PDA

View Full Version : سیاست دان



انجم رشید
04-11-2012, 05:34 PM
السلام علیکم ۔

جیسے جیسے الیکشن قریب آرہے ہیں ایسے ایسے سیاست کا بازار گرم ہو رہا ہے ہر پارٹی کافی نعرے لگا رہی ہے کہیں خادمین پنجاب جاگ گۓ ہیں کہیں بھٹو ازم کے پورا ہونے کا نعرہ لگ رہا ہے اور کہیں سونامی کا زکر ہو رہا ہے کوئی اپنے والد کی خوبیاں بیان کر رہا ہے اور کوئی دفاع پاکستان کا نعرہ لگا رہا ہے یعنی ہر کوئی اپنی دوکانداری چمکانے کے چکر میں ہے ۔پہلے تو بات کرتے ہیں حکمران پارٹی کی جس نے غریب مکاؤ پروگرام کا 80 فیصد کام مکمکل کر لیا ہے بس تھوڑی سی کسر رہ گئ ہے نہ یہاں کوئی غریب بچے کا نہ کوئی مسلہ رہے گا یہاں چین ہی چین ہو گا حکمران پارٹی سکون سے حکمرانی کر سکے گی جتنا چاہے لوٹ مار کر لے گی کوئی پوچھنے والا نہ ہو گا ۔

جناب صدر صاحب کی کیا بات ہے ان کو کون سہ مسلہ ہے وہ تو اپنے بچے اور دولت باہر منتقل کر چکے ہیں جب دل کرے گا چلے جائیں گے ۔

جناب صدر صاحب کو کیا قوم و ملت سے وہ کون سے پاکستانی ہیں بس حکمرانی کا شوق پورا کرنے پاکستان آتے ہیں آپ ناراض کیوں ہوتے ہیں اگر وہ لوٹ مار کر لیں آخر ان کا حق ہے آپ ہی نے تو ان کو ووٹ دے کر کامیاب کیا ہے آخر وہ ہمارے صدر ہیں یہ کیا کم ہے کہ انہوں نے صدارت قبول کر لی آخر لوٹ مار نہ کریں تو کیا کریں ۔

کیا کہنے صدر صاحب کی سیاست کے ۔

بی بی کی حکومت جب ان کے بھائی کا قتل ہوا جس کے قاتلوں کا آج تک پتہ نہ چل سکا خود بی بی کا قتل ہوا آج بھی حکومت پیپلز پارٹی کی ہے لیکن قاتلوں کا کوئی علم نہیں الٹا جناب محترم صدر صاحب نے بی بی کی برسی پر فرمایا کہ سپریم کورٹ بی بی کے قاتلوں کا پتہ کیوں نہیں کرواتاکیا بات ہے جناب کی کیا سب کو علم نہیں کہ قاتل کون ہیں بے چارے صدر صاحب نے صدارت کے لیے کیا کچھ نہیں کیا ایک بچہ جس کو اردو تک نہیں آتی جس کا پاکستان سے دور دور تک تعلق نہیں اس کو پارٹی کا چیرمین بنا دیا لوٹ مار کرنے کے لیے بے چارے نے کیا کیا قربانیاں نہیں دیں ایک خبر چل رہی ہے کہ صدر صاحب عام الیکشن سے پہلے صدارتی الیکشن کروا لیں گے تاکہ جناب کو پانچ سال اور مل جایں لوٹ مار کے لیے ۔

ہمارے وزیر اعظم صاحب کے کیا ہی کہنے وہ اتنی خذمت کر رہے ہیں ملک و قوم کی وہ تو چھ ماہ جیل کی ہوا کھانے کے لیے تیار ہیں تاکہ سیاسی شہید کا رتبہ حاصل کر سکیں ان کے دونوں صاحب زادے کیا کم خذمت کر رہے ہیں ملک وقوم کی دونوں بے چاروں نے ملک کو خوب لوٹا ہے ایک تو حاجیوں کی اتنی خذمت کی ہے کہ کیا کہنے کس نے کہا تھا حاجیوں کو حج پر جانے کا دوسرے نے کمیکل کا اتنا اسٹاک منگوا لیا پاکستان میں کہ نشیوں کی موج ہو گئ

ب ے چارے دعا دیں گے اور جناب کا خزانہ بھی بھر گیا اگر باقیوں کا ذکر کروں تو مضمون بہت لمبا ہو جاۓ گا ۔

لوگ میاں برادراں کی خذمت بھول رہے ہیں بے چاروں نے کتنی خزمت کی ہے بنکوں کی چوہدریوں سے مل کر بنکوں کے بنک خالی کر دیے ایسے ہی بنکوں کو مشکل تھا کہاں اتنا پیسہ سنبھال کر رکھتے قرض اتارو مہم کا پیسہ بھی ایسے ہی پڑا تھا اس کو بھی تو خرچ ہونا ہی تھا قوم پر نہیں تو اپنے آپ پر ہی اس؎میں کیا قصور ہے یہ تو ملک و قوم کی خذمت ہے بے چاروں کی دو بار حکومت آئی ملک کو اتنا سنوارا کہ کیا کہنے جو ایٹمی منصوبہ بھٹو مرحوم نے شروع کیا تھا وہ اپنے نام لگوا لیا ایک موٹر وے بنا کر دیا قوم کو اس کو کھینچ کر لاہور لے گۓ اور کیا کرتے ۔

