PDA

View Full Version : شاعری



صفحات : 1 [2] 3 4 5

بےلگام
07-18-2012, 07:40 AM
باپ کا علم نہ بیٹے کو اگر ازبر ہو
پھر پسر قابل میراث پدر کیونکر ہو!

بےلگام
07-18-2012, 07:40 AM
ہر کوئی مست مۓ ذوق تن آسانی ہے
تم مسلماں ہو! یہ انداز مسلمانی ہے؟

بےلگام
07-18-2012, 07:41 AM
حیدری فقر ہے نے دولت عثمانی ہے
تم کو اسلاف سے کیا نسبت روحانی ہے؟

بےلگام
07-18-2012, 07:41 AM
وہ زمانے میں معزز تھے مسلماں ہو کر
اور تم خوار ہوئے تارک قرآں ہو کر

بےلگام
07-18-2012, 07:41 AM
تم ہو آپس میں غضبناک، وہ آپس میں رحیم
تم خطاکار و خطابیں، وہ خطا پوش و کریم

بےلگام
07-18-2012, 07:42 AM
چاہتے سب ہیں کہ ہوں اوج ثریا پہ مقیم
پہلے ویسا کوئی پیدا تو کرے قلب سلیم

بےلگام
07-18-2012, 07:42 AM
تختِ فغفور بھی ان کا تھا، سریرِ کَے بھی
یونہی باتیں ہیں کہ تم میں وہ حمیت ہے بھی؟

بےلگام
07-18-2012, 07:43 AM
خود کشی شیوہ تمہارا، وہ غیور و خوددار
تم اخوت سے گریزاں، وہ اخوت پہ نثار

بےلگام
07-18-2012, 07:43 AM
تم ہو گفتار سراپا، وہ سراپا کردار
تم ترستے ہو کلی کو، وہ گلستاں بہ کنار

بےلگام
07-18-2012, 07:43 AM
اب تلک یاد ہے قوموں کو حکایت ان کی
نقش ہے صفحۂ ہستی پہ صداقت ان کی

بےلگام
07-18-2012, 07:46 AM
مثل انجم افق قوم پہ روشن بھی ہوئے
بت ہندی کی محبت میں برہمن بھی ہوئے

بےلگام
07-18-2012, 07:46 AM
شوق پرواز میں مہجور نشیمن بھی ہوئے
بے عمل تھے ہی جواں، دین سے بدظن بھی ہوئے

بےلگام
07-18-2012, 07:47 AM
ان کو تہذیب نے ہر بند سے آزاد کیا
لا کے کعبے سے صنم خانے میں آباد کیا

بےلگام
07-18-2012, 07:47 AM
قیس زحمت کش تنہائ صحرا نہ رہے
شہر کی کھائے ہوا، بادیہ پیمانہ نہ رہے

بےلگام
07-18-2012, 07:48 AM
وہ تو دیوانہ ہے، بستی میں رہے یا نہ رہے
یہ ضروری ہے حجاب رُخ لیلا نہ رہے

بےلگام
07-18-2012, 07:49 AM
گلۂ جور نہ ہو، شکوۂ بیداد نہ ہو
عشق آزاد ہے، کیوں حسن بھی آزاد نہ ہو!

بےلگام
07-18-2012, 07:49 AM
عہد نو برق ہے، آتش زن ہرخرمن ہے
ایمن اس سے کوئی صحرا نہ کوئی گلشن ہے

بےلگام
07-18-2012, 07:49 AM
اس نئی آگ کا اقوام کہیں ایندھن ہے
ملت ختم رسل شعلہ بہ پیراہن ہے

بےلگام
07-18-2012, 07:50 AM
آج بھی ہو جو براہیم کا ایماں پیدا
آگ کر سکتی ہے انداز گلستاں پیدا

بےلگام
07-18-2012, 07:50 AM
دیکھ کر رنگ چمن ہو نہ پریشاں مالی
کوکب غنچہ سے شاخیں ہیں چمکنے والی

بےلگام
07-18-2012, 07:51 AM
خس و خاشاک سے ہوتا ہے گلستاں خالی
گل بر انداز ہے خون شہداء کی لالی

بےلگام
07-18-2012, 08:22 AM
رنگ گردوں کا ذرا دیکھ تو عنابی ہے
یہ نکلتے ہوئے سورج کی افق تابی ہے

بےلگام
07-18-2012, 08:22 AM
امتیں گلشن ہستی میں ثمر چیدہ بھی ہیں
اور محروم ثمر بھی ہیں، خزاں دیدہ بھی ہیں

بےلگام
07-18-2012, 08:22 AM
سینکڑوں نخل ہیں ، کاہیدہ بھی ، بالیدہ بھی ہیں
سینکڑوں بطنِ چمن میں ابھی پوشیدہ بھی ہیں

بےلگام
07-18-2012, 08:23 AM
نخل اسلام نمونہ ہے بردمندی کا
پھل ہے یہ سینکڑوں صدیوں کی چمن بندی کا

بےلگام
07-18-2012, 08:23 AM
پاک ہے گرد وطن سے سرِ داماں تیرا
تو وہ یوسف ہے کہ ہر مصر ہے کنعاں تیرا

بےلگام
07-18-2012, 08:24 AM
پاک ہے گرد وطن سے سرِ داماں تیرا
تو وہ یوسف ہے کہ ہر مصر ہے کنعاں تیرا

بےلگام
07-18-2012, 08:24 AM
نخل شمع استی و در شعلہ دود ریشۂ تو
عاقبت سوز بود سایۂ اندیشۂ تو

بےلگام
07-18-2012, 08:48 AM
تو نہ مٹ جائے گا ایران کے مٹ جانے سے
نشۂ مے کو تعلق نہیں پیمانے سے

بےلگام
07-18-2012, 08:48 AM
ہے عیاں یورش تاتار کے افسانے سے
پاسباں مل گئے کعبے کو صنم خانے سے

بےلگام
07-18-2012, 08:48 AM
کشتیِ حق کا زمانے میں سہارا تو ہے
عصر نو رات ہے، دھندلا سا تارا تو ہے

