PDA

View Full Version : انگلش کرکٹ کلب لیشنگ دورئہ پاکستان پر آمادہ



سیما
03-31-2012, 05:42 PM
[/color][color=#9400D3]http://www.urdutimes.com/sites/default/files/Lashing-cricket-club.jpg?1333100881


اسلام آباد: بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم کے دورئہ پاکستان کے حوالے سے ممکنہ انکار کے بعد پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کی ایک نئی امید جاگ اٹھی۔ انگلش کرکٹ کلب لیشنگ دورئہ پاکستان کیلئے تیار ہوگیا جبکہ برطانوی یونیورسٹیز آئندہ ماہ پاکستان آئے گی۔ کلب کے چیف ڈیوڈ فولب نے کہا ہے کہ اس دورے کے حوالے سے پاکستان کرکٹ بورڈ کو جلد از جلد فیصلہ کرنا ہوگا۔ لیشنگ ورلڈ الیون کے دورہ پاکستان سے ملک میں عالمی کرکٹ کی بحالی میں مدد ملے گی۔ کلب کے چیف ڈیوڈ فولب نے کہا ہے کہ وہ اپنی ٹیم پاکستان لانا چاہتے ہیں۔ اس ٹیم کا شیڈول بہت مصروف ہے جو چوبیس اپریل سے شروع ہوگا اس لئے دورے کے حوالے سے پاکستان کو جلد حکمت عملی بنانا ہوگی۔ اس کلب میں دنیائے کرکٹ کے کئی نامور کھلاڑی حصہ لیتے ہیں۔ ان میں سچن ٹنڈولکر، مرلی دھرن، برائن لارا، ویوین رچرڈز، وسیم اکرم، ایلن ڈونلڈ نمایاں ہیں۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کے ڈائریکٹر انٹرنیشنل کرکٹ انتخاب عالم اور سابق ٹیسٹ وکٹ کیپر راشد لطیف بنگلہ دیشی کرکٹ ٹیم کے دورہ پاکستان کے متوقع انکار کے پیش نظر انگلش کلب سے مذاکرات کر رہے ہیں اور کھلاڑیوں کو بھاری معاوضے پر پاکستان لانے کی بھرپور کوشش کر رہے ہیں۔ انگلش کلب اپریل میں دورہ پاکستان طے ہونے کی صورت میں دو ون ڈے میچز کھیلے گی۔ علاوہ ازیں برطانوی یونیورسٹی کی کرکٹ ٹیم اگلے ماہ پاکستان کا دورہ کرے گی۔ ٹیم قذافی اسٹیڈیم لاہور میں پی سی بی انڈر 19 الیون کے خلاف ون ڈے میچز کھیلے گی۔ مہمان ٹیم بارہ اپریل کو لاہور پہنچے گی۔ چودہ اور سولہ اپریل کو دن کی روشنی میں دونوں ون ڈے میچز کھیلے جائیں گے۔ ٹیم اٹھارہ اپریل تک لاہور میں قیام کرے گی۔ پی سی بی کے مطابق یونیورسٹی ٹیم کی قیادت کمال عالم کریں گے۔ دیگر کھلاڑیوں میں ول ہڈسن، جیمز کوسٹوریز، ول کوسٹوریز ہارو، برینڈن میکرچر، ممتاز حبیب، میکس ویل میک السٹر، جیمز آرہارو، اسپنر کارویلی، رابرٹ گلیمور، پال رزل، سیموئیل آوٹرم، جیمز ویلک، شمائل خان، عمیر جاوید شامل ہیں۔

این اے ناصر
03-31-2012, 05:47 PM
باخبرکرنے کاشکریہ ۔

بےباک
03-31-2012, 10:11 PM
سیماصاحبہ اچھی خبریں دیتی ہے ، جزاک اللہ

شاہنواز
04-01-2012, 01:39 AM
جی ہاں یہ خبر میں نے بھی پڑھی ہے ان لوگوں کے لئے سبق آموز ہیں کہ جو پاکستان کے خلاف ہر مرتبہ ہرزہ سرائی کرتے ہیں اور جب بھی کسی ٹیم کا پاکستان کے دورے کا پروگرام بنتا ہے جان بوجھ کر حالات خراب کردیئے جاتے ہیں تا کہ کوئی ٹیم یہان آئے ہی نہ حال ہی کی مثال لے لیں ادھر لیشنگ نے اور یونیورسٹی کی ٹیم نے پاکستان آنے کا اعلان کیا توادھر کراچنی اور دیگر علاقوں کے حالات خراب کردئیے گئے اور دنیا کو یہ میسج بھیجا گیا کہ آپ پاگل تو نہیں ہو یہاں اتنے حالات خراب ہیں اور آپ پاکستان اپنی ٹیم بھیج رہے ہیں کمال ہے بھئی

شاہنواز
04-01-2012, 01:44 AM
نیا امریکی شوشہ