PDA

View Full Version : شاعری



صفحات : [1] 2 3 4 5

بےلگام
07-17-2012, 04:03 AM
ان کو ہم سے ہی محبت ہو ضروری تو نہیں
ایک سی دونوں کی حالت ہو ضروری تو نہیں
سب کی ثاقی پے نظر ہو یہ ضروری ہے مگر
سب پہ ثاقی کی نظر ہو یہ ضروری تو نہیں
میری تنہائیاں کرتی ھیں جنہیں یاد صدا
ان کو بھی میری ضرورت ہو،ضروری تو نہیں
نیند تو درد کے بستر پے بھی آجاتی ہے
ان کی آغوش میں سر ہویہ ضروری تو نہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:07 AM
اس آخری نظر میں عجب درد تھا منیر،
!جانے کا اسکے رنج مجھے عمر بھر رہا

بےلگام
07-17-2012, 04:07 AM
اس قدر قرب کے بعد ایسے جدا ہوجانا،
کوئی کم حوصلہ انسان ہو تو مر بھی جائے،

بےلگام
07-17-2012, 04:07 AM
کسی لباس کی خوشبو جب اڑ کے آتی ہے،
تیرے بدن کی جدائی بہت ستاتی ہے،

بےلگام
07-17-2012, 04:08 AM
دکھ کی یادیں سکھ کی باتیں،
کھارا پانی کھاری مٹی،

بےلگام
07-17-2012, 04:08 AM
تیرے دعوے میرے وعدے،
! ہوگئے باری باری مٹی

بےلگام
07-17-2012, 04:09 AM
سلسلے توڑ گیا وہ سبھی جاتے جاتے،
ورنہ اتنے تو مراسم تھے کے آتے جاتے

بےلگام
07-17-2012, 04:09 AM
اک سانپ میرے تن سے لپٹا ہے محبّت سے،
مجبور ہے پر اپنی زہریلی طبیعت سے

بےلگام
07-17-2012, 04:09 AM
میں سہوں کرب ے زندگی کب تک،
رہے آخر تیری کمی کب تک

بےلگام
07-17-2012, 04:09 AM
جاؤ قرار ے بے دلاں ، شام بخیر شب بخیر،
صحن ہوا دھواں دھواں، شام بخیر شب بخیر

بےلگام
07-17-2012, 04:10 AM
ہو گئی دیر جاؤ تم، مجھکو گلے لگاو تم،
تو میری جاں ہے میری جاں، شام بخیر شب بخیر،

بےلگام
07-17-2012, 04:10 AM
اے میرے موج کی امنگ، میرے شباب کی ترنگ،
!تجھ پہ شفق کا سائباں، شام بخیر شب بخیر

بےلگام
07-17-2012, 04:10 AM
خود اپنے آپ کو پرکھا تو یہ ندامت ہے،
!کہ اب اسے کبھی الزام ے بیوفائی نا دوں

بےلگام
07-17-2012, 04:11 AM
پہلی بات ہی آخری تھی
اس سے آگے بڑھی نہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:11 AM
ڈری ہوئی کوئی بیل تھی جیسے
پورے گھر پہ چڑھی نہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:11 AM
ڈر ہی کیا تھا کہہ دینے میں
کھل کر بات جو دل میں تھی

بےلگام
07-17-2012, 04:11 AM
آس پاس کوئی اور نہیں تھا
شام تھی نئی محبت کی

بےلگام
07-17-2012, 04:11 AM
ایک جھجک سی ساتھ رہی کیوں
قرب کی ساعتِ حیراں میں

بےلگام
07-17-2012, 04:12 AM
حد سے آگے بڑھنے کی
پھیل کے اس تک جانے کی
...........اس کے گھر پر چڑھنے کی

بےلگام
07-17-2012, 04:12 AM
ہے عجیب رنگ کی داستاں، گئی پل کا تو کئی پل کا میں
سو ہیں اب کہاں؟ مگر اب کہاں، گئی پل کا تو گئی پل کا میں

بےلگام
07-17-2012, 04:12 AM
نہ یقیں ہیں اب، نہ گماں ہیں اب، سو کہاں تھے جب سو کہاں ہیں اب
وہ یقیں، یقیں، وہ گماں گماں،گئی پل کا تو گئی پل کا میں

بےلگام
07-17-2012, 04:13 AM
میری جاں وہ پل جو گئی نکل کوئی پل تھی وہ کہ ازل ازل
سو گزشتگی میں ہیں بے کراں، گئی پل کا تو گئی پل کا میں

بےلگام
07-17-2012, 04:13 AM
وہی کارواں ہے کہ ہے رواں وہی وصل و فصل ہیں درمیاں
ہیں غبار ۔ رفتہ کارواں، گئی پل کا تو گئی پل کا میں

بےلگام
07-17-2012, 04:13 AM
تو میرے بدن سے جھلک بھی لے میں تیرے بدن سے مہک بھی لوں
ہمہ نارسائی ہیں جان ِ جاں، گئی پل کا تو گئی پل کا میں

بےلگام
07-17-2012, 04:13 AM
گلہ ِ فراق تو کیوں بھلا طلب ِ وصال تو کیا بھلا
کسی آگ کا تھے بس ایک دھواں ، گئی پل کا تو گئی پل کا میں

بےلگام
07-17-2012, 04:14 AM
ہم شہروں شہروں گھومے ہیں
ہم بستی بستی ہو آۓ
ہم گلیاں غرفے جھانک چکے
ہم ایک اک موڑ پہ رکتے ہوۓ

بےلگام
07-17-2012, 04:15 AM
اس لڑکی تک تو آ پہنچے
رنگت کی وہ اجلی تھی
اس اجلی رنگت والی کو
ہم تن من اپنا ہار چکے

بےلگام
07-17-2012, 04:15 AM
ہم دل تک اس کے ہو آۓ
اس لڑکی کے من کی
چوکھٹ خالی خالی تھی

بےلگام
07-17-2012, 04:15 AM
اس خالی چوکھٹ کے اندر
ہم صورت اپنی ٹانک آۓ
ہم مورت اپنی ٹانک آۓ

بےلگام
07-17-2012, 04:15 AM
جب صبح کو ہاتھ منہ دھوتے میں
بالوں میں کنگی ہوتے میں
اس لڑکی کو معلوم ہوا