بےلگام
07-18-2012, 08:49 AM
ہے جو ہنگامہ بپا یورش بلغاری کا
غافلوں کے لیے پیغام ہے بیداری کا

بےلگام
07-18-2012, 08:49 AM
تو سمجھتا ہے یہ سامان ہے دل آزاری کا
امتحاں ہے ترے ایثار کا، خود داری کا

بےلگام
07-18-2012, 08:49 AM
کیوں ہراساں ہے صہیل فرس اعدا سے
نور حق بجھ نہ سکے گا نفس اعدا سے

بےلگام
07-18-2012, 08:50 AM
چشم اقوام سے مخفی ہے حقیقت تیری
ہے ابھی محفل ہستی کو ضرورت تیری

بےلگام
07-18-2012, 08:50 AM
زندہ رکھتی ہے زمانے کو حرارت تیری
کوکب قسمت امکاں ہے خلافت تیری

بےلگام
07-18-2012, 08:50 AM
وقت فرصت ہے کہاں، کام ابھی باقی ہے
نور توحید کا اتمام ابھی باقی ہے

بےلگام
07-18-2012, 08:51 AM
مثل بوٗ قید ہے غنچے میں، پریشاں ہو جا
رخت بردوش ہوائے چمنستاں ہو جا

بےلگام
07-18-2012, 08:54 AM
ہے تنک مایہ تو ذرے سے بیاباں ہو جا
نغمۂ موج سے ہنگامۂ طوفاں ہو جا!

بےلگام
07-18-2012, 08:54 AM
قوت عشق سے ہر پست کو بالا کر دے
دہر میں اسم محمد سے اجالا کر دے

بےلگام
07-18-2012, 09:00 AM
ہو نہ یہ پھول تو بلبل کا ترنم بھی نہ ہو
چمن دہر میں کلیوں کا تبسم بھی نہ ہو

بےلگام
07-18-2012, 09:01 AM
یہ نہ ساقی ہو تو پھر مے بھی نہ ہو، خم بھی نہ ہو
بزم توحید بھی دنیا میں نہ ہو، تم بھی نہ ہو

بےلگام
07-18-2012, 09:01 AM
خیمہ افلاک کا استادہ اسی نام سے ہے
نبض ہستی تپش آمادہ اسی نام سے ہے

بےلگام
07-18-2012, 09:02 AM
دشت میں، دامن کہسار میں، میدان میں ہے
بحر میں، موج کی آغوش میں، طوفان میں ہے

بےلگام
07-18-2012, 09:02 AM
چین کے شہر، مراکش کے بیاباں میں ہے
اور پوشیدہ مسلماں کے ایمان میں ہے

بےلگام
07-18-2012, 09:03 AM
چشم اقوام یہ نظارہ ابد تک دیکھے
رفعت شان رَفعَنَا لَکَ ذِکرَک دیکھے

بےلگام
07-18-2012, 09:14 AM
مردم چشم زمین یعنی وہ کالی دنیا
وہ تمہارے شہداء پالنے والی دنیا

بےلگام
07-18-2012, 09:14 AM
گرمیِ مہر کی پروردہ ہلالی دنیا
عشق والے جسے کہتے ہیں بلالی دنیا

بےلگام
07-18-2012, 09:15 AM
تپش اندوز ہے اس نام سے پارے کی طرح
غوطہ زن نور میں ہے آنکھ کے تارے کی طرح

بےلگام
07-18-2012, 09:15 AM
تپش اندوز ہے اس نام سے پارے کی طرح
غوطہ زن نور میں ہے آنکھ کے تارے کی طرح

بےلگام
07-18-2012, 09:16 AM
ماسوا اللہ کے لیے آگ ہے تکبیر تری
تو مسلماں ہو تو تقدیر ہے تدبیر تری

بےلگام
07-18-2012, 09:16 AM
کی محمد سے وفا تو نے تو ہم تیرے ہیں
یہ جہاں چیز ہے کیا، لوح و قلم تیرے ہیں

بےلگام
07-18-2012, 09:16 AM
امتیں گلشنِ ہستی میں ثمر چیدہ بھی ہیں
اور محروم ثمر بھی ہیں، خزاں دیدہ بھی ہیں

بےلگام
07-18-2012, 09:17 AM
سینکڑوں نخل ہیں ، کاہیدہ بھی ، بالیدہ بھی ہیں
سینکڑوں بطنِ چمن میں ابھی پوشیدہ بھی ہیں

بےلگام
07-18-2012, 09:17 AM
نخلِ اسلام نمونہ ہے بردمندی کا
پھل ہے یہ سینکڑوں صدیوں کی چمن بندی کا
( شاعر ۔ علامہ محمد اقبال )

بےلگام
07-18-2012, 09:18 AM
آتی ہے دمِ صبح صدا عرشِ بریں سے
کھویا گیا کس طرح تیرا جوہرِ ادراک

بےلگام
07-18-2012, 09:19 AM
آتی ہے دمِ صبح صدا عرشِ بریں سے
کھویا گیا کس طرح تیرا جوہرِ ادراک

بےلگام
07-18-2012, 09:19 AM
تو ظا ہر و باطن کی خلافت کا سزا وار
کیا شعلہ بھی ہوتا ہے غلامِ خس و خاشاک ؟

بےلگام
07-18-2012, 09:20 AM
مہر و مہ انجم نہیں محکوم ترے کیوں؟
کیوں تیری نگاہوں سے لرزتے نہیں افلاک؟

بےلگام
07-18-2012, 09:20 AM
اب تک ہے رواں گر چہ لہو تیری رگوں میں
نے گرمئی افکار ، نہ اندیشئہ بیبا ک

بےلگام
07-18-2012, 09:21 AM
روشن تو وہ ہوتی ہے جہاں بیں نہیں ہوتی
جس آنکھ کے پردوں میں نہیں ہے نگہ پاک

