PDA

View Full Version : آج جو تجھ سے ملا ہے، کل جدا ہو جائے گا



اذان
03-11-2012, 09:02 PM
آج جو تجھ سے ملا ہے، کل جدا ہو جائے گا


آج جو تجھ سے ملا ہے، کل جدا ہو جائے گا
دیکھتے ہی دیکھتے یہ سانحہ ہو جائے گا
اس طرح سے ہو گئی ہے اس کی مجھ سے دشمنی
بن گیا گر میں دیا تو وہ ہوا ہو جائے گا
ان گنت لوگوں سے اس نے چھین لی ہے زندگی
مار کر وہ خلق کو جیسے خدا ہو جائے گا
اک حقیقت ہے مگر یہ مانتا کوئی نہیں
اک نہ اک دن ہر کسی کا فیصلہ ہو جائے گا
دو گھڑی کو سن لو مجھ سے دردِ دل کی داستاں
اور کیا ہے بس ذرا سا آسرا ہو جائے گا
ہو سکے تو روک دے ظالم کو اس کے ظلم سے
سعد ورنہ جینا تیرا اک سزا ہو جائے گا


سعد للہ شاہ

این اے ناصر
03-11-2012, 11:37 PM
واہ، بہت خوب ۔

نگار
07-12-2014, 06:06 AM
اس طرح سے ہو گئی ہے اس کی مجھ سے دشمنی
بن گیا گر میں دیا تو وہ ہوا ہو جائے گا


بہترین شاعری ارسال کرنے پہ آپ کا بہت شکریہ

تانیہ
07-12-2014, 10:23 AM
واہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

saba
07-12-2014, 11:04 AM
نائس شئیرنگ