بےلگام
07-17-2012, 04:16 AM
چت چور کہیں سے آیا تھا
چوکھٹ میں مورت ٹانک گیا

بےلگام
07-17-2012, 04:16 AM
پہلے تو حیران آنکھوں سے
تصویر کو تکتے تکتے میں
مسحور ہوئی، مسرور ہوئی

بےلگام
07-17-2012, 04:16 AM
پھر ہاتھ بڑھا کر لڑکی نے
تصویر نکالی چوکھٹ سے
تصویر کے ٹکڑے چار ہوۓ

بےلگام
07-17-2012, 04:16 AM
چت چور تو آخر چور ہی تھا
وہ گوند کہیں سے لے آیا
اور رات کے اک سناٹے میں
اس لڑکی تک وہ جا پہنچا

بےلگام
07-17-2012, 04:17 AM
اور گوند لگا کے ٹکڑوں کو
پھر چوکھٹ میں چپکا آیا
وہ لڑکی الہڑ لڑکی تھی

بےلگام
07-17-2012, 04:17 AM
مورت کی قیمت کیا جانے
صورت کی قیمت کیا جانے
تصویر کو اس نے نوچ لیا

بےلگام
07-17-2012, 04:17 AM
اور ڈالا اس کو چولہے میں
تصویر تو جل کر راکھ ہوئی
چت چور بھی آخر انسان تھا

بےلگام
07-17-2012, 04:18 AM
اور انسان بھی اور شاعر بھی
وہ راکھ اکٹھی کر لایا
اور بھرا اس کو دامن میں
لڑکی کے در پہ جا پہنچا

بےلگام
07-17-2012, 04:18 AM
لڑکی کے دل تک جا پہنچا
سردی کی ٹھنڈی راتوں میں
جب ساری دنیا سوتی ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:18 AM
وہ لڑکی باہر باغیچے میں
سوچوں میں ڈوبی بیٹھی تھی
تصویر جلا کے وہ لڑکی
کچھہ حیران تھی، کچھ نادم تھی

بےلگام
07-17-2012, 04:18 AM
پھر اک دن صبح سویرے ہی
شاعر کے در پہ جا پہنچی
اور بولی اپنے شاعر سے
تصویر نہیں تو غم نہ کر
اس چوکھٹ میں تم سج جاؤ

بےلگام
07-17-2012, 04:18 AM
اس دل میں میر آ بیٹھو
اس اصلی صورت کے ہوتے
میں نقلی تصویر نہ لوں گی

بےلگام
07-17-2012, 04:19 AM
جگہ جی لگانے کی دنیا نہیں ہے
یہ عبرت کی جا ہے تماشہ نہیں ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:19 AM
تجھے پہلے بچپن میں برسوں کھلایا
جوانی نے پھر تجھ کو مجنوں بنایا

بےلگام
07-17-2012, 04:20 AM
بڑھاپے نے پھر آ کے کیا کیا ستایا
اجل تیرا کر دے گی بالکل صفایا

بےلگام
07-17-2012, 04:20 AM
جگہ جی لگانے کی دنیا نہیں ہے
یہ عبرت کی جا ہے تماشہ نہیں ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:21 AM
جہاں میں ہیں عبرت کے ہر سُو نمونے
مگر تجھ کو اندھا کیا رنگ و بُو نے
کبھی غور سے بھی دیکھا ہے تو نے
جو معمور تھے وہ محل اب ہیں سُونے

بےلگام
07-17-2012, 04:22 AM
ملے خاک میں اہلِ شاں کیسے کیسے
مکیں ہو گٔیٔے لا مکاں کیسے کیسے
ھؤے ناموَر بے نشاں کیسے کیسے
زمیں کھا گٔیٔ آسماں کیسے کیسے

بےلگام
07-17-2012, 04:22 AM
اجل نے نہ کسریٰ ہی چھوڑا نہ دارا
اسی سے سکندرسا فاتح بھی ہارا
ہر ایک چھوڑ کے کیاکیا حسرت سدھارا
پڑا رہ گیا سب یہیں ٹھاٹ سارا

بےلگام
07-17-2012, 04:22 AM
یہی تجھ کو دھُن ہے رہُوں سب سے بالا
ہو زینت نرالی ہو فیشن نرالا
جیا کرتا ہے کیا یونہی مرنے والا؟
تجھے حسنِ ظاہر نے دھوکے میں ڈالا

بےلگام
07-17-2012, 04:22 AM
کؤی تیری غفلت کی ہے انتہا بھی؟
جنون چھوڑ کر اب ہوش میں آ بھی
جگہ جی لگانے کی دنیا نہیں ہے
یہ عبرت کی جا ہے تماشہ نہیں ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:23 AM
یہ لالہ و گل یہ صحن و روش ہونے دو جو ویراں ہوتے ہیں
تخریبِ جنوں کے پردے میں تعمیرِ گلستاں ہوتے ہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:23 AM
باطل کی ہو کتنی ہی طاقت، باطل کی اطاعت کیا معنی؟
ایماں پہ فدا ہو جاتے ہیں، جو صاحبِ ایماں ہوتے ہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:23 AM
آسودۂ ساحل تو ہے مگر، شاید یہ تجھے معلوم نہیں
ساحل سے بھی طوفاں اٹھتے ہیں، خاموش بھی طوفاں ہوتے ہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:24 AM
یہ خون ہے جو مظلوموں کا ضائع تو نہ جائے گا لیکن
... کتنے وہ مبارک قطرے ہیں جو صرفِ بہاراں ہوتے ہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:24 AM
جانبازِ محبت جو ہیں جگرؔ مرنے سے نہیں ڈرتے ہرگز
جب وقتِ شہادت آتا ہے دل سینوں میں رقصاں ہوتے ہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:24 AM
باندھ لیں ہاتھ پہ، سینے پہ سجا لیں تم کو
جی میں آتا ہے تعویز بنا لیں تم کو

بےلگام
07-17-2012, 04:24 AM
پھر تمہیں روز سنواریں ، تمہیں بڑھتا دیکھیں
کیوں نہ آنگن میں چمبیلی سے لگا لیں تم کو

بےلگام
07-17-2012, 04:25 AM
کبھی خوابوں کیطرح آنکھ کے پردے میں رھو
کبھی خواہش کیطرح دل میں بلا لیں تم کو

بےلگام
07-17-2012, 04:25 AM
جس طرح رات کے سینے میں ہے مہتاب کا نور
اپنے تاریک مکانوں میں سجا لیں تم کو

