PDA

View Full Version : کچن اور دیگر جگہوں سے لال بیگوں کایقینی خاتمہ کیجئے۔



abrarhussain_73
06-11-2012, 10:44 PM
لال بیگ ایک انتہائی ڈھیٹ حشرات الارض کی قسم ہے۔ اسکی افزائش نسل بڑی تیزی سے ہوتی ہے اور دیکھتے ہی دیکھتے یہ تمام گھر کو جہنم زار بنادیتا ہے۔ اس کی تمام گندگیوں میں سے سب سے خطرناک بات اسکا بچوں میں دمہ کا سبب بتایا گیا ہے۔ اسکے سکن سے جو باقیات جھڑتے ہیں وہ ہوا کو آلودہ کرکے بچوں کو خاص کر دمہ کا مریض بناسکتے ہیں۔ اسکے علاوہ دمہ کے مرض میں مبتلا لوگوں کی تکلیف میں اٍضافہ کا باعث بن سکتے ہیں۔
یہ ایک ہفتہ سے زیادہ بغیر کھائے پیئے زندہ رہ سکتا ہے۔ اور تو اور یہ لکڑی، کاغذ، کھانے پینے کی اشیاء اور کپڑے وغیرہ سب ہی نوش کرنا پسند کرتا ہے۔
کیڑے مار دوائیاں اسکو ختم کرنے میں ناکام نظر آتی ہیں۔
لیکن ایک چیز ہے جو اس کی جان کا دشمن ہے۔ اور مزے کی بات کہ یہ چیز کیڑے مار دواؤں کی بنسبت انسان کے لئے کم نقصان دے ہے۔ اور وہ چیز ہے بورک پوڈر۔
جی یہ وہی بورک پوڈر ہے جو اکثر کیرم بورڈ پر ڈالا جاتا ہے۔ اور سپوڑٹس کی دکان یا عام کریانہ کی دکان میں بھی مل سکتا ہے۔
ترکیب: (یہ ترکیب آپکے کھانے کے لئے نہیں لال بیگ صاحب کی دعوت کیلئے ہے(
اجزاء:
بورک پوڈر ایک کپ
میدہ ایک کپ
چینی چار ٹیبل سپون
دودھ آٹا گوندھنے کے لئے۔
طریقہ:
میدہ، بورک پوڈر، چینی ایک باؤل میں ڈال کر دودھ ڈالکر اچھی طرح گُوندھ لیں۔ عام آٹے کے مقابلے میں سخت گوندھنا ہے۔ اب اسکی چھوٹی چھوٹی ٹکیاں بنالیں (شامی کی طرح( اور ان ٹکیوں کو ایسے مقامات پر رکھیں جہاں لال بیگوں کا گزر ہو۔ لال بیگ عموماً چھپی ہوئی تنگ اور غیر روشن جگہیں پسند کرتا ہے۔ لہذا اسکو رکھنے کے لئےالماریوں کے پیچھے، کیچن سینک کے نیچے کسی خشک جگہ، باتھ روم میں واش بیسن اور کموڈ کے پیچھے، دیواروں کی دراڑوں میں۔ وغیرہ۔ کوشش کریں کہ خشک جگہ پر رکھیں تاکہ زیادہ عرصہ پڑے رہیں۔ البتہ بچوں کی پہنچ سے دور رکھیں۔
بورک پوڈر کھاکر لال بیگ اپنی جائے سکونت پر جاکر ہلاک ہوجاتے ہیں۔ اور مزے کی بات یہ ہے کہ لال بیگ اپنے مردہ بیگ صاحبان کے باقیات بھی کھاتے ہیں اور اسطرح یہ انکے لئے بھی لقمہ اجل بن جاتے ہیں۔ یوں لال بیگوں کا ہنستا بنستا گھرانہ موت کی آغوش میں چلا جاتا ہے۔
اگر آپ کو کوئی لال بیگ مردہ حالت میں ملے یا آپ لال بیگ کے قتل کے مرتکب ہوں تو اسکی لاش کو اُٹھانے کے لئے گیلے کپڑے کا استعمال کریں۔ جھارو کا استعمال سے اس کی جسم پر نہ نظر آنے والے چھوٹے چھوٹے ذرے اور مردہ لال بیگ کا تو سارہ جسم ہی ہوا میں شامل ہوکر سانس کی بیماریاں پیدا کرسکتا ہے۔
چونکہ لال بیگ اپنے کنبہ کو قرب و جوار میں پھیلانے کا ماہر ہے۔ اسلئے ہوسکے تو ہمسایوں کو بھی یہ طریقہ بتادیں۔ اور اگر کوئی کنجوس ہمسایہ ہو تو لال بیگ شامی انکو تحفے میں عنایت کردیں۔ تاکہ بیرونی لال بیگ مشن پوسیبل کا مکمل سدّباب ہو۔
اس فارمولے کے سبب تقریباً آپ چار سے چھہ مہینے سکون کی نیند سو سکتے ہیں۔
چلیں اب خوشیاں منائیں۔:family2::family2::family2: