نے شئیر کیا ، شکریہ سیما جی