PDA

View Full Version : شاعری



صفحات : [1] 2 3 4

بےلگام
07-17-2012, 04:02 AM
ان کو ہم سے ہی محبت ہو ضروری تو نہیں
ایک سی دونوں کی حالت ہو ضروری تو نہیں
سب کی ثاقی پے نظر ہو یہ ضروری ہے مگر
سب پہ ثاقی کی نظر ہو یہ ضروری تو نہیں
میری تنہائیاں کرتی ھیں جنہیں یاد صدا
ان کو بھی میری ضرورت ہو،ضروری تو نہیں
نیند تو درد کے بستر پے بھی آجاتی ہے
ان کی آغوش میں سر ہویہ ضروری تو نہیں

ہمراز
08-15-2012, 08:38 AM
واہ بہت خوب

بےلگام
08-15-2012, 09:14 AM
محبت ترک کی میں نے گریباں سی لیا میں نے
زمانے اب تو خوش ہو زہر یہ بھی پی لیا میں نے

ابھی زندہ ہوں لیکن سوچتا رہتا ہوں خلوت میں
کہ اب تک کس تمنا کے سہارے جی لیا میں نے

بےلگام
08-15-2012, 09:14 AM
انہیں اپنا نہیں سکتا، مگر اتنا بھی کیا کم ہے
کہ کچھ مدت حسیں خوابوں میں کھو کر جی لیا میں نے

بس اب تو دامنِ دل چھوڑ دو بیکار امیدو!
بہت دکھ سہہ لیے میں نے بہت دن جی لیا میں نے

بےلگام
08-15-2012, 03:37 PM
تیرا حُسن ہو۔۔۔۔
میرا عشق ہو۔۔۔
تو پھر حُسن و عشق کی بات ہو۔۔۔
کبھی میں ملوں کبھی تُو ملے ۔۔۔
کبھی ہم ملیں ملاقات ہو ۔۔۔
کبھی تُو چُپ کبھی میں ہوں چُپ ۔۔۔
کبھی دونوں ہم چُپ چاپ ہوں ۔۔

بےلگام
08-15-2012, 03:37 PM
کبھی گُفتگو کبھی تذکرے ۔۔۔
کوئی ذکر ہو کوئی بات ہو ۔۔۔
کبھی وصل ہو تو دن کو ہو ۔۔۔
کبھی ہجر ہو تو وہ رات ہو ۔۔۔
کبھی میں تیرا کبھی تُو میری ۔۔۔
کبھی ایک دوجے کے ہم رہیں۔۔۔

بےلگام
08-15-2012, 03:37 PM
کبھی ساتھ میں کبھی ساتھ تُو ۔۔۔
کبھی ایک دوجے کا ساتھ ہو ۔۔۔
کبھی صحبتیں کبھی رنجشیں ۔۔۔
کبھی دُوریاں کبھی قُربتیں ۔۔۔
کبھی اُلفتیں کبھی نفرتیں ۔۔۔
کبھی جیت ہو کبھی مات ہو ۔۔۔

بےلگام
08-15-2012, 03:37 PM
کبھی پُھول ہو کبھی دُھول ہو ۔۔۔
کبھی یاد ہو کبھی بھول ہو ۔۔۔
نہ نشیب ہوں نہ فراز ہوں ۔۔۔
نہ ہی نچہ ہو نہ ہی جات ہو ۔۔۔
رہیں مُسکُراتے پیار میں ۔۔۔
کھلیں پھول بن کے بہار میں ۔۔۔
نہ زمیں کوئی نہ فلک کوئی ۔۔۔
نہ وجود ہو نہ ہی ذات ہو ۔۔۔
صرف ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تیرا حُسن ہو۔۔۔۔۔۔۔۔
میرا عشق ہو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔
میری آنکھ ہو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تیری ذات ہو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

بےلگام
08-15-2012, 03:40 PM
تم سے الفت کے تقاضے نہ نباہے جاتے
ورنہ ہم کو بھی تمنّا تھی کہ چاہے جاتے

دل کے ماروں کا نہ کر غم کہ یہ اندوہ نصیب
درد بھی دل میں نہ ہوتا تو کراہے جاتے

بےلگام
08-15-2012, 03:40 PM
کاش اے ابرِ بہاری ترے بہکے سے قدم
میری امیّد کے صحرا میں بھی گاہے جاتے

ہم بھی کیوں دہر کی رفتار سے ہوتے پامال
ہم بھی ہر لغزشِ مستی کو سراہے جاتے

بےلگام
08-15-2012, 03:40 PM
ہے ترے فتنۂ رفتار کا شہرہ کیا کیا
گرچہ دیکھا نہ کسی نے سرِ راہے جاتے

ہم نگاہی کی ہمیں خود بھی کہاں تھی توفیق
کم نگاہی کے لئے عذر نہ چاہے جاتے

بےلگام
08-15-2012, 03:40 PM
لذّتِ درد سے آسودہ کہاں دل والے
ہیں فقط درد کی حسرت میں کراہے جاتے

دی نہ مہلت ہمیں ہستی نے وفا کی ورنہ
اور کچھ دن غمِ ہستی سے نباہے جاتے

نگار
08-15-2012, 04:18 PM
دی نہ مہلت ہمیں ہستی نے وفا کی ورنہ
اور کچھ دن غمِ ہستی سے نباہے جاتے


بہت خوب عادل بھائی ، کیا بات ہے آپکی

بےلگام
08-16-2012, 06:24 PM
شکریہ فار یو

بےلگام
08-16-2012, 06:29 PM
امّید تو بندھ جاتی، تسکین تو ہوجاتی
’وعدہ نہ وفا کرتے، وعدہ تو کِیا ہوتا‘

بےلگام
08-16-2012, 06:29 PM
ہم نہ نکہت ہیں نہ گُل ہیں جو مہکتے جاویں
آگ کی طرح جدھر جاویں دہکتے جاویں

اے خوشا مست کہ تابوت کے آگے جس کے
آب پاشی کے بدل مے کو چھڑکتے جاویں

بےلگام
08-16-2012, 06:29 PM
جو کوئی آوے ہے نزدیک ہی بیٹھے ہے ترے
ہم کہاں تک ترے پہلو سے سرکتے جاویں

غیر کو راہ ہو گھر میں ترے سبحان اللہ
اور ہم دور سے در کو ترے تکتے جاویں

بےلگام
08-16-2012, 06:30 PM
وقت اب وہ ہے کہ اِک ایک حسن ہو کے بتنگ
صبر و تاب و خرد و ہوش کھسکتے جاویں

بےلگام
08-16-2012, 06:30 PM
وہ رابطہ نہیں ، وہ محبت نہیں رہی
اس بے وفا کو ہم سے کچھ الفت نہیں رہی

دیکھا تو مثلِ اشک نظر سے گرا دیا
اب میری ، اُس کی آنکھ میں عزّت نہیں رہی

بےلگام
08-16-2012, 06:30 PM
رُندھنے سے جی کے کس کو رہا ہے دماغِ حرف
دم لینے کی بھی ہم کو تو فرصت نہیں رہی

تھی تاب جی میر جب تئیں رنج و تعب کھنچے
وہ جسم اب نہیں ہے ، وہ قدرت نہیں رہی

بےلگام
08-16-2012, 06:30 PM
منعم امل کا طول یہ کس جینے کے لئے
جتنی گئی اب اُتنی تو مدت نہیں رہی

دیوانگی سے اپنی اب ساری بات خبط
افراطِ اشتیاق سے وہ مَت نہیں رہی

بےلگام
08-16-2012, 06:31 PM
پیدا کہاں ہیں ایسے پراگندہ طبع لوگ
افسوس تم کو میر سے صحبت نہیں رہی

بےلگام
08-16-2012, 06:31 PM
زندگی خواب خواب ھے یارب

یہ حقیقت سراب ھے یارب

ایک تو عشق دوسرا ھے معاش

ھم پہ دہرا عذاب ھے یارب

بےلگام
08-16-2012, 06:31 PM
ہجر کی شب ھے اور میں تنہا

عالم _ اضطراب ھے یارب

میرے محبوب کو نظر نہ لگے

خوبصورت گلاب ھے یارب

بےلگام
08-16-2012, 06:31 PM
میں ہی اچھا نہیں زمانے میں

یا زمانہ خراب ھے یارب ؟

آج آنکھیں کھلیں تو کیا حاصل

آج روز _ حساب ھے یا رب

بےلگام
08-16-2012, 06:32 PM
مجھ کو اس کی سمجھ نہیں آتی

وہ جو تیری کتاب ھے یارب

راز ہی راز ہیں تری باتیں

اور سب پر نقاب ھے یا رب

بےلگام
08-16-2012, 06:33 PM
بیشک گزرو میری گلی سے، مگر ناکاب اوڑھ کر
نہ گرو بارک-ے-حسن مجھے چھوڈ کر

یہ بجلیا مجھ پے گرو میں جلنا چاہتا ہو
حد ہے تیرا حسن، میں حد سے گزرنا چاہتا ہو

بےلگام
08-16-2012, 06:33 PM
حد ٹوڈ جمانے کی مجھ پے ایتبر تو کر
سو بار کیا مینے تو ایک بار تو کر

تو بھی ایک بار کسی سے موحبّت کر کے تو دیکھ
سرد رات چھت پے کسی کا انتظار کر کے تو دیکھ

بےلگام
08-16-2012, 06:34 PM
کسی کا انتظار گر نہ مزا دینے لگے تو کہنا
بعد ے سب بھی اس کا پتا نہ دینے لگے تو کہنا

خط تھا مینے لکھا جو ہوا آی اس کے گھر چھوڈ کر
بیشک گزرو میری گلی سے، مگر نکب اوڑھ کر

بےلگام
08-16-2012, 06:36 PM
دیکھ کر اس بت کو سکتا ہو گیا
میں، بہت محوِ تماشا ہو گیا

دے دیا دل یار کو، مٹی کے مول
مفت، اس یوسف کا، سودا ہو گیا

بےلگام
08-16-2012, 06:36 PM
ٹاٹ کا ٹکڑا لباسِ فقر میں
قاقم و سنجاب و دیبا ہو گیا

دید کے قابل مری حیرت ہوئی
یار بھی محوِ تماشا ہو گیا

بےلگام
08-16-2012, 06:36 PM
چاندنی کی سیر، اور غیروں کے ساتھ
اے قمر! یہ کیا طریقا ہو گیا

کھینچ کر تصویر روئے یار کی
اور ہی مانی کا نقشا ہو گیا

بےلگام
08-16-2012, 06:37 PM
روتے روتے چشم نابینا ہوئی
یہ کنواں ٹوٹا تو اندھا ہو گیا

ضعف کے بڑھنے سے ہم کو اے جنوں
خانہء زنجیر صحرا ہو گیا

بےلگام
08-16-2012, 06:37 PM
جائے عبرت ہے جہانِ بے ثبات
دیکھتے ہی دیکھتے کیا ہو گیا

بےلگام
08-16-2012, 06:48 PM
جہاں نفرت وہیں پر پیار کا جذبہ بھی رکھا ھے

مرے معبود تو نے دھوپ میں سایہ بھی رکھا ھے

اے مندر کے پجاری مان لے اس ایک اللہ کو

کہ اس نے بت کو گونگا ہی نہیں بہرا بھی رکھا ھے

بےلگام
08-16-2012, 06:49 PM
یونہی بس ٹوٹتے تارے کو دیکھا تو خیال آیا

کہ اس خالق نے اپنی ذات میں غصہ بھی رکھا ھے

نجانے کب قیامت ٹوٹ جاۓ ہم پہ کیا معلوم

اگرچہ فال والا ہم نے اک طوطا بھی رکھا ھے

بےلگام
08-16-2012, 06:49 PM
کہ کچھ ھم لوگ بھی اتنے برے ہرگز نہیں انور

ہماری غلطیوں پر ماؤں نے پردہ بھی رکھا ھے

بےلگام
08-16-2012, 06:58 PM
جا ترس آ ہی گیا حشر میں لاچار مجھے
تو بھی کیا یاد کرے گا بتِ عیار مجھے

دھوپ جب سر سے گذرتی ہے بیابانوں کی
یاد آتا ہے تیرا سایۂ دیوار مجھے

بےلگام
08-16-2012, 06:58 PM
شکوہ جو غلط ہے تو چلو یوں ہی سہی
حشر کا دن ہے بڑھانی نہیں تکرار مجھے

دردِ دل رسمِ محبت ہے تجھے کیا معلوم
چارہ گر تو نے سمجھ رکھا ہے بیمار مجھے

بےلگام
08-16-2012, 06:58 PM
ہچکی آ آ کے کسی وقت نکل جائے گا دم
آپ کیوں یاد کیا کرتے ہیں ہر بار مجھے

اے قمر رات کی رونق بھی گئی ساتھ ان کے
تارے ہونے لگے معلوم گِراں بار مجھے

بےلگام
08-16-2012, 07:00 PM
گرچہ کب دیکھتے ہو، پر دیکھو
آرزو ہے کہ تم ادھر دیکھو

عشق کیا کیا ہمیں دکھاتا ہے
آہ تم بھی تو یک نظر دیکھو

بےلگام
08-16-2012, 07:00 PM
یوں عرق جلوہ گر ہے اس مونہہ پر
جس طرح اوس پھول پر دیکھو

