PDA

View Full Version : اشعار



تانیہ
12-07-2010, 03:58 PM
ہو تو ایسی ہو پردہ داری زخم
حال دل کا بھی آنکھ پر نہ کھلے
۔۔۔۔
کون گواہی دیگا جھوٹوں کی اس بستی میں
سچ کی قیمت دے سکنے کا تمکو یارا ہو تو کہو
ویسے تو ہر شخص کے دل میں ایک کہانی ہوتی ہے
ہجر کا لاوا، غم کا سلیقہ ، درد کا لہجہ ہو تو کہو
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
واہمے سارے تیرے اپنے ہیں
ہم کہاں تجھ کو بھول سکتے ہیں
عشق کے خوش گمان موسم میں
پتھروں میں گلاب کھلتے ہیں