بےلگام
07-18-2012, 09:22 AM
باقی رہی نہ تیری وہ آئینہ ضمیری
اے کشتتہء سلطانی و ملَا ئی و پیری

بےلگام
07-18-2012, 09:22 AM
ترے دریا میں طوفاں کیوں نہیں ہے ؟
خودی تیری مسلماں کیوں نہیں ہے ؟

بےلگام
07-18-2012, 09:23 AM
عبث ہے شکوہ ء تقدیرِ یز داں
تو خود تقدیرِ یزداں کیوں نہیں ہے ؟

بےلگام
07-18-2012, 09:26 AM
دل سے جو بات نکلتی ہے اثر رکھتی ہے
پر نہیں ، طاقتِ پرواز مگر رکھتی ہے

بےلگام
07-18-2012, 09:33 AM
سختیاں کرتا ہوں دل پر، غیر سے غافل ہوں
ہاے کیا اچھی کہی ظالم ہوں میں ،جاہل ہوں میں

بےلگام
07-18-2012, 09:33 AM
میں جبی تک تھا کہ تیری جلوہ پیرائی نہ تھی
جو ہمودِ حق سے مٹ جاتا ہے ، وہ باطل ہوں میں

بےلگام
07-18-2012, 09:35 AM
اے ہمالہ! اے فصیل کشور ہندوستاں
چومتا ہے تیری پیشانی کو جھک کر آسماں

بےلگام
07-18-2012, 09:35 AM
تجھ میں کچھ پیدا نہیں دیرینہ روزی کے نشاں
تو جواں ہے گردش شام و سحر کے درمیاں

بےلگام
07-18-2012, 09:36 AM
ایک جلوہ تھا کلیم طور سینا کے لیے
تو تجلی ہے سراپا چشم بینا کے لیے

بےلگام
07-18-2012, 09:37 AM
امتحان دیدۂ ظاہر میں کوہستاں ہے تو
پاسباں اپنا ہے تو ، دیوار ہندستاں ہے تو

بےلگام
07-18-2012, 09:38 AM
امتحان دیدۂ ظاہر میں کوہستاں ہے تو
پاسباں اپنا ہے تو ، دیوار ہندستاں ہے تو

بےلگام
07-18-2012, 09:38 AM
امتحان دیدۂ ظاہر میں کوہستاں ہے تو
پاسباں اپنا ہے تو ، دیوار ہندستاں ہے تو

بےلگام
07-18-2012, 09:38 AM
امتحان دیدۂ ظاہر میں کوہستاں ہے تو
پاسباں اپنا ہے تو ، دیوار ہندستاں ہے تو

بےلگام
07-18-2012, 09:39 AM
چوٹیاں تیری ثریا سے ہیں سرگرم سخن
تو زمیں پر اور پہنائے فلک تیرا وطن

بےلگام
07-18-2012, 09:39 AM
چشمۂ دامن ترا آ ئینۂ سیال ہے
دامن موج ہوا جس کے لیے رومال ہے

بےلگام
07-18-2012, 09:43 AM
چشمۂ دامن ترا آ ئینۂ سیال ہے
دامن موج ہوا جس کے لیے رومال ہے

بےلگام
07-18-2012, 09:45 AM
اے ہمالہ کوئی بازی گاہ ہے تو بھی ، جسے
دست قدرت نے بنایا ہے عناصر کے لیے

بےلگام
07-18-2012, 09:46 AM
ہائے کیا فرط طرب میں جھومتا جاتا ہے ابر
فیل بے زنجیر کی صورت اڑا جاتا ہے ابر

بےلگام
07-18-2012, 09:46 AM
جنبش موج نسیم صبح گہوارہ بنی
جھومتی ہے نشۂ ہستی میں ہر گل کی کلی

بےلگام
07-18-2012, 09:47 AM
یوں زبان برگ سے گویا ہے اس کی خامشی
دست گلچیں کی جھٹک میں نے نہیں دیکھی کبھی

بےلگام
07-18-2012, 09:47 AM
کہہ رہی ہے میری خاموشی ہی افسانہ مرا
کنج خلوت خانۂ قدرت ہے کاشانہ مرا

بےلگام
07-18-2012, 09:48 AM
آتی ہے ندی فراز کوہ سے گاتی ہوئی
کوثر و تسنیم کی موجوں کی شرماتی ہوئ

بےلگام
07-18-2012, 09:48 AM
آئنہ سا شاہد قدرت کو دکھلاتی ہوئی
سنگ رہ سے گاہ بچتی ، گاہ ٹکراتی ہوئی

بےلگام
07-18-2012, 09:49 AM
چھیڑتی جا اس عراق دل نشیں کے ساز کو
اے مسافر دل سمجھتا ہے تری آواز کو

بےلگام
07-18-2012, 09:49 AM
لیلی شب کھولتی ہے آ کے جب زلف رسا
دامن دل کھینچتی ہے آبشاروں کی صدا

بےلگام
07-18-2012, 09:50 AM
وہ خموشی شام کی جس پر تکلم ہو فدا
وہ درختوں پر تفکر کا سماں چھایا ہوا

بےلگام
07-18-2012, 09:50 AM
کانپتا پھرتا ہے کیا رنگ شفق کہسار پر
خوشنما لگتا ہے یہ غازہ ترے رخسار پر

بےلگام
07-18-2012, 09:51 AM
اے ہمالہ! داستاں اس وقت کی کوئی سنا
مسکن آبائے انساں جب بنا دامن ترا

بےلگام
07-18-2012, 09:51 AM
کچھ بتا اس سیدھی سادی زندگی کا ماجرا
داغ جس پر غازۂ رنگ تکلف کا نہ تھا

بےلگام
07-18-2012, 09:52 AM
ہاں دکھا دے اے تصور پھر وہ صبح و شام تو
دوڑ پیچھے کی طرف اے گردش ایام تو

بےلگام
07-18-2012, 09:54 AM
تو شناسائے خراش عقدۂ مشکل نہیں
اے گل رنگیں ترے پہلو میں شاید دل نہیں