ہر خراشِ جبیں جراحت ہے
ناخنِ شوق کا ہنر دیکھو

بےلگام
08-16-2012, 07:00 PM
تھی ہمیں آرزو لبِ خنداں
سو عوض اس کے چشمِ تر دیکھو

رنگِ رفتہ بھی دل کو کھینچے ہے
ایک دن آؤ یاں سحر دیکھو

بےلگام
08-16-2012, 07:01 PM
دل ہوا ہے طرف محبت کا
خون کے قطرے کا جگر دیکھو

پہنچے ہیں ہم قریب مرنے کے
یعنی جاتے ہیں دُور گر دیکھو

بےلگام
08-16-2012, 07:01 PM
لطف مجھ میں بھی ہیں ہزاروں میر
دیدنی ہوں جو سوچ کر دیکھو

بےلگام
08-16-2012, 07:09 PM
بیس برس سے کھڑے تھے جو اس گاتی نہر کے دوار
جھومتے کھیتوں کی سرحد پر بانکے پہرے دار
گھنے، سہانے، چھاؤں چھڑکتے، بور لدے چھتنار
بیس ہزار میں بک گئے سارے ہرے بھرے اشجار

بےلگام
08-16-2012, 07:09 PM
جن کی سانس کا ہر جھونکا تھا ایک عجیب طلسم
قاتل تیشے چیر گئے ان ساونتوں کے جس

بےلگام
08-16-2012, 07:10 PM
گری دھڑام سے گھائل پیڑوں کی نیلی دیوار
کٹتے ہیکل، جھڑتے پنجر، چھٹتے برگ و بار
سہمی دھوپ کے زرد کفن میں لاشوں کے انبار

بےلگام
08-16-2012, 07:10 PM
آج کھڑا میں سوچتا ہوں اس گاتی نہر کے دوار
اس مقتل میں صرف اک میری سوچ لہکتی ڈال
مجھ پر بھی اب کاری ضرب اک، اے آدم کی آل

بےلگام
08-16-2012, 08:33 PM
کہیں بے کنار سے رتجگے‘ کہیں زر نگار سے خواب دے!
ترا کیا اُصول ہے زندگی؟ مجھے کون اس کا جواب دے!

بےلگام
08-16-2012, 08:33 PM
جو بچھا سکوں ترے واسطے‘ جو سجا سکیں ترے راستے
مری دسترس میں ستارے رکھ‘ مری مُٹھیوں کو گلاب دے

بےلگام
08-16-2012, 08:33 PM
یہ جو خواہشوں کا پرند ہے‘ اسے موسموں سے غرض نہیں
یہ اُڑے گا اپنی ہی موج میں‘ اِسے آب دے کہ سراب دے!

بےلگام
08-16-2012, 08:34 PM
تجھے ُچھو لیا تو بھڑک اُٹھے مرے جسم و جاں میں چراغ سے
اِسی آگ میں مجھے راکھ کر‘ اسی شعلگی کو شباب دے

بےلگام
08-16-2012, 08:34 PM
کبھی یوں بھی ہو ترے رُوبرو‘ میں نظر مِلا کے یہ کہہ سکوں
”مری حسرتوں کو شمار کر‘ مری خواہشوں کا حساب دے!“

بےلگام
08-16-2012, 08:34 PM
تری اِک نگاہ کے فیض سے مری کشتِ حرف چمک اُٹھے
مِرا لفظ لفظ ہو کہکشاں مجھے ایک ایسی کتاب دے

بےلگام
08-16-2012, 08:34 PM
تو سو جاتا ھے اکثر مجھے یاد کیے بغیر

مجھے نیند نھین آتی تمھین یاد کیے بغیر

قصور تیرا نھین قصور تو میرا ھے

تجھے چاھا بھی تو ھے تیری اجازت کے بغیر.

بےلگام
08-16-2012, 08:35 PM
اب تک تو دل کا دل سے تعارف نہ ہو سکا
مانا کہ اس سے ملنا ملانا بہت ہوا

بےلگام
08-16-2012, 08:35 PM
آج دیوانے کچھ ایسے تیرے در سے گزرے

نہ تو کانوں سے سنے تھے نہ نظر سے گزرے

بےلگام
08-16-2012, 08:35 PM
بد گمانی میرے صیّاد کی توبہ توبہ

سینکڑوں شک میری اک جنبش پر سے گزرے

بےلگام
08-16-2012, 08:35 PM
ان کا کہنا کہ اب جاؤ خدا کو سونپا

ہائے وہ لمحے جو کچھ قبل سفر سے گزرے

بےلگام
08-16-2012, 08:36 PM
وہ لوگ کبھی دیکھے ہیں کیا؟
جو ساون رُت سے ہوتے ہیں

بےلگام
08-16-2012, 08:36 PM
جو بادل جیسے چھاتے ہیں
جو برکھا جیسے آتے ہیں

بےلگام
08-16-2012, 08:36 PM
جو باغوں جیسے سجتے ہیں
جو پھولوں جیسے کھِلتے ہیں

بےلگام
08-16-2012, 08:36 PM
جو ہنستے ہیں تو کلیو ں کا
یہ حسن بھی گہنا جاتا ہے

بےلگام
08-16-2012, 08:36 PM
کہ جن کی میٹھی باتوں کو
ہر دل میں رہنا آتا ہے

بےلگام
08-16-2012, 08:36 PM
ہاں اُن جیسی اک لڑکی میں نے
اِس نگری میں دیکھی ہے

بےلگام
08-16-2012, 08:37 PM
چپ چپ سی گم صم سی ہے
وہ لڑکی کچھ کچھ تم سی ہے

بےلگام
08-16-2012, 08:37 PM
وہ ہنستی ہے تو کلیوں کا حسن بھی گہنا جاتا ہے
وہ پھولوں جیسی کھلتی ہے

بےلگام
08-16-2012, 08:37 PM
ہاں پھولوں جیسی تم بھی ہو
جو تم سی میں نے دیکھی ہے
وہ لڑکی بھی تو تم ہی ہو۔

بےلگام
08-16-2012, 08:37 PM
گزر رہے ہیں شب و روز

گزر رہے ہیں شب و روز تم نہیں آتیں
ریاض ِ زیست ہے آرزدہ بہار ابھی
مرے خیال کی دنیا ہے سوگوار ابھی

بےلگام
08-16-2012, 08:38 PM
جو حسرتیں ترے غم کی کفیل ہیں پیاری
ابھی تلک مری تنہایوں میں بستی ہیں
طویل راتیں ابھی تک طویل ہیں پیاری
اداس آنکھیں تری دید کو ترستی ہیں

بےلگام
08-16-2012, 08:38 PM
بہار حسن پہ پابندی ِ جفا کب تک؟
یہ آزمائش ِ صبر ِ گریز پا کب تک؟

بےلگام
08-16-2012, 08:38 PM
غلط تھا دعویٰ ، صبر و شکیب، آ جائو
قرار ِ خاطر ِ بیتاب، تھک گیا ہوں میں

بےلگام
08-16-2012, 08:39 PM
فاطمہ! تو آبروئے امت مرحوم ہے
ذرّہ ذرّہ تیری مشت خاک کا معصوم ہے

بےلگام
08-16-2012, 08:39 PM
یہ سعادت، حورِ صحرائی! تری قسمت میں تھی
غازیانِ دیں کی سقائی تری قسمت میں تھی

بےلگام
08-16-2012, 08:39 PM
یہ جہاد اﷲ کے رستے میں بے تیغ و سپر
ہے جسارت آفریں شوقِ شہادت کس قدر

بےلگام
08-16-2012, 08:39 PM
یہ کلی بھی اس گلستانِ خزاں منظر میں تھی
ایسی چنگاری بھی یارب، اپنی خاکستر میں تھی!

