PDA

View Full Version : اگر میں لڑکی ہوں تو اس میں میرا کیا قصور ؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟



سیما
04-12-2012, 04:40 AM
بھارت کے جنوبی شہر بنگلور میں مبینہ طور پر والد کی ستائی ہوئی تین ماہ کی بچی آفرین بدھ کی صبح ہسپتال میں انتقال کرگئی ہیں۔
بچي کا علاج کرنے والے ڈاکٹروں نے میڈیا کو بتایا ہے کہ صبح پونے گيارہ بجے آفرین کو دل کا دورہ پڑا تھا جنہیں بچایا نہیں جا سکا۔
بچی کی ماں ریشما بانو کا کہنا ہے کہ آفرین کے والد عمر فاروق ایک لڑکا چاہتے تھے اور وہ لڑکی کی پیدائش سے وہ خوش نہیں تھے اس لیے وہ اسے ستاتے رہتے تھے۔
ان کے اہل خانہ کے مطابق پیدائش کے بعد سے ہی عمر فاروق اپنی بچی کو مارتے پیٹے اور ستاتے تھے۔
پولیس نے دو روز قبل ہی اسی الزام کے تحت عمر فاروق کو گرفتار کیا تھا جنہیں عدالتی تحویل میں بھیجا گيا ہے۔ تاہم انہوں نے اس الزام سے انکار کیا ہے اور کہا ہے کہ انہیں نہیں معلوم کی ان کی بیوی ان پر ایسے الزامات کیوں لگا رہی ہیں۔
یہ بھی درست ہے کہ ماں ریشما بانو اس سلسلے میں میڈیا میں اپنا بیان بدلتی رہی ہیں لیکن ریشما ہی کی ماں یعنی عمر فاروق کی ساس نے یہ بات کئي بار دہرائی ہے کہ ان کا داماد اپنی ہی کم سن بچی کو ستاتا تھا۔
کہا جا رہا ہے کہ اس حوالے سے میاں بیوی کے درمیان کئی بار پہلے بھی لڑائی ہوئی تھی اور اس کی شکایت پولیس سے کی گئی تھی لیکن معاملہ رفع دفع ہوگيا تھا۔
اطلاعات کے مطابق بچی کو اندرونی چوٹیں آئی تھیں جس کے بعد ہی بہت ہی نازک حالت میں آفرین کو ہسپتال میں داخل کیا گيا تھا۔
ہسپتال کے ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ ایک ہفتے پہلے جب بچی کو ہسپتال لایا گيا تو اس کے جسم پر چوٹوں کے نشانات تھے اور گردن کی ہڈی ٹوٹی ہوئی تھی۔ اس کے دماغ کے اندر خون کا رساؤ بھی ہوا تھا۔
گزشتہ تین روز سے آفرین کی حالت تشویشناک تھی اور مصنوعی طریقے سے سانس فراہم کیا جا رہا تھا۔
ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ ان کی تمام کوششوں کے باوجود انہیں بچایا نہیں جا سکا۔
بھارت میں لڑکیوں کے مقابلے لڑکوں کو ترجیح دینا کوئی نئی بات نہیں ہے اور کئی بار اس کے لیے ماؤں کو بھی ستایا جاتا ہے۔
حال ہی میں ایسے ہی ایک واقعے میں دلی میں فلک نامی ایک بچی کی ہسپتال میں موت ہوگئی تھی جسے اس کے والدین نے راستے میں تن تنہا چھوڑ دیا تھا۔
چند روز قبل ریاست راجستھان کے ایک ہسپتال میں نو زائیدہ ایک بچی کو ایک لڑکے سے بدل دیاگيا تھا جس پر دو والدین کے درمیان تنازع پیدا ہوگيا تھا۔ بعد میں ڈی این ٹیسٹ کے بعد لڑکے کو اس کے اصلی والدین کو سونپا گيا۔

(بی بی سی)

سیما
04-12-2012, 04:44 AM
ایسے لوگون کو پھانسی دینی چاہیے بس ایک ہی علاج ہے ان کا ۔
مسلمان ہو کر خود کو خدا سمجھنے والے :vahidrk::vahidrk::vahidrk::vahidrk::vahidrk::vahi drk::vahidrk:

بےباک
04-13-2012, 07:51 AM
انا للہ و انا الیہ راجعون

راجہ صاحب
04-13-2012, 07:12 PM
انا للہ و انا الیہ راجعون
انتہائی افسوس ناک واقعہ ہے جانے لوگ لڑکوں کو لڑکیوں پر فوقیت کیوں دیتے ہیں
اگر لڑکا اللہ کی نعت ہے تو لڑکی بھی تو اللہ کی رحمت ہے

نگار
04-14-2012, 08:01 PM
انا للہ و انا الیہ راجعون
_______________________

حدیث میں آیا ہے کہ جب بھی آپ کوئی اچھی چیز گھر لے آؤ
تو سب سے پہلے بیٹی کو دو اس کے بعد بیٹے کو
لیکن کچھ جاہل لوگ بیٹی کی رحمت اور اہمیت سے محروم ہے

لاجواب
04-15-2012, 12:10 AM
انا للہ و انا الیہ راجعون

سیما
04-15-2012, 02:59 AM
انا للہ و انا الیہ راجعون

شاہنواز
04-15-2012, 03:20 AM
اناللہ و انالیہ راجعون

ہم لوگ ابھی تک زمانہ جہالت کے دور مین پھنسے ہوئے ہیں معلوم نہیںکب عقل آئے گی خاص طور پر بھارت میں ذات پات رسم و رواج کے حساب سے بہت مسئلہ چل رہا ہے لیکن لڑکیوں کو زندہ جلادینا بڑی مشکل سے تو ستی کی رسم ختم ہوئہ ہے عورت کو شوہر کے ساتھ ہی زندہ جلادیا جاتا تھا اور اب بھی اکا دکا واقعات ہوتے رہتے ہیں لیکن ایک معصوم کے ساتھ ایسا انددہناک واقعہ بربریت کی ایک زندہ مثال ہے ایسے افرا کے ساتھ جو بھی سلوک کیا جائے میرے نزدیک بہترین ہوگا کہ جب تک ایے لوگوں سبق نہین سکھایا جائے گا یہ معاشرہ نہیں جاگے گا

سیما
04-15-2012, 03:31 AM
جی بلکل ٹھیک کہا آپ نے یہ لوگ مسلم ہو کر بھی اللہ جی کو ناراض کرتے ہیں ۔ گناہ کبیرا جیسے کام کرتے ہیں :vahidrk:
میرا دل کرتا ہے ان جیسے تمام لوگوں کو الٹا لٹکا بھوکا پیاسا مار دوں تب ان کو سمجھ آئی گی ۔ :@:@:@
جو نو مسلمز ہیں وہ کیا سوچتے ہونگے یہ خود کو مسلمان کہتے ہیں ۔کام تو یہ بلکل ہی ہم جیسا کرتے ہین تو کیا فرق ان میں اور ہم میں :vahidrk: