PDA

View Full Version : امریکی فوجی ۔ ایک قاتل



بےباک
03-12-2012, 08:56 AM
امریکی فوجی پاگل ہو گیا فائرنگ سے16 افغان شہری ہلاک کر ڈالے

http://ahwaal.com/images/stories/2012/March/01/---%20aa%20aa%205029t2d443287f24dt20120226155953.jpg

افغان صوبہ قندھار میں ایک امریکی فوجی اہلکار نے سویلین شہریوں پر اندھا دھند فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں سولہ بے گناہ شہری ہلاک ہوگئے اور متعدد زخمی ہوئے۔صوبہ قندھار کے ضلع پنجوائی میں قائم امریکی بیس سے ایک امریکی فوجی باہر نکلا اور اپنی رائفل سے سویلین عوام پر اندھا دھند فائرنگ کر دی جس سے سولہ شہری ہلاک، درجنوں زخمی ہو گئے۔ نیٹو نے فائرنگ کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ فائرنگ میں ملوث امریکی فوجی اہلکار کو حراست میں لے لیا گیا نیٹو کے ترجمان جٹن بروکفد نے بتایا کہ فائرنگ سے کئی لوگ زخمی ہوئے ہیں۔ امریکی فورسز افغان فوج کے ساتھ مل کر اس واقعہ کی تحقیقات کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہلاک ہونے والے شہریوں کے لواحقین کے ساتھ ہمیں پوری ہمدردی ہے۔ اس سے قبل قندھار کے گورنر طوریالی ویزا نے بتایا کہ فائرنگ سے سولہ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔
سولہ شہریوں کے قتل پر حامد کرزئی نے امریکہ سے وضاحت مانگ لی
افغان صدر حامد کرزئي نے امريکي فوجي کے ہاتھوں 16 شہريوں کے قتل پر امريکي فوج سے وضاحت طلب کرلي. اپنے ايک بيان ميں حامد کرزئي نے کہا ہے کہ قند ھار ميں امريکي فوجي کے ہاتھوں شہريوں کي ہلاکت افسوسناک واقعہ ہے. انہوں نے کہا ہے کہ فائرنگ جان بوجھ کر کي گئي اور شہريوں کي ہلاکت ناقابل معافي ہے. انہوں نے کہا ہے کہ ہلاک ہونے والوں ميں 9 بچے اور 3 خواتين شامل ہيں. صوبہ قندھار ميں ايک امريکي فوجي نے رات گئے گھروں ميں گھس کر اندھا دھند فائرنگ کرکے کم از کم 16 افراد کو ہلاک کيا تھا. یہ امریکی فوجی اس بات پر مشتعل تھا کہ افغانوں نے قرآن پاک کی شہادت پرمشتعل ہوکر کیوں امریکی فوجیوں کو قتل کیا۔ اس امریکی فوجی نے باقاعدہ تیاری کی اور بھاری مقدار میں ایمونیشن لے کر قندہار شہر میں گیا اور تین گھروں میں گھس کر اندھا دھند گولیاں چلائیں جس سے سولہ عام باشندے مارے گئے۔ امريکا نے افغان شہريوں کي ہلاکت پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کيا ہے. ترجمان امريکي محکمہ خارجہ نے کہا ہے کہ افغان شہريوں کي ہلاکت پر ان کے اہل خانہ کے غم ميں برابر کے شريک ہيں.

این اے ناصر
03-12-2012, 11:05 AM
شئیرنگ کاشکریہ۔