بےلگام
08-16-2012, 08:39 PM
اپنے صحرا میں بہت آہُو ابھی پوشیدہ ہیں
بجلیاں برسے ہوئے بادل میں بھی خوابیدہ ہیں!

بےلگام
08-16-2012, 08:40 PM
فاطمہ! گو شبنم افشاں آنکھ تیرے غم میں ہے
نغمۂ عشرت بھی اپنے نالۂ ماتم میں ہے

بےلگام
08-16-2012, 08:40 PM
رقص تیری خاک کا کتنا نشاط انگیز ہے
ذرّہ ذرّہ زندگی کے سوز سے لبریز ہے

بےلگام
08-16-2012, 08:40 PM
ہے کوئی ہنگامہ تیری تربت خاموش میں
پل رہی ہے ایک قومِ تازہ اس آغوش میں

بےلگام
08-16-2012, 08:40 PM
بے خبر ہوں گرچہ اُن کی وسعت مقصد سے میں
آفرینش دیکھتا ہوں اُن کی اس مرقد سے میں

بےلگام
08-16-2012, 08:40 PM
تازہ انجم کا فضائے آسماں میں ہے ظہور
دیدئہ انساں سے نامحرم ہے جن کی موجِ نور

بےلگام
08-16-2012, 08:40 PM
جو ابھی ابھرے ہیں ظلمت خانۂ ایام سے
جن کی ضو ناآشنا ہے قید صبح و شام سے

بےلگام
08-16-2012, 08:41 PM
جن کی تابانی میں اندازِ کہن بھی، نو بھی ہے
اور تیرے کوکب تقدیر کا پرتو بھی ہے

بےلگام
08-16-2012, 08:41 PM
م لوگ نہ تھے ایسے
جیسے ہیں نظر آتے
اے وقت گواہی دے
یہ شہر نہ تھا ایسا
یہ روگ نہ تھے ایسے

بےلگام
08-16-2012, 08:41 PM
دیوار نہ تھے رستے
زنداں نہ تھی بستی
آزار نہ تھے رشتے
خلجان نہ تھی ہستی
یوں موت نہ تھی سستی!!

بےلگام
08-16-2012, 08:41 PM
یہ آج جو صورت ہے
حالات نہ تھے ایسے
یوں غیر نہ تھے موسم
دن رات نہ تھے ایسے

بےلگام
08-16-2012, 08:42 PM
تفریق نہ تھی ایسی
سنجوگ نہ تھے ایسے
اے وقت گواہی دے
ہم لوگ نہ تھے ایسے

بےلگام
08-16-2012, 08:42 PM
ہم لوگ نہ تھے ایسے
نظر آتے ہیں اب جیسے
پر وقت نہیں رکھتا یاد اس کو
بستے ہیں جو اب بستی میں
بستے تھے وہ پہلے کیسے

بےلگام
08-16-2012, 08:42 PM
پہلے نہ تھا حالات کا دھارا آج کے ایسا
نہ ہی لوگوں میں تھا شعور آج کے جیسا
نہ تھی کسی بھی دور کے اندر
اس قوم کی حالت اتنی ہی دگرگو
نہ تھا پہلے حال اس کا آج کے جیسا

بےلگام
08-16-2012, 08:43 PM
سوکھے ھونٹ سلگتی آنکھیں سرسوں جیسا رنگ

برسوں بعد وہ دیکھ کے مجھ کو رہ جائے گا دنگ

بےلگام
08-16-2012, 08:43 PM
ماضی کا وہ لمحہ مجھ کو آج بھی خون رلائے

اکھڑی اکھڑی باتیں اسکی غیروں جیسے ڈھنگ

بےلگام
08-16-2012, 08:43 PM
دل کو تو پہلے ھی درد کی دیمک چاٹ گئی تھی

روح کو بھی اب کھاتا جائے تنہائی کا زنگ

بےلگام
08-16-2012, 08:44 PM
انہی کے صدقے یارب میری مشکل کر آسان

میرے جیسے اور بھی ھیں جو دل کے ھاتھوں تنگ

بےلگام
08-16-2012, 08:44 PM
سب کچھ دے کر ھنس دی اور پھر کہنے لگی تقدیر

کبھی نہ ھو گی تیرے دل کی پوری ایک امنگ

بےلگام
08-16-2012, 08:44 PM
کیوں نہ اب اپنی چوڑیوں کو کرچی کرچی کر ڈالوں

دیکھی آج اک سندر ناری پیارے پیا کے سنگ

بےلگام
08-16-2012, 08:44 PM
شبنم کوئی تجھ سے ھارے جیت پر مان نہ کرنا

جیت وہ ھو گی جب جیتوں گی اپنے آپ سے جنگ

بےلگام
08-16-2012, 08:47 PM
پانی آنکھ میں بھر کر لایا جا سکتا ھے

اب بھی جلتا شہر بچایا جا سکتا ھے

بےلگام
08-16-2012, 08:47 PM
ایک محبت اور وہ بھی ناکام محبت

لیکن اس سے کام چلایا جا سکتا ھے

بےلگام
08-16-2012, 08:47 PM
دل پر پانی پینے آتی ھیں امیدیں

اس چشمے میں زہر ملایا جا سکتا ھے

بےلگام
08-16-2012, 08:47 PM
مجھ گمنام سے پوچھتے ھیں فرہاد و مجنوں

عشق میں کتنا نام کمایا جاسکتا ھے

بےلگام
08-16-2012, 08:48 PM
یہ مہتاب یہ رات کی پیشانی کاگھاؤ

ایسا زخم تو دل پر کھایا جا سکتا ھے

بےلگام
08-16-2012, 08:48 PM
پھٹا پرانا خواب ھے میرا پھر بھی تابش

اس میں اپنا آپ چھپایا جا سکتا ھے

بےلگام
08-16-2012, 08:49 PM
بہت کچھ کروں گا، مگر کل کروں گا
ابھی مجھ کوسو لینے دو
دس درھم دینے کا فائدہ نہیں ہے
چند لاکھ کمانے تو دو

بےلگام
08-16-2012, 08:49 PM
خزانہ پھر اپنا لٹاؤں گا میں
سب بھوکوں کو کھانا کھلاؤں گا میں
بے سہارا ہیں جتنے سہارا میں دوں گا

بےلگام
08-16-2012, 08:49 PM
بے گھر کو گھر بنا کر میں دوں گا
دولت غریبوں میں بانٹوں گا میں

بےلگام
08-16-2012, 08:49 PM
جو مردہ ضمیر ہیں جگاؤں گا میں
عیادت مریضوں کی میں خود کروں گا

بےلگام
08-16-2012, 08:49 PM
علاج کے لیے انکو پیسے میں دوں گا
یتیموں کو گھر لے کر آؤں گا میں

بےلگام
08-16-2012, 08:49 PM
انہیں پیار سے پاس بٹھاؤں گا میں
بوڑھے ہیں جتنے انکو خوش کروں گا

بےلگام
08-16-2012, 08:50 PM
سب غمگین دلوں کو ہنسا کر رہوں گا
جنازے کو کندھا لگاؤں گا میں

بےلگام
08-16-2012, 08:50 PM
تعزیت کے لیے ضرور جاؤں گا میں
کوئی کام ہو تو میں اس کو کروں گا

بےلگام
08-16-2012, 08:50 PM
ضرورت ہو جس کو مدد میں کروں گا
بہت کچھ کروں گا، مگر کل کروں گا

بےلگام
08-16-2012, 08:50 PM
ابھی مجھ کو سو لینے دو
دس درھم دینے کا فائدہ نہیں ہے

بےلگام
08-16-2012, 08:50 PM
چند لاکھ توکمانے تو دو
بیدار ہوجا، اے سونے والے

بےلگام
08-16-2012, 08:51 PM
تجھے کیا خبر موت کب تجھ کوآلے
تیرے خواب تو ہیں بڑے شان والے

بےلگام
08-16-2012, 08:51 PM
پر آج کیا کیا ہے؟ یہ تو بتا دے
کل کس نے دیکھا ہے اے میرے پیارے!
اپنے آج کو فورًا کام میں لگالے

بےلگام
08-16-2012, 08:51 PM
اب کے اُس کی آنکھوں میں بے سبب اُداسی تھی
اب کے اُس کے چہرے پر دُکھ تھا بدحواسی تھی

بےلگام
08-16-2012, 08:51 PM
اب کے یُوں مِلا مُجھ سے یُوں غزل سُنی جیسے
میں نا شناسا ہوں وہ بھی اجنبی جیسے

بےلگام
08-16-2012, 08:52 PM
زرد خال و خد اُس کے سوگوار دامن تھا
اب کے اُس کے لہجے میں کتنا کھردرا پن تھا

بےلگام
08-16-2012, 08:52 PM
وہ کہ عمر بھر جس نے شہر بھر کے لوگوں سے
مجھ کو ہم سُخن جانا ازل سے آشنا لکھا

بےلگام
08-16-2012, 08:52 PM
خُود سے مہربان لکھا مجھ کو دِلربا لکھا
اب کے سادہ کاغذ پہ سرخ روشنائی سے

بےلگام
08-16-2012, 08:52 PM
اس نے تلخ لہجے میں میرے نام سے پہلے
صرف بے وفا لکھا

بےلگام
08-16-2012, 08:53 PM
وضع میں تم ہو نصاریٰ تو تمدن میں ہنود
تم وہ مسلم ہو جنہیں دیکھ کے شرمائیں یہود

بےلگام
08-16-2012, 08:53 PM
وہ دل ھی کیا جو ترے ملنے کی دعا نہ کرے
میں تجھ کو بھول کے زندہ رھوں خدا نہ کرے

بےلگام
08-16-2012, 08:54 PM
رھے گا ساتھ ترا پیار زندگی بن کر
یہ اور بات مری زندگی وفا نہ کرے

بےلگام
08-16-2012, 08:54 PM
یہ ٹھیک ھے نہیں مرتا کوئی جدائی میں
خدا کسی سے کسی کو مگر جدا نہ کرے

بےلگام
08-16-2012, 08:54 PM
سنا ھے اس کو محبت دعائیں دیتی ھے
جو دل پہ چوٹ تو کھائے مگر گلہ نہ کرے

بےلگام
08-16-2012, 08:55 PM
زمانہ دیکھ چکا ھے پرکھ چکا ھے اسے
قتیل جان سے جائے پر التجا نہ کرے

بےلگام
08-16-2012, 08:55 PM
آج دنیا دیکھی تو
عجب حال ہے دل کا
اپنے کمرے میں بیٹھا
بس یہی سوچ رہا ہوں میں
کہ آخر کیوں تھا ؟

بےلگام
08-16-2012, 08:55 PM
وہ معصوم سا بچہ
کیوں روتا تھا یوچُھپ کر
گھر میں شائد نہیں ملتا
مطابق سب اُس کی ضرورت کے
اُس کڑکتی دھوپ میں بھی وہ
ننگے پاؤں چلتا تھا

بےلگام
08-16-2012, 08:56 PM
کہیں سے کاغذ چنتا تھا
کہیں پر تھک کر بیٹھتا تھا
آخر کیوں تھا وہ دوست؟
بہت معصوم سا بچہ

بےلگام
08-16-2012, 08:56 PM
اے اللہ
اتنا احسان بس کردے
اُس نھنے فرشتے کو
خوشیاں ساری عطا کر دے
اسکےنازک ہاتھوں کو
کبھی میلا نہ ہونے دے

بےلگام
08-16-2012, 08:56 PM
نجانے کیوں دھکیلتے ہیں
ان چھوٹے سے بچوں کو
دنیا کی جلتی آتش میں
کتنےظالم ہیں یہ لوگ

بےلگام
08-16-2012, 08:56 PM
آج دنیا دیکھی تو
عجب حال ہے دل کا
اپنے کمرے میں بیٹھا
بس یہی سوچ رہا ہوں میں
کہ آخر کیوں تھا ؟
وہ معصوم سا بچہ۔۔۔۔

بےلگام
08-16-2012, 08:57 PM
خیالوں ہی خیالوں میں نئی دنیا بساتا ہوں
مٹا کر نقش ِفرسودہ، نئے پیکر بناتا ہوں

بےلگام
08-16-2012, 08:57 PM
محبّت ہو تعلّق ہو، کہ بس رسمی تعارف ہو
جو مجھ کو بھول جاتا ہے، میں اس کو بھول جاتا ہوں

بےلگام
08-16-2012, 08:58 PM
بہت اچھی گزرتی ہے، جو ہمدم آ کے ملتے ہیں
کبھی میں دل کی سنتا ہوں، کبھی اپنی سناتا ہوں

بےلگام
08-16-2012, 08:58 PM
فنا کے گھات پر، اپنے عزیزوں اور پیاروں کو
دم ِرخصت یہ کہتا ہوں، چلو تم، میں بھی آتا ہوں

بےلگام
08-16-2012, 08:58 PM
مجھے پتھر جو پڑتے ہیں، میری تسکین ہوتی ہے
انہیں اعزاز کہتا ہوں، میں سینے پر سجاتا ہوں

بےلگام
08-16-2012, 08:58 PM
ہر اک جانب اندھیروں کی، گھٹائیں دیکھتا ہوں جب
میں کشتِ ذہن میں کتنے، نئے سورج اگاتا ہوں

بےلگام
08-16-2012, 08:58 PM
غم دنیا کو اکثر دل کے، دسترخوان پر اسلم
بلاتا ہوں بٹھاتا ہوں، کھلاتا ہوں، پلاتا ہوں

بےلگام
08-16-2012, 08:59 PM
روشنی اجالا دے...
سوچ کوئی اعلا دے...

بھوک سے جو روتا ھے..
اس کو تر نوالا دے.

بےلگام
08-16-2012, 08:59 PM
بیٹی ھے اداس اسے..
ھیروں کی مالا دے...


آنکھ ھے پر علم نھیں...
علم دے مطالعہ دے..

بےلگام
08-16-2012, 08:59 PM
شکوے دور جو کر دے...
منتظم نرالا دے...

بےلگام
08-16-2012, 08:59 PM
لگتا ھے یہ اندھے ھیں..
لیڈر آنکھ والا دے...
بھٹھکتے ھیں..بے چارے..
ان کو بھی سمبھالا دے...

نگار
08-16-2012, 11:43 PM
ہر اک جانب اندھیروں کی، گھٹائیں دیکھتا ہوں جب
میں کشتِ ذہن میں کتنے، نئے سورج اگاتا ہوں

غم دنیا کو اکثر دل کے، دسترخوان پر اسلم
بلاتا ہوں بٹھاتا ہوں، کھلاتا ہوں، پلاتا ہوں

واہ عادل بھائی بہت خوب ، کیا بات ہے ان شعروں کی ، زبردست جناب ، شکریہ

بےلگام
08-17-2012, 12:55 AM
شکریہ بھائی جان

نگار
08-17-2012, 01:41 AM
ماشاءاللہ کچھ ایسی دعا ہم بھی کرتے ہیں اپنے دوست کے لیے
بہت بہت شکریہ

بےلگام
08-17-2012, 06:49 AM
گرميوں ميں جب سب گھر والے سو جاتےتھے
دھوپ کي اُنگلي تھام کے ہم چل پڑتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:49 AM
ہميں پرندے کتنے پيار سے تکتے تھے
ھم جب ان کے سامنے پاني رکھتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:49 AM
موت ہميں اپني اّ غوش ميں چھپاتي تھي
قبرستان ميں جا کر کھيلا کرتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:50 AM
رستے ميں اِک ان پڑھ دريا پڑتا تھا
جس سے گزر کر پڑھنے جايا کرتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:50 AM
جيسے سورج اّ کر پياس بجھائے گا
صبح سويرے ايسے پاني بھرتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:51 AM
اُڑنا ھم کو اتنا اچھا لگتا تھا
چڑياں پکڑ کر اُن کو چوما کرتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:51 AM
تتلياں ہم پر بيٹھا کرتيں تھيں
ھم پھولوں سے اتنے ملتے جلتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:51 AM
ملي تھي يہ جواني ھم کو رستے ميں
ھم تو گھر سے بچپن اوڑھ کے نکلے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:51 AM
بچپن کے دُ کھ کتنے اچھے تھے
تب تو صرف کھلونے ٹوٹا کرتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:52 AM
وہ خوشياں بھي جانے کيسي خوشياں تھيں
تتلي کے پر نُوچ کے اُچھلا کرتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:52 AM
مار کے پاؤں ہم بارش کے پاني ميں
اپني ناؤ آپ ڈبويا کرتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:53 AM
چھوٹے تھے تو مِکرو فريب بھي چھوٹے تھے
دانہ ڈال کے چڑيا پکڑا کرتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:54 AM
اب تو اِک آنسو بھي رُسوا کر جائے
بچپن ميں جي بھر کے رُويا کرتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:54 AM
خُوشبو کے اُڑتے ہي کيوں مرجھايا پھول
کتنے بھولے پن سے پوچھا کرتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:54 AM
کھيل کود کے دن بھر اپني ٹولي ميں
رات کو ماں کي گُود ميں سويا کرتے تھے

بےلگام
08-17-2012, 06:55 AM
اس جہاں میں خوشی سے زیادہ ہے غم
قہقوں سے پوچھ لو
آنسوؤں سے پوچھ لو

بےلگام
08-17-2012, 06:55 AM
سیدھے راستے زیادہ ہیں کہ پیچ وخم
حادثوں سے پوچھ لو
منزلوں سے پوچھ لو

بےلگام
08-17-2012, 06:55 AM
زندگی پہ یوں تو ہر کوئی نثار ہے
آدمی کو آدمی سے کتنا پیار ہے

بےلگام
08-17-2012, 06:56 AM
کون کس کے واسطے ہے محترم
دوستوں سے پوچھ لو
دشمنوں سے پوچھ لو

بےلگام
08-17-2012, 06:56 AM
ان ہی خوبیوں میں ہیں خرابیاں بڑی
وقت سے کریں خطاب روک کر گھڑی

بےلگام
08-17-2012, 06:56 AM
بے حسی بھی کھا رہی ہے ہوش کی قسم
نیتوں سے پوچھ لو
مقصدوں سے پوچھ لو

بےلگام
08-17-2012, 06:57 AM
کس کے دل کی آگ نے ضمیر کو چھوا
کون اپنے سامنے جواب دہ ہوا

بےلگام
08-17-2012, 06:58 AM
جرم بے شمار ہیں ،عدالتیں ہیں کم
مجرموں سے پوچھ
منصفوں سے پوچھ لو

بےلگام
08-17-2012, 07:00 AM
اس سے پہلے کہ يہ دنيا مجھے رسوا کر دے
تو ميرے جسم ميری روح کو اچھا کر دے

بےلگام
08-17-2012, 07:01 AM
کس قدر ٹوٹ رہی ہے ميری وحدت مجھ سے
اے ميری وحدتوں والے مجھے يکجا کر دے

بےلگام
08-17-2012, 07:01 AM
يہ جو حالت ہے ميری ميں نے بنائی ہے مگر
جيسا تو چاہتا ہے اب مجھے ويسا کر دے

بےلگام
08-17-2012, 07:02 AM
ميرے ہر فيصلے ميں تيری رضا شامل ہو
جو تيرا حکم ہو وہ ميرا ارادہ کر دے

بےلگام
08-17-2012, 07:02 AM
مجھ کو وہ علم سکھا جس سے اجالے پھيلے
مجھ کو وہ اسم پڑھا جو مجھے زندہ کر دے

بےلگام
08-17-2012, 07:02 AM
ضائع ہونے سے بچا لے ميرے محبوب مجھے
يہ نہ ہو وقت مجھے کھيل تماشا کر دے

بےلگام
08-17-2012, 07:02 AM
ميں مسافر ہوں سو رستے مجھے راس آۓ ہيں
ميری منزل کو ميرے واسطے رستہ کر دے

بےلگام
08-17-2012, 07:03 AM
ميری آواز تيری حمد سے لبريز رہے
بزم کونين ميں جاری ميرا نغمہ کر دے