بےلگام
07-17-2012, 04:25 AM
کیا عجب خواہشیں اٹھتی ہیں ہمارے دل میں
کر کے منا سا ہواوں میں اچھالیں تم کو

بےلگام
07-17-2012, 04:25 AM
اس قدر ٹوٹ کے تم پہ ہمیں پیار آتا ہے
اپنی بانہوں میں بھریں مار ہی ڈالیں تم کو

بےلگام
07-17-2012, 04:26 AM
کبھی ہم نے بھی تصور میں محبت کا تاج محل بنایا تھا
اس میں اپنی جان کی طرح تجھے بسایا تھا

بےلگام
07-17-2012, 04:27 AM
اب وہ تاج محل مسمار ہو گیا ہے
دور مجھ سے میرا یار ہو گیا ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:27 AM
اب آنکھوں میں اشکوں کی برساتیں ہیں
تیری محبت کی یہ سوغاتیں ہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:27 AM
دامن میں کچھ پیار بھری یادیں ہیں
یاد وہ فون پہ کی ہوئی باتیں ہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:28 AM
میرے دل میں تیرے پیار کی بڑی قدر ہے
مگر محبت کا یہی مقدر ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:28 AM
جنہیں ہم دل کی گہرائیوں سے چاہتے ہیں
پھر حالات کے ہاتھوں مجبور ہو کر انہیں بھول جاتے ہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:28 AM
میرا خیال کبھی دل میں نہ لانا زندگی کو روگ نہ بنانا
ہو سکے تو اک سپنا سمجھ کر مجھے بھول جانا

بےلگام
07-17-2012, 04:28 AM
میرا کیا ہے تیری جدائی کے آنسو سدا پیتا رہوں گا
تیری جدائی میں مر مر کے جیتا رہوں گا

بےلگام
07-17-2012, 04:29 AM
آنسووں کو بہت سمجھایا تنہایوں میں آیا کروبھری محفل میں ھمارا
مذاق مت اڑایا کرو

اس پر آنسو تڑپ کر بولے
بھری محفل میں بھی آپ کو تنہا پاتے ھیں
اس لیے آپ کے پاس دوڑے چلے آتے ھیں

بےلگام
07-17-2012, 04:30 AM
محبّت میں اگر کوئی جھوٹ بولے تو
محبّت روٹھہ جاتی ہے
محبّت ٹوٹ جاتی ہے
محبّت میں اداکاری نہیں چلتی
محبّت میں ریا کاری نہیں چلتی
محبّت سچّے جذبوں سے بنا انمول موتی ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:30 AM
محبّت زندگی میں فقط اک بار ہوتی ہے
محبّت کانچ کی مانند
محبّت آنچ کی مانند
کہ جوں جوں وقت گزرے تو
یہ ہر پل تیز ہوتی ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:31 AM
سلگتی آگ کی مانند
محبّت راگ کی مانند
کہ اس کے سننے والوں پر
عجب مدہوشی چھاتی ہے
محبّت جھلملاتی ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:31 AM
چمکتے چاند کی مانند
محبّت ایک مورت ہے
محبّت خوبصورت ہے
یہ مورت سب کو بھاتی ہے
کئی سجدے کراتی ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:31 AM
محبّت ریل کی مانند
کہ انجانے مسافر اس کی ہر پل
راہ تکتے ہیں
یہ بس اک بار آتی ہے
اگر یہ چھوٹ جائے تو
مسافر سوگ کرتے ہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:31 AM
مسافر روگ کرتے ہیں
محبّت جوگ کی مانند
جسے اک بار لگ جائے
وہ سب کچھہ بھول جاتا ہے
محبّت دیوار سے لپٹی اک بیل کی مانند
جو سدا بڑھتی ہی جاتی ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:31 AM
محبّت خوشبو کی مانند
جو ہر سو پھیل جاتی ہے
محبّت گنگناتی ہے
سُریلے گیت کے مانند
کسی کے نرم ہونٹوں سے
یہ جب لفظوں کی صورت میں نکلتی ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:32 AM
تمنّا پھر مچلتی ہے
محبّت راکھہ ہوتی ہے
محبّت پاک ہوتی ہے
محبّت معصوم سا سچ ہے
کہ اس کو بولنے سے روح میں
پاکیزگی سی لوٹ آتی ہے
تبھی تو! محبّت میں اگر کوئی جھوٹ بولے تو
!!!!محبّت روٹھہ جاتی ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:33 AM
چند اشکوں سے بنایا ھے یہ حسیں تاج محل
تیری یادوں کے سہارے تیری یادوں کی قسم

بےلگام
07-17-2012, 04:34 AM
ہم چاہتوں کو رسوا نہیں کرتے
اپنی محبتوں*کا سودا نہیں کرتے

بےلگام
07-17-2012, 04:34 AM
گر تُو ملے نہ ملے ہم کو
تیرے ملنے کا شکوہ نہیں کرتے

بےلگام
07-17-2012, 04:34 AM
تیری بے وفائی کا دُکھ نہیں*
تیری رُسوائی کا سامان نہیں*کرتے

بےلگام
07-17-2012, 04:34 AM
تیرے بنا جیا ہے تیرے بنا جیے گے
محبت میں*ہم جیسے لوگ مرا نہیں*کرتے

بےلگام
07-17-2012, 04:34 AM
ان زمانے والوں سے کہہ دے اے مظفر
اب ہم بھی تیری تمنا کیا نہیں*کرتے

بےلگام
07-17-2012, 04:35 AM
اے محبت !
تیری قسمت کہ تجھے مفت ملے ہم سے دانا
جو کمالات کیا کرتے تھے،خشک مٹی کو امارات کیا کرتے تھے

بےلگام
07-17-2012, 04:36 AM
!اے محبت
یہ تیرا بخت کہ بن مول ملے ہم سے انمول
جو ہیروں میں تلا کرتے تھے
ہم سے منہ زور ، جو بھونچال اٹھارکھتے تھے

بےلگام
07-17-2012, 04:36 AM
اے محبت میری
ہم تیرے مجرم ٹھہرے ، ہم جیسے جو لوگوں سے سوالات کیا کرتے تھے
ہم جو سو باتوں کی ایک بات کیا کرتے تھے
تیری تحویل میں آنے سے ذرا پہلے تک
ہم بھی اس شہر میں عزت سے رہا کرتے تھے
ہم بگڑتے تو کئی کام بنا کرتے تھے

بےلگام
07-17-2012, 04:36 AM
! اور
اب تیری سخاوت کے گھنےسائے میں
خلقت شہر کو ہم زندہ تماشا ٹھہرے
جتنے الزام تھے
مقصوم ہمارا ٹھہرے

بےلگام
07-17-2012, 04:36 AM
اے محبت
ذرا انداز بدل لے اپنا
تجھہ کو آئندہ بھی عشاق کا خون پینا ہے
ہم تو مر جائیں گے ، تجھہ کو مگر جینا ہے

اے محبت !
تیری قسمت کہ تجھے مفت ملے ہم سے انمول
ہم سے دانا۔۔۔۔۔

بےلگام
07-17-2012, 04:37 AM
http://www.itdunya.com/attachments/82244d1239364526-humtuorazihainwojishalmayjaisarekha.gif

بےلگام
07-17-2012, 04:38 AM
کس طرح ختم کریں اُن سے اپنا رشتہ
جن کو صرف دیکھتے ہیں تو ساری دینا کو بھول جاتے ہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:41 AM
کسی میں ہمت ہے ہماری پرواز میں لائے کوتاہی
ہم پروؤں سے نہیں حوصلوں سے اُڑا کرتے ہیں

بےلگام
07-17-2012, 04:42 AM
عجیب شخص ہے خود فاصلے بچھاتا ہے
جو تھک کے بیٹھوں تو منزل قریب لاتا ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:42 AM
عجب اندھیرے اجالے کا باندھتا ہے سماں
وہ ایک شمع جلاتا ہے اِک بجھاتا ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:43 AM
تماشا دیکھے کوئی، اس کی غمگساری کا
سنا کے دوسروں کے دکھ، مجھے رلاتا ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:43 AM
سماعتوں کے در و بام سجنے لگتے ہیں
وہ بولتا نہیں ، تصویر سی بناتا ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:44 AM
وہی تو ہے، پسِ منظر بھی پیشِ منظر بھی
وہ سارے منظروں کو معتبر بناتا ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:44 AM
قریب آئے تو کہیے بھی، کیا ہے، کیسا ہے
ابھی جو دور ستارہ سا جگمگاتا ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:44 AM
کسی کے کوزے میں سمٹے ملیں سمندر سات
کوئی سراب ہی سے تشنگی مٹاتا ہے

بےلگام
07-17-2012, 04:45 AM
میں گزرے وقت کی تصویر ساتھ رکھتا ہوں
کہ اپنا چہرہ مجھے بھول بھول جاتا ہے

بےلگام
07-18-2012, 05:55 AM
کیوں زیاں کار بنوں ، سود فراموش رہوں
فکر فردا نہ کروں محو غم دوش رہوں

بےلگام
07-18-2012, 05:56 AM
نالے بلبل کے سنوں اور ہمہ تن گوش رہوں
ہم نوا میں بھی کوئی گل ہوں کہ خاموش رہوں

بےلگام
07-18-2012, 05:56 AM
جرأت آموز مری تاب سخن ہے مجھ کو
شکوہ اللہ سے ، خاکم بدہن ، ہے مجھ کو

بےلگام
07-18-2012, 05:56 AM
ہے بجا شیوۂ تسلیم میں مشہور ہیں ہم
قصۂ درد سناتے ہیں کہ مجبور ہیں ہم

بےلگام
07-18-2012, 05:59 AM
ساز خاموش ہیں ، فریاد سے معمور ہیں ہم
نالہ آتا ہے اگر لب پہ تو معذور ہیں ہم

بےلگام
07-18-2012, 05:59 AM
اے خدا! شکوۂ ارباب وفا بھی سن لے
خوگر حمد سے تھوڑا سا گلا بھی سن لے

بےلگام
07-18-2012, 06:00 AM
تھی تو موجود ازل سے ہی تری ذات قدیم
پھول تھا زیب چمن پر نہ پریشاں تھی شمیم

بےلگام
07-18-2012, 06:00 AM
شرط انصاف ہے اے صاحب الطاف عمیم
بوئے گل پھیلتی کس طرح جو ہوتی نہ نسیم

بےلگام
07-18-2012, 06:01 AM
ہم کو جمعیت خاطر یہ پریشانی تھی
ورنہ امت ترے محبوب کی دیوانی تھی؟

بےلگام
07-18-2012, 06:03 AM
ہم سے پہلے تھا عجب تیرے جہاں کا منظر
کہیں مسجود تھے پتھر ، کہیں معبود شجر

بےلگام
07-18-2012, 06:04 AM
خوگر پیکر محسوس تھی انساں کی نظر
مانتا پھر کوئی ان دیکھے خدا کو کیونکر

بےلگام
07-18-2012, 06:04 AM
تجھ کو معلوم ہے ، لیتا تھا کوئی نام ترا؟
قوت بازوئے مسلم نے کیا کام ترا

بےلگام
07-18-2012, 06:04 AM
بس رہے تھے یہیں سلجوق بھی، تورانی بھی
اہل چیں چین میں ، ایران میں ساسانی بھی

بےلگام
07-18-2012, 06:05 AM
اسی معمورے میں آباد تھے یونانی بھی
اسی دنیا میں یہودی بھی تھے ، نصرانی بھی

بےلگام
07-18-2012, 06:05 AM
پر ترے نام پہ تلوار اٹھائی کس نے
بات جو بگڑی ہوئی تھی ، وہ بنائی کس نے

بےلگام
07-18-2012, 06:05 AM
تھے ہمیں ایک ترے معرکہ آراؤں میں
خشکیوں میں کبھی لڑتے ، کبھی دریاؤں میں

بےلگام
07-18-2012, 06:06 AM
دیں اذانیں کبھی یورپ کے کلیساؤں میں
کبھی افریقہ کے تپتے ہوئے صحراؤں میں

بےلگام
07-18-2012, 06:06 AM
شان آنکھوں میں نہ جچتی تھی جہاں داروں کی
کلمہ جب پڑھتے تھے ہم چھاؤں میں تلواروں کی

بےلگام
07-18-2012, 06:07 AM
ہم جو جیتے تھے تو جنگوں کے مصیبت کے لیے
اور مرتے تھے ترے نام کی عظمت کے لیے

بےلگام
07-18-2012, 06:08 AM
تھی نہ کچھ تیغ زنی اپنی حکومت کے لیے
سربکف پھرتے تھے کیا دہر میں دولت کے لیے؟

بےلگام
07-18-2012, 06:08 AM
قوم اپنی جو زر و مال جہاں پر مرتی
بت فروشی کے عوض بت شکنی کیوں کرتی!

بےلگام
07-18-2012, 06:09 AM
ٹل نہ سکتے تھے اگر جنگ میں اڑ جاتے تھے
پاؤں شیروں کے بھی میداں سے اکھڑ جاتے تھے

بےلگام
07-18-2012, 06:10 AM
تجھ سے سرکش ہوا کوئی تو بگڑ جاتے تھے
تیغ کیا چیز ہے ، ہم توپ سے لڑ جاتے تھے

بےلگام
07-18-2012, 06:11 AM
نقش توحید کا ہر دل پہ بٹھایا ہم نے
زیر خنجر بھی یہ پیغام سنایا ہم نے

بےلگام
07-18-2012, 06:11 AM
تو ہی کہہ دے کہ اکھاڑا در خیبر کس نے
شہر قیصر کا جو تھا ، اس کو کیا سر کس نے

بےلگام
07-18-2012, 06:12 AM
توڑے مخلوق خداوندوں کے پیکر کس نے
کاٹ کر رکھ دیے کفار کے لشکر کس نے

بےلگام
07-18-2012, 06:12 AM
کس نے ٹھنڈا کیا آتشکدۂ ایراں کو؟
کس نے پھر زندہ کیا تذکرۂ یزداں کو؟

بےلگام
07-18-2012, 06:15 AM
کون سی قوم فقط تیری طلب گار ہوئی
اور تیرے لیے زحمت کش پیکار ہوئی

بےلگام
07-18-2012, 06:15 AM
کس کی شمشیر جہاں گیر ، جہاں دار ہوئی
کس کی تکبیر سے دنیا تری بیدار ہوئی

بےلگام
07-18-2012, 06:16 AM
کس کی ہیبت سے صنم سہمے ہوئے رہتے تھے
منہ کے بل گر کے ‘ھو اللہ احد’ کہتے تھے

بےلگام
07-18-2012, 06:16 AM
آ گیا عین لڑائی میں اگر وقت نماز
قبلہ رو ہو کے زمیں بوس ہوئی قوم حجاز

بےلگام
07-18-2012, 06:18 AM
ایک ہی صف میں کھڑے ہو گئے محمود و ایاز
نہ کوئی بندہ رہا اور نہ کوئی بندہ نواز

بےلگام
07-18-2012, 06:19 AM
بندہ و صاحب و محتاج و غنی ایک ہوئے
تیری سرکار میں پہنچے تو سبھی ایک ہوئے

بےلگام
07-18-2012, 06:19 AM
محفل کون و مکاں میں سحر و شام پھرے
مے توحید کو لے کر صفت جام پھرے

بےلگام
07-18-2012, 06:21 AM
کوہ میں ، دشت میں لے کر ترا پیغام پھرے
اور معلوم ہے تجھ کو ، کبھی ناکام پھرے!

بےلگام
07-18-2012, 06:22 AM
دشت تو دشت ہیں ، دریا بھی نہ چھوڑے ہم نے
بحر ظلمات میں دوڑا دیے گھوڑے ہم نے

بےلگام
07-18-2012, 06:22 AM
صفحۂ دہر سے باطل کو مٹایا ہم نے
نوع انساں کو غلامی سے چھڑایا ہم نے

بےلگام
07-18-2012, 06:22 AM
تیرے کعبے کو جبینوں سے بسایا ہم نے
تیرے قرآن کو سینوں سے لگایا ہم نے

بےلگام
07-18-2012, 06:25 AM
پھر بھی ہم سے یہ گلہ ہے کہ وفادار نہیں
ہم وفادار نہیں ، تو بھی تو دلدار نہیں!

بےلگام
07-18-2012, 06:25 AM
امتیں اور بھی ہیں ، ان میں گنہ گار بھی ہیں
عجز والے بھی ہیں ، مست مۓ پندار بھی ہیں

بےلگام
07-18-2012, 06:26 AM
ان میں کاہل بھی ہیں، غافل بھی ہیں، ہشیار بھی ہیں
سینکڑوں ہیں کہ ترے نام سے بیزار بھی ہیں

بےلگام
07-18-2012, 06:27 AM
رحمتیں ہیں تری اغیار کے کاشانوں پر
برق گرتی ہے تو بیچارے مسلمانوں پر

بےلگام
07-18-2012, 06:27 AM
بت صنم خانوں میں کہتے ہیں ، مسلمان گئے
ہے خوشی ان کو کہ کعبے کے نگہبان گئے

بےلگام
07-18-2012, 06:27 AM
منزل دہر سے اونٹوں کے حدی خوان گئے
اپنی بغلوں میں دبائے ہوئے قرآن گئے

بےلگام
07-18-2012, 06:27 AM
خندہ زن کفر ہے ، احساس تجھے ہے کہ نہیں
اپنی توحید کا کچھ پاس تجھے ہے کہ نہیں

بےلگام
07-18-2012, 06:28 AM
یہ شکایت نہیں ، ہیں ان کے خزانے معمور
نہیں محفل میں جنھیں بات بھی کرنے کا شعور

بےلگام
07-18-2012, 06:29 AM
قہر تو یہ ہے کہ کافر کو ملیں حور و قصور
اور بیچارے مسلماں کو فقط وعدۂ حور

بےلگام
07-18-2012, 06:29 AM
اب وہ الطاف نہیں ، ہم پہ عنایات نہیں
بات یہ کیا ہے کہ پہلی سی مدارات نہیں

بےلگام
07-18-2012, 06:30 AM
کیوں مسلمانوں میں ہے دولت دنیا نایاب
تیری قدرت تو ہے وہ جس کی نہ حد ہے نہ حساب

بےلگام
07-18-2012, 06:30 AM
تو جو چاہے تو اٹھے سینۂ صحرا سے حباب
رہرو دشت ہو سیلی زدۂ موج سراب

بےلگام
07-18-2012, 06:30 AM
طعن اغیار ہے ، رسوائی ہے ، ناداری ہے
کیا ترے نام پہ مرنے کا عوض خواری ہے؟

بےلگام
07-18-2012, 06:30 AM
بنی اغیار کی اب چاہنے والی دنیا
رہ گئی اپنے لیے ایک خیالی دنیا

بےلگام
07-18-2012, 06:31 AM
ہم تو رخصت ہوئے ، اوروں نے سنبھالی دنیا
پھر نہ کہنا ہوئی توحید سے خالی دنیا

بےلگام
07-18-2012, 06:31 AM
ہم تو جیتے ہیں کہ دنیا میں ترا نام رہے
کہیں ممکن ہے کہ ساقی نہ رہے ، جام رہے!

بےلگام
07-18-2012, 06:31 AM
تیری محفل بھی گئی ، چاہنے والے بھی گئے
شب کے آہیں بھی گئیں ، صبح کے نالے بھی گئے

بےلگام
07-18-2012, 06:32 AM
دل تجھے دے بھی گئے ، اپنا صلا لے بھی گئے
آ کے بیٹھے بھی نہ تھے اور نکالے بھی گئے

بےلگام
07-18-2012, 06:32 AM
آئے عشاق ، گئے وعدۂ فردا لے کر
اب انھیں ڈھونڈ چراغ رخ زیبا لے کر

بےلگام
07-18-2012, 06:32 AM
درد لیلی بھی وہی ، قیس کا پہلو بھی وہی
نجد کے دشت و جبل میں رم آہو بھی وہی

بےلگام
07-18-2012, 06:33 AM
عشق کا دل بھی وہی ، حسن کا جادو بھی وہی
امت احمد مرسل بھی وہی ، تو بھی وہی

بےلگام
07-18-2012, 06:35 AM
پھر یہ آزردگی غیر سبب کیا معنی
اپنے شیداؤں پہ یہ چشم غضب کیا معنی

بےلگام
07-18-2012, 06:35 AM
تجھ کو چھوڑا کہ رسول عربی کو چھوڑا؟
بت گری پیشہ کیا ، بت شکنی کو چھوڑا؟

بےلگام
07-18-2012, 06:35 AM
عشق کو ، عشق کی آشفتہ سری کو چھوڑا؟
رسم سلمان و اویس قرنی کو چھوڑا؟

بےلگام
07-18-2012, 06:36 AM
آگ تکبیر کی سینوں میں دبی رکھتے ہیں
زندگی مثل بلال حبشی رکھتے ہیں

بےلگام
07-18-2012, 06:36 AM
عشق کی خیر وہ پہلی سی ادا بھی نہ سہی
جادہ پیمائی تسلیم و رضا بھی نہ سہی

بےلگام
07-18-2012, 06:36 AM
مضطرب دل صفت قبلہ نما بھی نہ سہی
اور پابندی آئین وفا بھی نہ سہی

بےلگام
07-18-2012, 06:37 AM
کبھی ہم سے ، کبھی غیروں سے شناسائی ہے
بات کہنے کی نہیں ، تو بھی تو ہرجائی ہے !

بےلگام
07-18-2012, 06:37 AM
سر فاراں پہ کیا دین کو کامل تو نے
اک اشارے میں ہزاروں کے لیے دل تو نے

بےلگام
07-18-2012, 06:37 AM
آتش اندوز کیا عشق کا حاصل تو نے
پھونک دی گرمی رخسار سے محفل تو نے

بےلگام
07-18-2012, 06:38 AM
آج کیوں سینے ہمارے شرر آباد نہیں
ہم وہی سوختہ ساماں ہیں ، تجھے یاد نہیں

بےلگام
07-18-2012, 06:38 AM
وادی نجد میں وہ شور سلاسل نہ رہا
قیس دیوانۂ نظارۂ محمل نہ رہا

بےلگام
07-18-2012, 06:40 AM
حوصلے وہ نہ رہے ، ہم نہ رہے ، دل نہ رہا
گھر یہ اجڑا ہے کہ تو رونق محفل نہ رہا

بےلگام
07-18-2012, 06:40 AM
اے خوش آں روز کہ آئی و بصد ناز آئی
بے حجابانہ سوئے محفل ما باز آئی

بےلگام
07-18-2012, 06:41 AM
بادہ کش غیر ہیں گلشن میں لب جو بیٹھے
سنتے ہیں جام بکف نغمۂ کو کو بیٹھے

بےلگام
07-18-2012, 06:41 AM
دور ہنگامۂ گلزار سے یک سو بیٹھے
تیرے دیوانے بھی ہیں منتظر ‘ھو’ بیٹھے

بےلگام
07-18-2012, 06:41 AM
اپنے پروانوں کو پھر ذوق خود افروزی دے
برق دیرینہ کو فرمان جگر سوزی دے

بےلگام
07-18-2012, 06:42 AM
قوم آوارہ عناں تاب ہے پھر سوئے حجاز
لے اڑا بلبل بے پر کو مذاق پرواز

بےلگام
07-18-2012, 06:43 AM
مضطرب باغ کے ہر غنچے میں ہے بوئے نیاز
تو ذرا چھیڑ تو دے، تشنۂ مضراب ہے ساز

بےلگام
07-18-2012, 06:43 AM
نغمے بے تاب ہیں تاروں سے نکلنے کے لیے
طور مضطر ہے اسی آگ میں جلنے کے لیے

بےلگام
07-18-2012, 06:43 AM
مشکلیں امت مرحوم کی آساں کر دے
مور بے مایہ کو ہمدوش سلیماں کر دے

بےلگام
07-18-2012, 06:43 AM
جنس نایاب محبت کو پھر ارزاں کر دے
ہند کے دیر نشینوں کو مسلماں کر دے

بےلگام
07-18-2012, 06:44 AM
جوئے خوں می چکد از حسرت دیرینۂ ما
می تپد نالہ بہ نشتر کدۂ سینۂ ما

بےلگام
07-18-2012, 06:44 AM
بوئے گل لے گئی بیرون چمن راز چمن
کیا قیامت ہے کہ خود پھول ہیں غماز چمن !

بےلگام
07-18-2012, 06:45 AM
عہد گل ختم ہوا ٹوٹ گیا ساز چمن
اڑ گئے ڈالیوں سے زمزمہ پرواز چمن

بےلگام
07-18-2012, 06:45 AM
ایک بلبل ہے کہ ہے محو ترنم اب تک
اس کے سینے میں ہے نغموں کا تلاطم اب تک

بےلگام
07-18-2012, 06:47 AM
قمریاں شاخ صنوبر سے گریزاں بھی ہوئیں
پتّیاں پھول کی جھڑ جھڑ کے پریشاں بھی ہوئیں

بےلگام
07-18-2012, 06:48 AM
وہ پرانی روشیں باغ کی ویراں بھی ہوئیں
ڈالیاں پیرہن برگ سے عریاں بھی ہوئیں

بےلگام
07-18-2012, 06:48 AM
قید موسم سے طبیعت رہی آزاد اس کی
کاش گلشن میں سمجھتا کوئی فریاد اس کی!