بےلگام
07-18-2012, 09:55 AM
زیب محفل ہے ، شریک شورش محفل نہیں
یہ فراغت بزم ہستی میں مجھے حاصل نہیں

بےلگام
07-18-2012, 10:02 AM
اس چمن میں میں سراپا سوز و ساز آرزو
اور تیری زندگانی بے گداز آرزو

بےلگام
07-18-2012, 10:03 AM
توڑ لینا شاخ سے تجھ کو مرا آئیں نہیں
یہ نظر غیر از نگاہ چشم صورت بیں نہیں

بےلگام
07-18-2012, 10:03 AM
آہ! یہ دست جفاجو اے گل رنگیں نہیں
کس طرح تجھ کو یہ سمجھاؤں کہ میں گلچیں نہیں

بےلگام
07-18-2012, 10:04 AM
کام مجھ کو دیدۂ حکمت کے الجھیڑوں سے کیا
دیدۂ بلبل سے میں کرتا ہوں نظارہ ترا

بےلگام
07-18-2012, 10:04 AM
سو زبانوں پر بھی خاموشی تجھے منظور ہے
راز وہ کیا ہے ترے سینے میں جو مستور ہے

بےلگام
07-18-2012, 10:05 AM
میری صورت تو بھی اک برگ ریاض طور ہے
میں چمن سے دور ہوں تو بھی چمن سے دور ہے

بےلگام
07-18-2012, 10:05 AM
مطمئن ہے تو ، پریشاں مثل بو رہتا ہوں میں
زخمی شمشیر ذوق جستجو رہتا ہوں میں

بےلگام
07-18-2012, 10:05 AM
یہ پریشانی مری سامان جمعیت نہ ہو
یہ جگر سوزی چراغ خانہ حکمت نہ ہو

بےلگام
07-18-2012, 10:06 AM
ناتوانی ہی مری سرمایۂ قوت نہ ہو
رشک جام جم مرا آ یئنۂ حیرت نہ ہو

بےلگام
07-18-2012, 10:06 AM
یہ تلاش متصل شمع جہاں افروز ہے
توسن ادراک انساں کو خرام آموز ہے

بےلگام
07-18-2012, 10:07 AM
تھے دیار نو زمین و آسماں میرے لیے
وسعت آغوش مادر اک جہاں میرے لیے

بےلگام
07-18-2012, 10:07 AM
تھی ہر اک جنبش نشان لطف جاں میرے لیے
حرف بے مطلب تھی خود میری زباں میرے لیے

بےلگام
07-18-2012, 10:08 AM
درد ، طفلی میں اگر کوئی رلاتا تھا مجھے
شورش زنجیر در میں لطف آتا تھا مجھے

بےلگام
07-18-2012, 10:08 AM
تکتے رہنا ہائے! وہ پہروں تلک سوئے قمر
وہ پھٹے بادل میں بے آواز پا اس کا سفر

بےلگام
07-18-2012, 10:09 AM
پوچھنا رہ رہ کے اس کے کوہ و صحرا کی خبر
اور وہ حیرت دروغ مصلحت آمیز پر

بےلگام
07-18-2012, 10:09 AM
آنکھ وقف دید تھی ، لب مائل گفتار تھا
دل نہ تھا میرا ، سراپا ذوق استفسار تھا

بےلگام
07-18-2012, 10:10 AM
فکر انساں پر تری ہستی سے یہ روشن ہوا
ہے پر مرغ تخیل کی رسائی تا کجا

بےلگام
07-18-2012, 10:10 AM
تھا سراپا روح تو ، بزم سخن پیکر ترا
زیب محفل بھی رہا محفل سے پنہاں بھی رہا

بےلگام
07-18-2012, 10:10 AM
دید تیری آنکھ کو اس حسن کی منظور ہے
بن کے سوز زندگی ہر شے میں جو مستور ہے

بےلگام
07-18-2012, 10:11 AM
محفل ہستی تری بربط سے ہے سرمایہ دار
جس طرح ندی کے نغموں سے سکوت کوہسار

بےلگام
07-18-2012, 10:11 AM
تیرے فردوس تخیل سے ہے قدرت کی بہار
تیری کشت فکر سے اگتے ہیں عالم سبزہ وار

بےلگام
07-18-2012, 10:12 AM
زندگی مضمر ہے تیری شوخی تحریر میں
تاب گویائی سے جنبش ہے لب تصویر میں

بےلگام
07-18-2012, 10:12 AM
نطق کو سو ناز ہیں تیرے لب اعجاز پر
محو حیرت ہے ثریا رفعت پرواز پر

بےلگام
07-18-2012, 10:12 AM
شاہد مضموں تصدق ہے ترے انداز پر
خندہ زن ہے غنچۂ دلی گل شیراز پر

بےلگام
07-18-2012, 10:13 AM
آہ! تو اجڑی ہوئی دلی میں آرامیدہ ہے
گلشن ویمر میں تیرا ہم نوا خوابیدہ ہے

بےلگام
07-18-2012, 10:13 AM
لطف گویائی میں تیری ہمسری ممکن نہیں
ہو تخیل کا نہ جب تک فکر کامل ہم نشیں

بےلگام
07-18-2012, 10:13 AM
ہائے! اب کیا ہو گئی ہندوستاں کی سر زمیں
آہ! اے نظارہ آموز نگاہ نکتہ بیں

بےلگام
07-18-2012, 10:14 AM
گیسوئے اردو ابھی منت پذیر شانہ ہے
شمع یہ سودائی دل سوزئ پروانہ ہے

بےلگام
07-18-2012, 10:15 AM
اے جہان آباد ، اے گہوارۂ علم و ہنر
ہیں سراپا نالۂ خاموش تیرے بام و در

بےلگام
07-18-2012, 10:15 AM
ذرے ذرے میں ترے خوابیدہ ہیں شمں و قمر
یوں تو پوشیدہ ہیں تیری خاک میں لاکھوں گہر

بےلگام
07-18-2012, 10:15 AM
دفن تجھ میں کوئی فخر روزگار ایسا بھی ہے؟
تجھ میں پنہاں کوئی موتی آبدار ایسا بھی ہے؟

بےلگام
07-18-2012, 10:16 AM
ہے بلندی سے فلک بوس نشیمن میرا
ابر کہسار ہوں گل پاش ہے دامن میرا

بےلگام
07-18-2012, 10:16 AM
کبھی صحرا ، کبھی گلزار ہے مسکن میرا
شہر و ویرانہ مرا ، بحر مرا ، بن میرا

بےلگام
07-18-2012, 10:16 AM
کسی وادی میں جو منظور ہو سونا مجھ کو
سبزۂ کوہ ہے مخمل کا بچھونا مجھ کو

بےلگام
07-18-2012, 10:16 AM
مجھ کو قدرت نے سکھایا ہے درافشاں ہونا
ناقۂ شاہد رحمت کا حدی خواں ہونا

بےلگام
07-18-2012, 10:17 AM
غم زدائے دل افسردۂ دہقاں ہونا
رونق بزم جوانان گلستاں ہونا

بےلگام
07-18-2012, 10:17 AM
بن کے گیسو رخ ہستی پہ بکھر جاتا ہوں
شانۂ موجۂ صرصر سے سنور جاتا ہوں

بےلگام
07-18-2012, 10:17 AM
دور سے دیدۂ امید کو ترساتا ہوں
کسی بستی سے جو خاموش گزر جاتا ہوں

بےلگام
07-18-2012, 10:18 AM
سیر کرتا ہوا جس دم لب جو آتا ہوں
بالیاں نہر کو گرداب کی پہناتا ہوں

بےلگام
07-18-2012, 10:18 AM
سبزۂ مزرع نوخیز کی امید ہوں میں
زادۂ بحر ہوں پروردۂ خورشید ہوں میں

بےلگام
07-18-2012, 10:19 AM
چشمۂ کوہ کو دی شورش قلزم میں نے
اور پرندوں کو کیا محو ترنم میں نے

بےلگام
07-18-2012, 10:19 AM
سر پہ سبزے کے کھڑے ہو کے کہا قم میں نے
غنچۂ گل کو دیا ذوق تبسم میں نے

بےلگام
07-18-2012, 10:20 AM
فیض سے میرے نمونے ہیں شبستانوں کے
جھونپڑے دامن کہسار میں دہقانوں کے

بےلگام
07-18-2012, 10:20 AM
اک دن کسی مکھی سے یہ کہنے لگا مکڑا
اس راہ سے ہوتا ہے گزر روز تمھارا

بےلگام
07-18-2012, 10:21 AM
لیکن مری کٹیا کی نہ جاگی کبھی قسمت
بھولے سے کبھی تم نے یہاں پاؤں نہ رکھا

بےلگام
07-18-2012, 10:21 AM
غیروں سے نہ ملیے تو کوئی بات نہیں ہے
اپنوں سے مگر چاہیے یوں کھنچ کے نہ رہنا

بےلگام
07-18-2012, 10:21 AM
آؤ جو مرے گھر میں تو عزت ہے یہ میری
وہ سامنے سیڑھی ہے جو منظور ہو آنا

بےلگام
07-18-2012, 10:22 AM
مکھی نے سنی بات جو مکڑے کی تو بولی
حضرت! کسی نادان کو دیجے گا یہ دھوکا

بےلگام
07-18-2012, 10:22 AM
اس جال میں مکھی کبھی آنے کی نہیں ہے
جو آپ کی سیڑھی پہ چڑھا ، پھر نہیں اترا

بےلگام
07-18-2012, 10:23 AM
مکڑے نے کہا واہ! فریبی مجھے سمجھے
تم سا کوئی نادان زمانے میں نہ ہو گا

بےلگام
07-18-2012, 10:23 AM
منظور تمھاری مجھے خاطر تھی وگرنہ
کچھ فائدہ اپنا تو مرا اس میں نہیں تھا

بےلگام
07-18-2012, 10:23 AM
اڑتی ہوئی آئی ہو خدا جانے کہاں سے
ٹھہرو جو مرے گھر میں تو ہے اس میں برا کیا!

بےلگام
07-18-2012, 10:24 AM
اس گھر میں کئی تم کو دکھانے کی ہیں چیزیں
باہر سے نظر آتا ہے چھوٹی سی یہ کٹیا

بےلگام
07-18-2012, 10:24 AM
لٹکے ہوئے دروازوں پہ باریک ہیں پردے
دیواروں کو آئینوں سے ہے میں نے سجای

بےلگام
07-18-2012, 10:24 AM
مہمانوں کے آرام کو حاضر ہیں بچھونے
ہر شخص کو ساماں یہ میسر نہیں ہوتا

بےلگام
07-18-2012, 10:25 AM
مکھی نے کہا خیر ، یہ سب ٹھیک ہے لیکن
میں آپ کے گھر آؤں ، یہ امید نہ رکھنا

بےلگام
07-18-2012, 10:25 AM
ان نرم بچھونوں سے خدا مجھ کو بچائے
سو جائے کوئی ان پہ تو پھر اٹھ نہیں سکتا

بےلگام
07-18-2012, 10:25 AM
مکڑے نے کہا دل میں سنی بات جو اس کی
پھانسوں اسے کس طرح یہ کم بخت ہے دانا

بےلگام
07-18-2012, 10:26 AM
سو کام خوشامد سے نکلتے ہیں جہاں میں
دیکھو جسے دنیا میں خوشامد کا ہے بندا

بےلگام
07-18-2012, 10:26 AM
یہ سوچ کے مکھی سے کہا اس نے بڑی بی !
اللہ نے بخشا ہے بڑا آپ کو رتبا

بےلگام
07-18-2012, 10:26 AM
ہوتی ہے اسے آپ کی صورت سے محبت
ہو جس نے کبھی ایک نظر آپ کو دیکھا