بےلگام
08-17-2012, 07:03 AM
اس سے پہلے کہ يہ دنيا مجھے رسوا کر دے
تو ميرے جسم ميری روح کو اچھا کر دے

بےلگام
08-17-2012, 07:04 AM
میں خیال ھوں کسی اور کا مجھے سوچتا کوئی اور ھے

سر آئینہ مرا عکس ھے پس آئینہ کوئی اور ھے

بےلگام
08-17-2012, 07:05 AM
میں کسی کے دست طلب میں ھوں تو کسی کے حرف دعا میں ھوں

میں نصیب ھوں کسی اور کا مجھے مانگتا کوئی اور ھے

بےلگام
08-17-2012, 07:05 AM
کبھی لوٹ آئیں تو پوچھنا نہیں دیکھنا انہیں غور سے

جنہیں راستے میں خبر ھوئی کہ یہ راستہ کوئی اور ھے

بےلگام
08-17-2012, 07:05 AM
تجھے دشمنوں کی خبر نہ تھی مجھے دوستوں کا پتہ نہ تھا

تری داستاں کوئی اور تھی مرا واقعہ کوئی اور ھے

بےلگام
08-17-2012, 07:06 AM
نہ امیر شہر کو ہے خبر ، نہ فقیہہ شہر کا ذوق ہے
یہ محاذ تھا کسی اور کا ، یہاں لڑ رہا کوئی اور ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:07 AM
رہے پہرا زن میرے شہر کے ، تو کبھی کے جا کے سو چکے
مرے مورچوں میں یہ رِیت ہے ، یہاں جاگتا کوئی اور ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:07 AM
کہیں سنگ ہو ، کوئی دشت ہو ، کہیں خار ہو ، کبھی گشت ہو
اے رہِ چمن تجھے الودع ، مرا راستہ کوئی اور ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:07 AM
ہیں مراقبے کہ حکایتیں ، یا مراسلے کہ فصاحتیں
یہاں مرض تھا کوئی ہی ، جو ملی دوا کوئی اور ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:07 AM
تھے جو پاس اپنے نقوشِ رہ ، زنداں سے تختہ دار تک
وہ تھما کے ہم نے کہا انھیں کہ یہ مرحلہ کوئی اور ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:08 AM
کوئ سایہ اچھے سائیں دھوپ بہت ہے
مر جاؤں گا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:09 AM
سانولی رت میں خواب جلے تو آنکھ کھلی
میں نے دیکھا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:10 AM
اب کے موسم یہی رہا تو مر جاۓ گا
اک اک لمحہ اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:10 AM
کوئ ٹھکانہ بخش اسے جو گھوم رہا ہے
مارا مارا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:10 AM
ایک تو دل کے رستے بھی دشوار بہت ہیں
پھر میں پیاسا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:11 AM
کوئ سایہ آگ میں جلنے والوں پر بھی
کوئ پروا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:11 AM
رات کو اک پاگل نے شہر کی دیواروں پر
خون سے لکھا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:11 AM
اچھے سائیں مان لیا دنیا ہے روشن
لیکن یہ کیا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:12 AM
کون تھا جس سے دل کی حالت کہتا میں
کس سے کہتا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے۔

بےلگام
08-17-2012, 07:16 AM
دیکھ لے شکل میری کس کا آئینہ ہوں میں
یار کی شکل ہوں اور یار میں فنا ہوں میں

بےلگام
08-17-2012, 07:16 AM
پتا لگائے کوئی کیا میرے پتے کا پتا
میرے پتے کا پتا ہے کہ لا پتا ہوں میں

بےلگام
08-17-2012, 07:16 AM
میں وہ بشر ہوں کہ فرشتے کریں جنہیں سجدہ
اب اس کے آگے خدا جانے اور کیا ہوں میں

بےلگام
08-17-2012, 07:17 AM
میں وہ بشر ہوں کہ فرشتے کریں جنہیں سجدہ
اب اس کے آگے خدا جانے اور کیا ہوں میں

بےلگام
08-17-2012, 07:17 AM
میں مٹ گیا ہوں تو پھر کس کا نام ہے بیعدم
وہ مل گئے ہیں تو پھر کس کو ڈھونڈتا ہوں میں

بےلگام
08-17-2012, 07:18 AM
میں مٹ گیا ہوں تو پھر کس کا نام ہے بیعدم
وہ مل گئے ہیں تو پھر کس کو ڈھونڈتا ہوں میں

بےلگام
08-17-2012, 07:19 AM
دے گا دوست بنا کے دھوکا..
دل نے بولا دل نے روکا...

بےلگام
08-17-2012, 07:19 AM
عقل سے پیدل میں ھو بیٹھا.
اور اسے یوں مل گیا موقع...

بےلگام
08-17-2012, 07:19 AM
دانائی کی بات ھے پیارے...
مارا گیا نا جس نے سوچا..

بےلگام
08-17-2012, 07:20 AM
بدھو بھی ھیں سادہ بھی ھیں
لوٹنے پے آمادہ بھی ھیں....

بےلگام
08-17-2012, 07:20 AM
امیدوں کے سہارے ڈوب جاتے

بہت سے گوشوارے ڈوب جاتے

بےلگام
08-17-2012, 07:21 AM
اگر ہم اپنا استعفی نہ دیتے

تو سب کے سب ادارے ڈوب جاتے

بےلگام
08-17-2012, 07:21 AM
میں طوفانوں کے آگے ڈٹ گیا تھا

نہیں تو میرے پیارے ڈوب جاتے

بےلگام
08-17-2012, 07:21 AM
وہ پردے میں رہا پردے پہ آتا

تو سب فلمی ستارے ڈوب جاتے

بےلگام
08-17-2012, 07:21 AM
سمندر نے ہی مہلت دے دی ورنہ

تم اک لمجے میں سارے ڈوب جاتے

بےلگام
08-17-2012, 07:22 AM
ہمارا ڈوب جانا طے شدہ تھا

اگر جذبے ہمارے ڈوب جاتے

انور جمال انور

بےلگام
08-17-2012, 07:22 AM
میں نےجو کیا وہ برا کیا،میں نے خود کو خود ہی تباہ کیا

جو تجھے پسند ہو میرے رب،مجھے اس ادا کی تلاش ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:23 AM
وضع میں تم ہو نصاریٰ تو تمدن میں ہنود
تم وہ مسلم ہو جنہیں دیکھ کے شرمائیں یہود

