PDA

View Full Version : ولادت باسعادت اور سیرت نبوی محمد صلی علیہ وسلم



مدنی
02-04-2012, 10:30 PM
آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی ولادت باسعادت نہ صرف انسانوں کے لئے بلکہ اللہ کی پوری مخلوقات کے لئے باعث رحمت وسعادت تھی ۔آپ کی والدہ ماجدہ آمنہ بنت وھب بیان کرتی ہیں :جب آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی ولادت ہوئی تو میرے جسم سے ایک نورنکلاجس سے ملک شام کے محلات روش ہوگئے ۔ایوان کسری کے چودہ کنگورے گرگئے ۔مجوس کا آتش کدہ ٹھنڈا ہوگیا۔بحیرہ ساوہ خشک ہوگیا۔اور اس کے اردگرد کے گرجے منہدم ہوگئے(مختصر سیرت للشیخ عبداللہ ص:12)
نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم موسم بہار میں(حضرت یحیٰی علیہ السلام اور حضرت داود علیہ السلام بھی موسم بہار میں پیدا ہوئے تھے) دوشنبہ ، 9 ربیع الاول 1عام الفیل ،مطابق 22اپریل571،مطابق یکم جیٹھ سمت 628 بکرمی کو مکہ معظمہ میں بعداز صبح صادق وقبل ازطلوع نیر عالم تاب پید اہوئے۔
دوشنبہ ،پیر کےدن رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی ولادت ،بعثت اور اسی دن وحی نازل ہوئی ۔(مسلم:197،1162)
تاریخ ولادت میں مئورخین نے اختلاف کیا ہے البتہ تاریخ وفات میں سب مورخین کا اس بات پر اتفا ق ہے کہ وفات 12 ربیع الاول ہے ۔ طبری اور ابن خلدون نے 12جبکہ ابوالفداء نے 10لکھی ہے۔ مگر سب کا اتفاق ہے کہ دوشبنہ کا دن 9 ربیع الاول کے سوا کسی اور تاریخ سے اتفا ق نہیں کھاتا۔اس لئے 9 ربیع الاول ہی صحیح ہے ۔ تاریخ دول العرب والاسلام میں محمد طلعت عرب نے بھی9 تاریخ ہی کو صحیح قراردیاہے ۔
واقعہ عام الفیل سے 55 دن بعد 9 ربیع الاول ہی بنتی ہے ۔ 22 اپریل گریگون رول کے مطابق ہے جس پر ستمبر 1752سے انگریزی تقویم کا حساب شروع ہوا ہے ۔لیکن قاعدہ قدیم کےمطابق 9 ربیع الاول 19 اپریل 5484جولین کے تھی اور گریگون نے اس 19 کو 22اپریل 571 بروئے حساب قدیم قراردیا۔
ولادت کی خوشی : پیر کے دن رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے روزہ رکھا ہے ۔ جب پوچھا گیا تو فرمایا ۔اس دن میر ی ولادت ہوئی ۔(مسلم )
آج اگر نے میلاد کی خوشی منانی ہے تو اس دن کا روزہ رکھے ۔رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی ولادت ربیع الاول میں تو آپ کی وفات بھی ربیع الاول میں ہے ۔ آپ کی ولادت باسعادت کی خوشی ہے تو آپکا اس دنیا سے رخصت ہونا زیادہ غم ناک ہے۔ جب حزن زیادہ ہے تو پھر خوشیاں کس چیز کی ۔حضرت فاطمہ رضی اللہ عنہا نے آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی وفات پر فرمایا تھا۔ ہم پر اس قدر مصائب ٹوٹے پڑے ہیں کہ اگر دنوں پر ڈال دیے جائیں تو وہ تاریک رات بن جائیں ۔ حضرت بلال رضی اللہ عنہ نے غم کی وجہ سے اذان دینا چھوڑ دی تھی ۔اور تمام صحابہ غم سے نڈھال تھے ۔مگر آج کا مسلمان خود ساختہ طریقوں ، کھانے پینے کے چکر میں اسوہ حسنہ کو چھوڑ کرپتہ نہیں کس کو کو خوش کرنے کے لئیے یہ سب کیا جارہا ہے ۔
اللہ ان بھائیوں کو ہدایت نصیب فرمائے۔

بےباک
02-05-2012, 06:04 PM
جناب مدنی صاحب ،
بہت خؤب ، جزاک اللہ خیرا ،
سیرت نبوی (محمد صلی علیہ وسلم )کے موضوع پر میں نے دو عربی کی کتابوں کے ترجمے کے لنک دیے ہیں آپ ان کو ڈاون لوڈ کر لیں
پی ڈی ایف شکل میں ہیں
ایک کا نام ہے ،
1: الوفاء ۔ امام عبدالرحمن الجوزی کی عربی کتاب کا اردو ترجمہ ہے،
2: الشفاء ۔ دو حصے ۔۔۔ ابوالفضل قاضی عیاض مالکی کی عربی کتاب کا ترجمہ ہے ،
مجھے امید ہے قارئیں کے لیے بالکل نئی کتب ہوں گی ،
شکریہ ، دعاؤں کا طالب آپ کا بھائی
بےباک ۔۔۔۔ محمد یونس عزیز

http://www.4shared.com/office/bjYHXYqN/al-wafaa__seerat_nabvi_book_ur.html
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
http://www.4shared.com/office/k9SOmpVT/al_shifa_1_urdu_islamic_seerat.html
http://www.4shared.com/office/NVhJAYnH/al_shifa_2_urdu_islamic_serat_.html
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔

گلاب خان
02-05-2012, 08:14 PM
اسلام علیکم بھت ہی عمدھ مدنی بھای بھت اچھے طریقے سے سمجھایا اللہ آپ کو جزاے خیر دے آمین

اسامہ حماد
02-08-2012, 09:36 PM
جزاک اللہ خیرا

مدنی بھائی بہت عمدہ اور معتدل پیغام ہے ۔

pervaz khan
06-03-2012, 01:10 PM
جزاک اللہ