PDA

View Full Version : دل قلندر ہے جگر عشق میں تندور میاں



فاروق درویش
01-11-2012, 12:54 AM
دل قلندر ہے جگر عشق میں تندور میاں
شوق ِ دیدار روانہ ہے سوئے طور میاں

گل بدن شعلہ ء افلاس میں جل جاتے ہیں
جسم بازار میں بک جاتے ہیں مجبور میاں

دل کے زندانوں سے آئے گی انالحق کی صدا
شہر ِ آشوب سے اٹھے کوئی منصور میاں

شب کی زنجیر ہےآزادی ء گل رنگ مری
صبح ِ خوں رنگ لکھے شام کے دستور میاں

مر گیے شاہ سدا جینے کی حسرت لے کر
ہم فقیروں نے لکھا مرنے کا منشور میاں

چاند اترا جو مرے شہر مسافر بن کر
کوفہ ء دہر میں مر جائے گا بے نور میاں

رات درویش کی تربت پہ تھے گریاں تارے
صبح چھیڑے گی صبا نغمہ ء عاشور میاں

فاروق درویش

سیما
01-11-2012, 01:55 AM
السلام علیکم آپکی پہلی پوسٹ اور وہ بھی زبردست بہت شکریہ آپکا دوریش بھائ

قرطاس
01-11-2012, 06:37 AM
بہت خوب

فاروق درویش
01-11-2012, 02:27 PM
السلام علیکم آپکی پہلی پوسٹ اور وہ بھی زبردست بہت شکریہ آپکا دوریش بھائ


واجب الحترام بہن سیما جی ! محبتوں اور حوصلہ افزائی کیلئے ممنون ہوں ۔۔۔۔۔۔ جگ جگ جئیں

فاروق درویش
01-11-2012, 02:42 PM
[size=small]بہت خوب


خوش آباد برادر

بےباک
01-12-2012, 08:45 PM
بہت ہی خوب ، شاندار فاروق درویش صاحب ، آپ کی شاعری دل کو چھُو لینے والی ہے ،

چاند اترا جو مرے شہر مسافر بن کر
کوفہ ء دہر میں مر جائے گا بے نور میاں

رات درویش کی تربت پہ تھے گریاں تارے
صبح چھیڑے گی صبا نغمہ ء عاشور میاں

تانیہ
01-13-2012, 07:20 PM
رات درویش کی تربت پہ تھے گریاں تارے
صبح چھیڑے گی صبا نغمہ ء عاشور میاں

واہ۔۔۔۔زبردست

این اے ناصر
03-31-2012, 12:37 PM
واہ بہت خوب۔ شکریہ