بےلگام
08-17-2012, 07:23 AM
اگر کبھی میری یاد آئے

تو چاند راتوں کی نرم دلگیر روشنی میں

بےلگام
08-17-2012, 07:23 AM
کسی ستارے کو دیکھ لینا

اگر وہ نخل فلک سے اڑ کر تمہارے قدموں میں آ گرے تو

بےلگام
08-17-2012, 07:23 AM
یہ جان لینا وہ استعارہ تھا میرے دل کا

اگر نہ آئے------

مگر یہ ممکن ھی کس طرح ھے تم کسی پر نگاہ ڈالو

بےلگام
08-17-2012, 07:24 AM
تو اس کی دیوار جاں نہ ٹوٹے

وہ اپنی ھستی نہ بھول جائے

بےلگام
08-17-2012, 07:25 AM
میں خوشبوؤں میں تمہیں ملوں گا

مجگھے گلابوں کی پتیوں میں تلاش کرنا

بےلگام
08-17-2012, 07:26 AM
میں اوس قطروں کے آئنوں میں تمہیں ملوں گا

اگر ستاروں میں اوس قطروں میں خوشبوؤں میں

بےلگام
08-17-2012, 07:26 AM
نہ پاؤ مجھ کو

تو اپنے قدموں میں دیکھ لینا

میں گرد ھوتی مسافتوں میں تمہیں ملوں گا

کہیں پہ روشن چراغ دیکھو تو سوچ لینا

بےلگام
08-17-2012, 07:27 AM
کہ ھر پتنگے کے ساتھ میں بھی بکھر چکا ھوں

تم اپنے ھاتھوں سے ان پتنگوں کی خاک دریا میں ڈال دینا

بےلگام
08-17-2012, 07:27 AM
میں خاک بن کر سمندروں میں سفر کروں گا

کسی نہ دیکھے ھوئے جزیرے پہ رک کے تم کو

بےلگام
08-17-2012, 07:27 AM
صدائیں دوں گا

سمندروں کے سفر پہ نکلو تو

اس جزیرے پہ بھی اترنا!


امجد اسلام امجد

بےلگام
08-17-2012, 08:47 AM
دعا دینا،میں جب بھی یاد آون...
بلا لینا میں جب بھی یاد آون....

بےلگام
08-17-2012, 08:47 AM
میرا خط پڑہ کے روناچھوڑ دو اب--
جلا دینا میں جب بھی یاد آوں...

بےلگام
08-17-2012, 08:47 AM
غزل سن سن کے جو ھم جھومتے تھے---
لگا لینا میں جب بھی یاد آوں....

بےلگام
08-17-2012, 08:48 AM
وہ جزبے بے طلب آھوں کے جیسے...
سلا دینا میں جب بھی یاد اوں....

بےلگام
08-17-2012, 08:48 AM
جو ھم نے خواب دیکھے خواب ھی تھے...
بھلا دینا،میں جب بھی یاد آوں..

بےلگام
08-17-2012, 08:49 AM
آج ہوا کیا عیسیٰ ے آدم
جو آنکھوں مے آنسو ہے
آج ہوا کیا عیسیٰ ے آدم
جو رونے کو دل کرتا ہے
ٹوٹ گیا کیا کوئی سپنا
یا بچھدہ ہے کوئی اپنا
منا کی دکھ ہوتا ہے

بےلگام
08-17-2012, 08:49 AM
جب کچھ عیساٰ ہوتا ہے
سپنے تو بنتے ور بگڑتے ہے
جوان می اپنے ملتے ور بچھڈتے ہے
خاص ہوتے ہی جو فر بھی ہستی ہے
کھود کے سارے بیکار کے گم
بس تو بڈتے جانا
بنا روکے راستو مے
منجیل پی بڈتے جانا

بےلگام
08-17-2012, 08:49 AM
سپنے تو انکے پورے ہوتے ہے
جو بیٹھ انح سجوتے ہے
فر کچھ اپنے مل جاتے ہے
جب ہم آگے بڈتے جاتے ہے
میرا تو بس من یہ کہنا
اہے تو بس بڈتے جانا

بےلگام
08-17-2012, 08:49 AM
گمگیں دل کو بھرتے جانا
فر دیں ایک عیسیٰ ایگا
جب دکھ تیرا چاٹ جاےگا
تب کچھ عیسیٰ ہوگا ے آدم
آنکھو مے ہوگی نورانی چمک
تب کچھ عیسیٰ ہوگا ے آدم
جوان مے خوشیا چلکنگی

بےلگام
08-17-2012, 07:47 PM
میں نظر جب بھی تیری تاریخ پر دوڑاتا ہوں
عظمت و عزیمت کی داستان اوراق پر پاتا ہوں

بےلگام
08-17-2012, 07:47 PM
صحابہ جیسے نشان تجھ میں چمکتے دکھتے ہیں
قسم کھا کر کہتا ہوں نہ تجھ جیسا کوئی پاتا ہوں

بےلگام
08-17-2012, 07:47 PM
نقش کیسے کیسے جاوداں دنیا پہ ثبت کر دیے
بادشاہ کیسے کیسے شجاعت سے سرنگوں کر دیے

بےلگام
08-17-2012, 07:47 PM
سکندر کو بھی تیرے اجداد نے خاک چٹائی
چنگیزی بدمست ہاتھی کے نشے ہرن کر دیے

بےلگام
08-17-2012, 07:48 PM
فرنگی کا سورج نہ غروب تھا جب زمانے میں
غرور توڑ دیا اس کا تختے اسکے الٹ کر دیے

بےلگام
08-17-2012, 07:48 PM
تیرے ابواب تابندہ ہیں غزنوی اور غوری سے
تاریخ تیری کوئی کیا بدلے ہیراپھیری اور چوری سے

بےلگام
08-17-2012, 07:48 PM
ظالم آئے بہت توانا پر جھکا نہ تجھکو پائے
سرخ ریچھ بھی آیا تھا تیری زمیں پہ سینہ زوری سے

بےلگام
08-17-2012, 07:48 PM
تیرے ذکر کے بغیر کہانی ہند کی ہے ادھوری
دشمنوں نے بھی مانا ہے تجھکو چاہے مجبوری سے

بےلگام
08-17-2012, 07:49 PM
سن اے جوان پختون سبق میرا یہ یاد رکھنا
دشمنوں کو ایمان کے تو ہمیشہ برباد رکھنا

بےلگام
08-17-2012, 07:49 PM
تو قومیت سے نہیں روشن اسلام ہے جوہر تیرا
قرآن سے تو کردار اپنا ہمیشہ آباد رکھنا

بےلگام
08-17-2012, 07:50 PM
وہاں اب گھر نہیں بستے، بس مکان رہتے ہے
نہیں بنتے وہاں کنبے، بس سنگ کچھ انسان رہتے ہے

بےلگام
08-17-2012, 07:50 PM
وہاں بابوجی کی ڈانٹ، ماں کا پیار نہیں ہے اب
ہر شام بیٹے کا ماں کو نہیں انتظار اب

بےلگام
08-17-2012, 07:51 PM
خانے کی مج پر اب بات نہیں ہوتی
یہ سب بٹے تو سید اب کہی نہیں ہوتی

بےلگام
08-17-2012, 07:51 PM
ریموٹ کی خاطر اب وہا کوئی نہیں لڑتا
امرود کی تہنی پر اب کوئی نہیں چڑھتا