PDA

View Full Version : دنیا تو ایک کنارا ہے



قرطاس
01-07-2012, 08:24 PM
دنیا تو ایک کنارا ہے
ہر اک ظلمت کا مارا ہے
روشنی ہے دم سے اس کے
تنہا جو چاند تارا ہے
سخن ہواب اُن سے کیوں کر
فلک ہر ان کا پارا ہے
دو رستوں پر پر پرچھائیاں
تیجے پہ خوف ڈر ڈھاڑا ہے



میری ابتدائی دور کی شاعری جب علم العروض کا
کچھ خاص علم نہ تھا

این اے ناصر
03-31-2012, 12:38 PM
واہ بہت خوب۔ شکریہ