PDA

View Full Version : غیر ممالک میں پاکستانی



انجم رشید
03-28-2012, 09:08 PM
السلام علیکم۔
عرصہ ہوا ایک بات دماغ میں تھی جب میں یونان میں تھا تو ہمیشہ دوستوں اور جاننے والے پاکستانیوں کو یہی بات سمجھتا تھا کل ایک مضون پڑھا پھر اس بارے میں سوچا کیوں نہ یہ بات سب سے کہوں شاید کیسی کی سمجھ میں میری بات آجاۓ ،
بات یہ ہے کہ بہت سے پاکستانی بسلسلہ روز گار مغرب کا رخ کرتے ہیں باقی مشکلات کے علاوہ ان کو سب سے بڑی مشکل وہاں کی لیگلیشن کی ہوتی ہے سو ہمارے جوان وہاں ہر قانونی اور غیر قانونی ہر اخلاقی اور غیر اخلاقی راستہ اختیار کرتےہیں ان راستوں میں ایک راستہ انتہائی خطرناک ہے اور وہ ہے شادی کا اور پاکستانی بلا سوچے سمجھیں یہ راستہ اختیار کر لیتے ہیں ،
ہوتا یہ ہے کہ ہمارے جوان مغرب کا رنگ دیکھ کر اس رنگ میں اپنے آپ کو رنگنا چاہتے ہیں (کواچلا ہنس کی چال) بنا سوچیں سمجھے ان کو مغرب کی رنگینیاں بہت پسند آتی ہیں لیکن یہ نہیں سوچتے کہ بعد میں کیا ہو گا ،
کچھ تو عیاشیوں کے لیے شادی کرتے ہیں اور کچھ امیگریشن کے لیے وہ اپنی غیرت کو اس وقت بھول جاتے ہیں ان کی گوری گرل فرینڈ یا وائف جو لباس چاہے پہنے ان کو کوئی مسلہ نہیں خواہ وہ ام خبیث یعنی شراب کا استعمال کرے کوئی بات نہیں لیکن جب ان کے ہاں بیٹی پیدا ہوتی ہے تو پھر غیرت جاگ پڑتی ہے پھر یہ اپنے آپ کو مسلم سمجھنے لگتے ہیں اور یہاں ہی مسائل شروع ہوجاتے ہیں کوئی اپنی بچی کو پاک لانے کی کوشش کرتا ہے قانونی یا غیر قانونی اور جب وہ بچی پاکستان لے آتے ہیں تو گوری بیوی کی کوشش ہوتی ہے کہ اپنی بچی کو واپس لاۓ وہ ہر قانونی چارہ جوئی کرتی ہے ان کی حکومت ہماری حکومت پر پریشر بھی ڈالتی ہے یہاں ہماری عدالتیں بے بس ہو جاتی ہیں ان کو ماں کے حق میں فیصلہ کرنا پڑ جاتا ہے ایک ایسا ہی واقع میں کچھ دن پہلے پڑھ چکا ہوں جس میں عدالت کو بچی واپس ماں کو دینا پڑی حالانکہ کہ بچی حافظ قران تھی مسلم تھی ماں کے ساتھ جانے کے لیے تیار نہیں تھی لیکن مجبوری اُسے جانا پڑا کیا آپ سوچ سکتے ہیں کہ اس بچی پر کیا گزری
ایسے ہی کئی واقعات میرے اپنے تجربے میں ہیں۔ کتنے پاکستانیوں نے عیسائی ہو کر شادیاں کی ہیں یونان میں اور جب ان کے ہاں بچیاں پیدا ہوئیں اور جوان ہوئیں تو کیا گزری ان پر ۔
یہاں قصور کس کا کیا اس گوری بیوی کا یا بچی کا یا اس بد بخت پاکستانی کا جس نے جوانی میں بنا سوچے سمجھے اپنی امیگریشن کے لیے یا اپنی عیاشیوں کے لیے گوری سے شادی کی تھی اور جب بچی ہوئی تو یاد آیا کہ میں تو غیرت مند باپ ہوں کیا شادی کرتے وقت اس کی غیرت مر گئ تھی ۔
میں کئ باتوں کا گواہ ہوں اللہ تعالی معاف فرمائے یہی دعا تھی کہ اللہ سب کو اس ذلت سے بچاۓ ۔
ایک واقعہ بتاتا ہوں ایک پاکستانی نے یونانی عورت سے شادی کی اس کی بیٹی کی شادی عیسائی لڑکے سے ہوئی اس کا لڑکا حادثے میں جان بحق ہوا اور ہم اس کی فاتحہ بھی نہ کہہ سکے کیوں کہ دونوں بچے ماں کے مذھب پر تھے ایسے اور کئی واقعات بتا سکتا ہوں ۔
میرا مقصد صرف یہ تھا کہ آپ جو مغرب میں جا رہے ہیں یا وہاں موجود ہیں پہلے سوچ لیجے رازق اللہ تعالی ہے بے شک آپ جائیں لیکن شادی سے پہلے یہ سب سوچ لیں ،
اور نۓ جانے والوں کو بھی بتا دوں کہ جو کچھ آپ مغرب کے بارے میں سنتے ہیں اس میں کوئی حقیقت نہیں جانا ہے تو شوق سے جائیں لیکن صرف روزی کمانے یہ سوچ کر نہیں کہ وہاں عیاشی ہے ،
اللہ تبآرک تعالی سب کو ہدایت عطاء فرماۓ آمین ثم آمین

سیما
03-29-2012, 03:28 AM
اللہ تبآرک تعالی سب کو ہدایت عطاء فرماۓ آمین ثم آمین ۔۔ آپ نے جو لکھا 10000000000000 فیصد سچ لکھا ۔

نگار
03-29-2012, 07:24 AM
ہر طرف بس دنیاداری ہے اس لیے انسان لالچی بن گیا ہے۔۔اور دولت کمانے
کے چکر میں ہر راستے اپنانے کو تیار رہتا ہے۔جبکہ اس دنیا سے ہر
انسان خالی ہاتھ ہی گیا ہے۔۔۔
اگر کوئی دل سے محنت کریں تو کوئی شک نہیں کہ یہ پاکستان اس کے لیے
امریکہ سے کم نا ہوگا۔یہاں بھی اچھے اچھے کاروبار شروع کیے جا سکتے ہیں۔
اگر یورپ ہو تو بھی بنا محنت کے کچھ حاصل نہیں ہوتا۔۔
اللہ تعالی سب کو ہدایت نصیب کرے۔۔آمین

بےباک
03-29-2012, 09:48 AM
اس درد ناک اور سچی شئیرنگ کرنے پر آپ کا شکرگزار ہوں ،
یہ تلخ حقیقت ہے محترم ، اور ہم گذشتہ کئی سالوں سے اس میں مبتلا ہیں ،اور باقی کسریں ہماری حکومت نکال دیتی ہے جو ملک میں نہ تو سکون ہونے دیتی ہے اور نہ انصاف اور نہ ذرائع روزگار ،