بےلگام
07-18-2012, 06:49 AM
لطف مرنے میں ہے باقی ، نہ مزا جینے میں
کچھ مزا ہے تو یہی خون جگر پینے میں

بےلگام
07-18-2012, 06:49 AM
کتنے بے تاب ہیں جوہر مرے آئینے میں
کس قدر جلوے تڑپتے ہیں مرے سینے میں

بےلگام
07-18-2012, 06:49 AM
اس گلستاں میں مگر دیکھنے والے ہی نہیں
داغ جو سینے میں رکھتے ہوں ، وہ لالے ہی نہیں

بےلگام
07-18-2012, 06:50 AM
چاک اس بلبل تنہا کی نوا سے دل ہوں
جاگنے والے اسی بانگ درا سے دل ہوں

بےلگام
07-18-2012, 06:50 AM
یعنی پھر زندہ نئے عہد وفا سے دل ہوں
پھر اسی بادۂ دیرینہ کے پیاسے دل ہوں

بےلگام
07-18-2012, 06:51 AM
عجمی خم ہے تو کیا ، مے تو حجازی ہے مری
نغمہ ہندی ہے تو کیا ، لے تو حجازی ہے مری!

بےلگام
07-18-2012, 06:51 AM
جواب ِ شکوہ ‘‘

دل سے جو بات نکلتی ہے اثر رکھتی ہے
پر نہیں ، طاقتِ پرواز مگر رکھتی ہے

بےلگام
07-18-2012, 06:52 AM
قدسی الاصل ہے، رفعت پہ نظر رکھتی ہے
خاک سے اُٹھتی ہے ، گردُوں پہ گذر رکھتی ہے

بےلگام
07-18-2012, 06:52 AM
عشق تھا فتنہ گر و سرکش و چالاک مرا
آسماں چیرگیا نالۂ فریاد مرا

بےلگام
07-18-2012, 06:53 AM
پیر گردُوں نے کہا سُن کے ، کہیں ہے کوئی !
بولے سیارے ، سرِ عرشِ بریں ہے کوئی !

بےلگام
07-18-2012, 06:53 AM
چاند کہتا تھا ، نہیں اہلِ زمیں ہے کوئی !
کہکشاں کہتی تھی پوشیدہ یہیں ہے کوئ

بےلگام
07-18-2012, 06:53 AM
کُچھ جو سمجھا مرے شکوے کو تو رضواں سمجھا
مجھے جنت سے نکالا ہوا انساں سمجھا

بےلگام
07-18-2012, 06:54 AM
تھی فرشتوں کو بھی حیرت کہ یہ آواز ہے کیا !
عرش والوں پہ بھی کھلتا نہیں یہ راز ہے کیا !

بےلگام
07-18-2012, 06:54 AM
تا سرِ عرش بھی انساں کی تگ و تاز ہے کیا ؟
آگئی خاک کی چُٹکی کو بھی پرواز ہے کیا ؟

بےلگام
07-18-2012, 06:55 AM
غافل آداب سے سُکانِ زمیں کیسے ہیں !
شوخ و گُستاخ یہ پستی کے مکیں کیسے ہیں !

بےلگام
07-18-2012, 06:57 AM
اس قدر شوخ کہ اللہ سے بھی برہم ہے
تھا جو مسجودِ ملائک یہ وہی آدم ہے ؟

بےلگام
07-18-2012, 06:57 AM
عالمِ کیف ہے دانائے رموزِکم ہے
ہاں ، مگر عجز کے اسرار سے نا محرم ہے

بےلگام
07-18-2012, 06:57 AM
ناز ہے طاقتِ گُفتار پہ انسانوں کو
بات کرنے کا سلیقہ نہیں نادانوں کو

بےلگام
07-18-2012, 06:58 AM
آئی آواز غم انگیز ہے افسانہ ترا
اشکِ بیتاب سے لبریز ہے پیمانہ ترا

بےلگام
07-18-2012, 06:58 AM
آسماں گیر ہوا نعرۂ مستانہ ترا
کس قدر شوخ زباں ہے دلِ دیوانہ ترا

بےلگام
07-18-2012, 06:59 AM
شکر شکوے کو کیا حُسنِ ادا سے تُو نے
ہم سُخن کر دیا بندوں کو خدا سے تُو نے

بےلگام
07-18-2012, 06:59 AM
ہم تو مائل بہ کرم ہیں کوئی سائل ہی نہیں
راہ دکھلائیں کسے؟ رہروِ منزل ہی نہیں

بےلگام
07-18-2012, 06:59 AM
تربیت عام تو ہے ، جوہرِ قابل ہی نہیں
جس سے تعمیر ہو آدم کی ، یہ وہ گِل ہی نہیں

بےلگام
07-18-2012, 07:00 AM
کوئی قابل ہو تو ہم شان کئی دیتے ہیں
ڈُھونڈنے والوں کو دُنیا بھی نئی دیتے ہیں

بےلگام
07-18-2012, 07:00 AM
ہاتھ بے زور ہیں ، الحاد سے دل خُوگر ہیں
اُمتی باعثِ رسوائی پیغمبر ہیں

بےلگام
07-18-2012, 07:01 AM
بُت شکن اُٹھ گئے ، باقی جو رہے بُت گر ہیں
تھا براہیم پدر اور پسر آذر ہیں

بےلگام
07-18-2012, 07:01 AM
بادہ آشام نئے ، بادہ نیا ، خم بھی نئے
حرمِ کعبہ نیا ، بُت بھی نئے ، تم بھی نئے

بےلگام
07-18-2012, 07:02 AM
وہ بھی دِن تھے کہ یہی مایۂ رعنائی تھا !
نازشِ موسمِ گُل ، لالۂ صحرائی تھا !

بےلگام
07-18-2012, 07:02 AM
جو مُسلمان تھا اللہ کا سَودائی تھا !
کبھی محبُوب تمہارا یہی ہرجائی تھا !