بےلگام
07-18-2012, 10:27 AM
آنکھیں ہیں کہ ہیرے کی چمکتی ہوئی کنیاں
سر آپ کا اللہ نے کلغی سے سجایا

بےلگام
07-18-2012, 10:28 AM
یہ حسن ، یہ پوشاک ، یہ خوبی ، یہ صفائی
پھر اس پہ قیامت ہے یہ اڑتے ہوئے گانا

بےلگام
07-18-2012, 10:28 AM
مکھی نے سنی جب یہ خوشامد تو پسیجی
بولی کہ نہیں آپ سے مجھ کو کوئی کھٹک

بےلگام
07-18-2012, 10:28 AM
انکار کی عادت کو سمجھتی ہوں برا میں
سچ یہ ہے کہ دل توڑنا اچھا نہیں ہوتا

بےلگام
07-18-2012, 10:29 AM
یہ بات کہی اور اڑی اپنی جگہ سے
پاس آئی تو مکڑے نے اچھل کر اسے پکڑا

بےلگام
07-18-2012, 10:29 AM
بھوکا تھا کئی روز سے اب ہاتھ جو آئی
آرام سے گھر بیٹھ کے مکھی کو اڑایا

بےلگام
07-18-2012, 10:30 AM
کوئی پہاڑ یہ کہتا تھا اک گلہری سے
تجھے ہو شرم تو پانی میں جا کے ڈوب مرے

بےلگام
07-18-2012, 10:30 AM
ذرا سی چیز ہے ، اس پر غرور ، کیا کہنا
یہ عقل اور یہ سمجھ ، یہ شعور ، کیا کہنا

بےلگام
07-18-2012, 10:31 AM
خدا کی شان ہے ناچیز چیز بن بیٹھیں
جو بے شعور ہوں یوں باتمیز بن بیٹھیں

بےلگام
07-18-2012, 10:31 AM
تری بساط ہے کیا میری شان کے آگے
زمیں ہے پست مری آن بان کے آگے

بےلگام
07-18-2012, 10:32 AM
جو بات مجھ میں ہے ، تجھ کو وہ ہے نصیب کہاں
بھلا پہاڑ کہاں جانور غریب کہاں!

بےلگام
07-18-2012, 10:32 AM
کہا یہ سن کے گلہری نے ، منہ سنبھال ذرا
یہ کچی باتیں ہیں دل سے انھیں نکال ذرا

بےلگام
07-18-2012, 10:33 AM
جو میں بڑی نہیں تیری طرح تو کیا پروا
نہیں ہے تو بھی تو آخر مری طرح چھوٹا

بےلگام
07-18-2012, 10:33 AM
ہر ایک چیز سے پیدا خدا کی قدرت ہے
کوئی بڑا ، کوئی چھوٹا ، یہ اس کی حکمت ہے

بےلگام
07-18-2012, 10:34 AM
بڑا جہان میں تجھ کو بنا دیا اس نے
مجھے درخت پہ چڑھنا سکھا دیا اس نے

بےلگام
07-18-2012, 10:34 AM
قدم اٹھانے کی طاقت نہیں ذرا تجھ میں
نری بڑائی ہے ، خوبی ہے اور کیا تجھ میں

بےلگام
07-18-2012, 10:35 AM
جو تو بڑا ہے تو مجھ سا ہنر دکھا مجھ کو
یہ چھالیا ہی ذرا توڑ کر دکھا مجھ کو

بےلگام
07-18-2012, 10:35 AM
نہیں ہے چیز نکمی کوئی زمانے میں
کوئی برا نہیں قدرت کے کارخانے میں

بےلگام
07-18-2012, 10:49 AM
چپ کے عالم میں وہ تصویر سی صورت اُس کی

بولتی ہے تو بدل جاتی ہے رنگت اُس کی

بےلگام
07-18-2012, 10:50 AM
آنکھ رکھتے ہو تو اُس آنکھ کی تحریر پڑھو

منہ سے اقرار نہ کرنا تو ہے عادت اُس کی

بےلگام
07-18-2012, 10:50 AM
ہے ابھی لمس کا احساس میرے ہونٹوں پر

ثبت پھیلی ہوئی باہوں پہ حرارت اُس کی

بےلگام
07-18-2012, 10:50 AM
وہ اگر جا بھی چُکا ہے تو نہ آنکھیں کھولو

ابھی محسوس کئے جائو رفاقت اُس کی

بےلگام
07-18-2012, 10:51 AM
وہ کبھی آنکھ بھی جھپکے تو لرز جاتا ہوں

مُجھ کو اُس سے بھی زیادہ ہے ضرورت اُس کی

بےلگام
07-18-2012, 10:51 AM
وہ کہیں جان نہ لے ریت کا ٹیلہ ہوں میں

میرے کاندھوں پہ ہے تعمیر عمارت اُس کی

بےلگام
07-18-2012, 10:52 AM
بے طلب جینا بھی شہزاد طلب ہے اُس کی

زندہ رہنے کی تمنا بھی شرارت اُس کی

بےلگام
07-19-2012, 06:05 AM
اجالا جب ہوا رخصت جبین شب کی افشاں کا
نسیم زندگی پیغام لائی صبح خنداں کا

بےلگام
07-19-2012, 06:06 AM
جگایا بلبل رنگیں نوا کو آشیانے میں
کنارے کھیت کے شانہ ہلایا اس نے دہقاں ک

بےلگام
07-19-2012, 06:06 AM
طلسم ظلمت شب سورۂ والنور سے توڑا
اندھیرے میں اڑایا تاج زر شمع شبستاں کا

بےلگام
07-19-2012, 06:07 AM
پڑھا خوابیدگان دیر پر افسون بیداری
برہمن کو دیا پیغام خورشید درخشاں کا

بےلگام
07-19-2012, 06:07 AM
ہوئی بام حرم پر آ کے یوں گویا مؤذن سے
نہیں کھٹکا ترے دل میں نمود مہر تاباں کا؟

بےلگام
07-19-2012, 06:08 AM
پکاری اس طرح دیوار گلشن پر کھڑے ہو کر
چٹک او غنچۂ گل! تو مؤذن ہے گلستاں کا