مولانا فضل الرحمان صاحب کے کیا کہنے ان کے وزیر نے بھی تو حج سے کافی کچھ کمایا یہاں حکومت وہاں وہ بھی موجود ہیں ۔

چوہدری برادراں کو کوئئ کیوں الزام دے لوٹ مار میں ان کا کوئی ثانی نہیں ان کی ہمیشہ ہی کوشش رہی ہے کہ ہمیشہ حکومت الوقت کا ساتھ دیں خواہ پی پی پی جیسی دشمن پارٹی کیوں نہ ہو ( یہ دشمنی دیکھاوے کی ہوتی ہے سیاست میں )۔

مذہبی[/size] پارٹیاں تو معصوم ہیں ان کو اپنے اپنے مسلک کے پرچار سے فرست کم ملتی ہے اتنا کام کرنا ہوتا ہے انہوں نے اپنی اپنی ڈیڑھ اینٹ کی مسجد بھی بنانا ہوتی ہے پھر کچھ شدت پسند بھی بنانے ہوتے ہیں ان بے چاروں نے تو 11 سال تک ایک ڈکٹیٹر کا ساتھ دیا اسلام نظام لانے کے لیے اب اگر 11 سال تک اسلامی نظام تک نہ لا سکے تو اس؎ میں ان کا کای قصور حکومت میں تو ان کا حصہ تھا نہ ۔

ایک لیڈر اور ہیں وہ ہیں سونامی لانے والے سونامی سے پہلے زلزلہ آتا ہے لیکن یہاں تو زلزلے کا نام و نشان نہیں یہ ایک وقت تھا قوم کو جگانے کا لیکن کون جگاۓ گا لوگوں کی امید خان صاحب ہیں لیکن خان صاحب پر بھی شاید بے ہوشی کا اثر ہے یہ وقت ہے ایک لیڈر کا جو قوم کو لے کر چل سکے احتجاج کرنے والوں کے ساتھ ساتھ چلے قوم کو لے کر چلے اتنی ہڑتالیں ہو رہی ہیں لیکن خان صاحب غایب ہیں کیا یہ وقت نہیں ہے کہ خان صاحب حکومت کے ظلم کے خلاف قوم کو ساتھ لے کر چلیں ایک باقیدہ تحریک شروع کریں لیکن یہاں تو قوم بے چاری کو خود ہی ڈنڈے کھانے پڑ رہے ہیں خود ہی جلوس ہڑتالیں اور احتجاج کر رہے ہیں کوئی بھی ان کو گائیڈ کرنے والا نہیں خان صاحب اگر سونامی لانا ہے تو پہلے زلزلہ پیدا کریں زلزلہ قوم ہی سے پیدا ہوگا زلزلہ کے جھٹکے جتنے شدید ؎ہوں گے سونامی بھی اتنا ہی شدید ہو گا ۔

تبدیلی کے نعرے تو میاں برادراں بھی لگا رہے ہیں لیکن نہ وہ پنجاب کی حکومت چھوڑنے پر تیار ہیں نہ قومی اسمبلی کی سیٹیں چھوڑنے پر تیار ہیں پھر میں نہیں جانتا تبدیلی کیسے آۓ گی ۔

اب قوم کو کون جگاۓ گا اللہ ہی بہتر جانتا ہے

اللہ تبارک تعالی ہمارے حال پر رحم فرماۓ اور اس سوئی ہوئی قوم کو جاگنے کی ہمت و توفیق عطاء فرماۓ آمین ثم آمین

اللہ ہم سب پر اپنی رحت کا سایہ رکھے

وسلام

بےباک
04-26-2012, 01:04 AM
بہت تلخ حقائق بیان کیے ہیں آپ نے۔ پہلے ہی دکھی تھے ، مزید دکھی ہوئے،
انا للہ و انا الیہ راجعون

تانیہ
09-13-2012, 11:22 PM
بہت تلخ اور چبھتی ہوئی باتیں لکھیں انجم بھائی
اللہ رحم کرے۔۔۔۔آمین

نگار
09-13-2012, 11:32 PM
اللہ ہم سب پہ رحم کرے آمین ثمہ آمین

بہت بہت شکریہ آپ کا

pervaz khan
09-14-2012, 10:52 AM
اب دوبار انہی لوگوں کو ووٹ دے کر پارلیمنٹ میں نہ لے آئیں بلکہ انہیں پتہ ہونا چاھیے کہ ان کے دن ختم ہو گے ہیں