بےلگام
07-18-2012, 07:03 AM
کسی یکجائی سے اَب عہدِ غُلامی کر لو
ملتِ احمدِ مُرسل کو مقامی کر لو

بےلگام
07-18-2012, 07:04 AM
کِس قدر تُم پہ گراں صُبح کی بیداری ہے !
ہم سے کب پیار ہے ؟ ہاں نیند تُمہیں پیاری ہے

بےلگام
07-18-2012, 07:04 AM
طبع آذاد پہ قیدِ رمضاں بھاری ہے
تمہیں کہہ دو یہی آئینِ وفا داری ہے ؟

بےلگام
07-18-2012, 07:05 AM
قوم مذہب سے ہے ، مذہب جو نہیں تم بھی نہیں
جذبِ باہم جو نہیں ، محفلِ انجم بھی نہیں

بےلگام
07-18-2012, 07:05 AM
جن کو آتا نہیں دُنیا میں کوئی فن ، تُم ہو
نہیں جس قوم کو پروائے نشیمن ، تُم ہو

بےلگام
07-18-2012, 07:06 AM
بِجلیاں جِس میں ہوں آسُودہ وہ خرمن ، تُم ہو
بیچ کھاتے ہیں جو اسلاف کے مدفن ، تُم ہو

بےلگام
07-18-2012, 07:06 AM
ہو نکو نام جو قبروں کی تجارت کر کے
کیا نہ بیچو گے جو مل جائیں صنم پتھر کے ؟

بےلگام
07-18-2012, 07:07 AM
صفحۂ دہر سے باطل کو مٹایا کس نے ؟
نوعِ انساں کو غلامی سے چُھڑایا کس نے ؟

بےلگام
07-18-2012, 07:07 AM
میرے کعبے کو جبینوں سے بسایا کس نے ؟
میرے قرآن کو سینوں سے لگایا کس نے ؟

بےلگام
07-18-2012, 07:08 AM
تھے تو آباء وہ تمہارے ہی ، مگر تم کیا ہو ؟
ہاتھ پر ہاتھ دھرے منتظرِ فردا ہو !

بےلگام
07-18-2012, 07:09 AM
کیا گیا ؟ بہرِ مُسلماں ہے فقط وعدۂ حُور
شکوہ بیجا بھی کرے کوئی تو لازم ہے شعور !

بےلگام
07-18-2012, 07:09 AM
عدل ہے فاطرِ ہستی کا اَزل سے دستور
مُسلم آئیں ہوا کافر تو ملے حُور و قصور

بےلگام
07-18-2012, 07:10 AM
تُم میں حُوروں کا کوئی چاہنے والا ہی نہیں
جلوۂ طُور تو موجُود ہے مُوسٰی ہی نہیں

بےلگام
07-18-2012, 07:10 AM
منفعت ایک ہے اِس قوم کی ، نقصان بھی ایک
ایک ہی سب کا نبی ، دین بھی ، ایمان بھی ایک

بےلگام
07-18-2012, 07:11 AM
حرمِ پاک بھی ، اللہ بھی ، قُرآن بھی ایک
کچھ بڑی بات تھی ہوتے جو مُسلمان بھی ایک؟

بےلگام
07-18-2012, 07:12 AM
فرقہ بندی ہے کہیں ، اور کہیں ذاتیں ہیں !
کیا زمانے میں پنپنے کی یہی باتیں ہیں ؟

بےلگام
07-18-2012, 07:19 AM
کون ہے تارک آئینِ رسول مختار؟
مصلحت وقت کی ہے کس کے عمل کا معیار

بےلگام
07-18-2012, 07:19 AM
کس کی آنکھوں میں سمایا ہے شعارِ اغیار؟
ہو گئی کس کی نگہ طرزِ سلف سے بیزار؟

بےلگام
07-18-2012, 07:20 AM
قلب میں سوز نہیں، روح میں احساس نہیں
کچھ بھی پیغام محمد ﷺ کا تمہیں پاس نہیں

بےلگام
07-18-2012, 07:20 AM
جا کے ہوتے ہیں مساجد میں صف آراء تو غریب
زحمتِ روزہ جو کرتے ہیں گوارا، تو غریب

بےلگام
07-18-2012, 07:21 AM
نام لیتا ہے اگر کوئی ہمارا، تو غریب
پردہ رکھتا ہے اگر کوئی تمہارا، تو غریب

بےلگام
07-18-2012, 07:21 AM
امراء نشۂ دولت میں ہیں غافل ہم سے
زندہ ہے ملت بیضا غربا کے دم سے

بےلگام
07-18-2012, 07:21 AM
واعظ قوم کی وہ پختہ خیالی نہ رہی
برق طبعی نہ رہی، شعلہ مقالی نہ رہی

بےلگام
07-18-2012, 07:22 AM
رہ گئی رسم اذاں، روح ہلالی نہ رہی
فلسفہ رہ گیا، تلقین غزالی نہ رہی

بےلگام
07-18-2012, 07:22 AM
مسجدیں مرثیہ خوان ہیں کہ نمازی نہ رہے
یعنی وہ صاحب اوصاف حجازی نہ رہے

بےلگام
07-18-2012, 07:23 AM
شور ہے، ہو گئے دنیا سے مسلماں نابود
ہم یہ کہتے ہیں کہ تھے بھی کہیں مسلم موجود

بےلگام
07-18-2012, 07:23 AM
وضع میں تم ہو نصاریٰ تو تمدن میں ہنود
یہ مسلماں ہیں! جنہیں دیکھ کے شرمائیں یہود

بےلگام
07-18-2012, 07:24 AM
یوں تو سید بھی ہو، مرزا بھی ہو، افغان بھی ہو
تم سبھی کچھ ہو، بتاؤ تو مسلمان بھی ہو!

بےلگام
07-18-2012, 07:37 AM
دم تقریر تھی مسلم کی صداقت بے باک
عدل اس کا تھا قوی، لوث مراعات سے پاک

بےلگام
07-18-2012, 07:38 AM
شجر فطرت مسلم تھا حیا سے نم ناک
تھا شجاعت میں وہ اک ہستیِ فوق الادراک

بےلگام
07-18-2012, 07:39 AM
خود گدازی نم کیفیت صہبایش بود
خالی از خویش شدن صورت مینایش بود

بےلگام
07-18-2012, 07:39 AM
ہر مسلماں رگِ باطل کے لیے نشتر تھا
اس کے آئینۂ ہستی میں عملِ جوہر تھا

بےلگام
07-18-2012, 07:39 AM
جو بھروسا تھا اسے قوت بازو پر تھا
ہے تمہیں موت کا ڈر، اس کو خدا کا ڈر تھا