بےلگام
07-19-2012, 06:08 AM
دیا یہ حکم صحرا میں چلو اے قافلے والو!
چمکنے کو ہے جگنو بن کے ہر ذرہ بیاباں کا

بےلگام
07-19-2012, 06:09 AM
سوئے گور غریباں جب گئی زندوں کی بستی سے
تو یوں بولی نظارا دیکھ کر شہر خموشاں کا

بےلگام
07-19-2012, 06:09 AM
ابھی آرام سے لیٹے رہو ، میں پھر بھی آؤں گی
سلادوں گی جہاں کو خواب سے تم کو جگاؤں گی

بےلگام
07-19-2012, 06:10 AM
سہانی نمود جہاں کی گھڑی تھی
تبسم فشاں زندگی کی کلی تھی

بےلگام
07-19-2012, 06:10 AM
کہیں مہر کو تاج زر مل رہا تھا
عطا چاند کو چاندنی ہو رہی تھی

بےلگام
07-19-2012, 06:10 AM
سیہ پیرہن شام کو دے رہے تھے
ستاروں کو تعلیم تابندگی تھی

بےلگام
07-19-2012, 06:11 AM
کہیں شاخ ہستی کو لگتے تھے پتے
کہیں زندگی کی کلی پھوٹتی تھی

بےلگام
07-19-2012, 06:11 AM
فرشتے سکھاتے تھے شبنم کو رونا
ہنسی گل کو پہلے پہل آ رہی تھی

بےلگام
07-19-2012, 06:11 AM
عطا درد ہوتا تھا شاعر کے دل کو
خودی تشنۂ کام مے بے خودی تھی

بےلگام
07-19-2012, 06:12 AM
اٹھی اول اول گھٹا کالی کالی
کوئی حور چوٹی کو کھولے کھڑی تھی

بےلگام
07-19-2012, 06:12 AM
زمیں کو تھا دعوی کہ میں آسماں ہوں
مکاں کہہ رہا تھا کہ میں لا مکاں ہوں

بےلگام
07-19-2012, 06:13 AM
غرض اس قدر یہ نظارہ تھا پیارا
کہ نظارگی ہو سراپا نظارا
ملک آزماتے تھے پرواز اپنی
جبینوں سے نور ازل آشکارا

بےلگام
07-19-2012, 06:13 AM
فرشتہ تھا اک ، عشق تھا نام جس کا
کہ تھی رہبری اس کی سب کا سہارا

بےلگام
07-19-2012, 06:14 AM
فرشتہ کہ پتلا تھا بے تابیوں کا
ملک کا ملک اور پارے کا پارا

بےلگام
07-19-2012, 06:14 AM
پے سیر فردوس کو جا رہا تھا
قضا سے ملا راہ میں وہ قضا را

بےلگام
07-19-2012, 06:14 AM
یہ پوچھا ترا نام کیا ، کام کیا ہے
نہیں آنکھ کو دید تیری گوارا

بےلگام
07-19-2012, 06:15 AM
یہ پوچھا ترا نام کیا ، کام کیا ہے
نہیں آنکھ کو دید تیری گوارا

بےلگام
07-19-2012, 06:16 AM
اڑاتی ہوں میں رخت ہستی کے پرزے
بجھاتی ہوں میں زندگی کا شرارا

بےلگام
07-19-2012, 06:16 AM
مری آنکھ میں جادوئے نیستی ہے
پیام فنا ہے اسی کا اشارا

بےلگام
07-19-2012, 06:17 AM
مگر ایک ہستی ہے دنیا میں ایسی
وہ آتش ہے میں سامنے اس کے پارا

بےلگام
07-19-2012, 06:17 AM
شرر بن کے رہتی ہے انساں کے دل میں
وہ ہے نور مطلق کی آنکھوں کا تارا

بےلگام
07-19-2012, 06:18 AM
ٹپکتی ہے آنکھوں سے بن بن کے آنسو
وہ آنسو کہ ہو جن کی تلخی گوارا

بےلگام
07-19-2012, 06:18 AM
سنی عشق نے گفتگو جب قضا کی
ہنسی اس کے لب پر ہوئی آشکارا

بےلگام
07-19-2012, 06:18 AM
گری اس تبسم کی بجلی اجل پر
اندھیرے کا ہو نور میں کیا گزارا!

بےلگام
07-19-2012, 06:19 AM
بقا کو جو دیکھا فنا ہو گئی وہ
قضا تھی شکار قضا ہو گئی وہ

بےلگام
07-19-2012, 06:19 AM
اک مولوی صاحب کی سناتا ہوں کہانی
تیزی نہیں منظور طبیعت کی دکھانی

بےلگام
07-19-2012, 06:20 AM
شہرہ تھا بہت آپ کی صوفی منشی کا
کرتے تھے ادب ان کا اعالی و ادانی

بےلگام
07-19-2012, 06:20 AM
کہتے تھے کہ پنہاں ہے تصوف میں شریعت
جس طرح کہ الفاظ میں مضمر ہوں معانی

بےلگام
07-19-2012, 06:20 AM
لبریز مۓ زہد سے تھی دل کی صراحی
تھی تہ میں کہیں درد خیال ہمہ دانی

بےلگام
07-19-2012, 06:21 AM
کرتے تھے بیاں آپ کرامات کا اپنی
منظور تھی تعداد مریدوں کی بڑھانی

بےلگام
07-19-2012, 06:21 AM
مدت سے رہا کرتے تھے ہمسائے میں میرے
تھی رند سے زاہد کی ملاقات پرانی

بےلگام
07-19-2012, 06:22 AM
حضرت نے مرے ایک شناسا سے یہ پوچھا
اقبال ، کہ ہے قمری شمشاد معانی

بےلگام
07-19-2012, 06:22 AM
پابندی احکام شریعت میں ہے کیسا؟
گو شعر میں ہے رشک کلیم ہمدانی

بےلگام
07-19-2012, 06:23 AM
سنتا ہوں کہ کافر نہیں ہندو کو سمجھتا
ہے ایسا عقیدہ اثر فلسفہ دانی

بےلگام
07-19-2012, 06:23 AM
ہے اس کی طبیعت میں تشیع بھی ذرا سا
تفضیل علی ہم نے سنی اس کی زبانی

بےلگام
07-19-2012, 06:23 AM
سمجھا ہے کہ ہے راگ عبادات میں داخل
مقصود ہے مذہب کی مگر خاک اڑانی

بےلگام
07-19-2012, 06:24 AM
کچھ عار اسے حسن فروشوں سے نہیں ہے
عادت یہ ہمارے شعرا کی ہے پرانی

بےلگام
07-19-2012, 06:24 AM
گانا جو ہے شب کو تو سحر کو ہے تلاوت
اس رمز کے اب تک نہ کھلے ہم پہ معانی

بےلگام
07-19-2012, 06:25 AM
لیکن یہ سنا اپنے مریدوں سے ہے میں نے
بے داغ ہے مانند سحر اس کی جوانی

بےلگام
07-19-2012, 06:25 AM
مجموعۂ اضداد ہے ، اقبال نہیں ہے
دل دفتر حکمت ہے ، طبیعت خفقانی

بےلگام
07-19-2012, 06:26 AM
رندی سے بھی آگاہ شریعت سے بھی واقف
پوچھو جو تصوف کی تو منصور کا ثانی

بےلگام
07-19-2012, 06:26 AM
اس شخص کی ہم پر تو حقیقت نہیں کھلتی
ہو گا یہ کسی اور ہی اسلام کا بانی

بےلگام
07-19-2012, 06:27 AM
القصہ بہت طول دیا وعظ کو اپنے
تا دیر رہی آپ کی یہ نغز بیانی

بےلگام
07-19-2012, 06:27 AM
اس شہر میں جو بات ہو اڑ جاتی ہے سب میں
میں نے بھی سنی اپنے احبا کی زبانی

بےلگام
07-19-2012, 06:27 AM
اک دن جو سر راہ ملے حضرت زاہد
پھر چھڑ گئی باتوں میں وہی بات پرانی

بےلگام
07-19-2012, 06:28 AM
فرمایا ، شکایت وہ محبت کے سبب تھی
تھا فرض مرا راہ شریعت کی دکھانی

بےلگام
07-19-2012, 06:28 AM
میں نے یہ کہا کوئی گلہ مجھ کو نہیں ہے
یہ آپ کا حق تھا ز رہ قرب مکانی

بےلگام
07-19-2012, 06:28 AM
خم ہے سر تسلیم مرا آپ کے آگے
پیری ہے تواضع کے سبب میری جوانی

بےلگام
07-19-2012, 06:29 AM
اگر آپ کو معلوم نہیں میری حقیقت
پیدا نہیں کچھ اس سے قصور ہمہ دانی

بےلگام
07-19-2012, 06:30 AM
میں خود بھی نہیں اپنی حقیقت کا شناسا
گہرا ہے مرے بحر خیالات کا پانی

بےلگام
07-19-2012, 06:30 AM
مجھ کو بھی تمنا ہے کہ ‘اقبال’ کو دیکھوں
کی اس کی جدائی میں بہت اشک فشانی

بےلگام
07-19-2012, 06:31 AM
اقبال بھی ‘اقبال’ سے آگاہ نہیں ہے
کچھ اس میں تمسخر نہیں ، واللہ نہیں ہے

بےلگام
07-19-2012, 06:31 AM
قوم گویا جسم ہے ، افراد ہیں اعضائے قوم
منزل صنعت کے رہ پیما ہیں دست و پائے قوم

بےلگام
07-19-2012, 06:32 AM
محفل نظم حکومت ، چہرۂ زیبائے قوم
شاعر رنگیں نوا ہے دیدۂ بینائے قوم

بےلگام
07-19-2012, 06:32 AM
مبتلائے درد کوئی عضو ہو روتی ہے آنکھ
کس قدر ہمدرد سارے جسم کی ہوتی ہے آنکھ

بےلگام
07-19-2012, 06:33 AM
قصۂ دار و رسن بازئ طفلانۂ دل
التجائے ‘ارنی’ سرخی افسانۂ دل

بےلگام
07-19-2012, 06:33 AM
یا رب اس ساغر لبریز کی مے کیا ہو گی
جاوۂ ملک بقا ہے خط پیمانۂ دل

بےلگام
07-19-2012, 06:34 AM
ابر رحمت تھا کہ تھی عشق کی بجلی یا رب!
جل گئی مزرع ہستی تو اگا دانۂ دل

بےلگام
07-19-2012, 06:34 AM
حسن کا گنج گراں مایہ تجھے مل جاتا
تو نے فرہاد! نہ کھودا کبھی ویرانۂ دل!

بےلگام
07-19-2012, 06:34 AM
عرش کا ہے کبھی کعبے کا ہے دھوکا اس پر
کس کی منزل ہے الہی! مرا کاشانۂ دل

بےلگام
07-19-2012, 06:35 AM
اس کو اپنا ہے جنوں اور مجھے سودا اپنا
دل کسی اور کا دیوانہ ، میں دیوانۂ دل

بےلگام
07-19-2012, 06:35 AM
تو سمجھتا نہیں اے زاہد ناداں اس کو
رشک صد سجدہ ہے اک لغزش مستانۂ دل

بےلگام
07-19-2012, 06:36 AM
خاک کے ڈھیر کو اکسیر بنا دیتی ہے
وہ اثر رکھتی ہے خاکستر پروانۂ دل

بےلگام
07-19-2012, 06:36 AM
عشق کے دام میں پھنس کر یہ رہا ہوتا ہے
برق گرتی ہے تو یہ نخل ہرا ہوتا ہے

بےلگام
07-19-2012, 06:36 AM
مضطرب رکھتا ہے میرا دل بے تاب مجھے
عین ہستی ہے تڑپ صورت سیماب مجھے