PDA

View Full Version : سُن بھی اے نغمہ سنجِ کنجِ چمن اب سماعت کا اعتبار کسے



گلاب خان
08-14-2012, 05:04 PM
سُن بھی اے نغمہ سنجِ کنجِ چمن اب سماعت کا اعتبار کسے
کون سا پیرہن سلامت ہے دیجیے دعوتِ بہار کسے

جل بجھیں دردِ ہجر کی شمعیں گھل چکے نیم سوختہ پیکر
سر میں سودائے خام ہو بھی تو کیا طاقت و تابِ انتظار کسے

نقدِ جاں بھی تو نذر کر آئے اور ہم مفلسوں کے پاس تھا کیا
کون ہے اہلِ دل میں اتنا غنی اس قدر پاس طبعِ یار کسے

کاہشِ ذوق جستجو معلوم داغ ہے دل چراغ ہیں آنکھیں
ماتمِ شہرِ آرزو کیجیے فرصتِ نغمہءقرار کسے

کون دارائے ملکِ عشق ہُوا کس کو جاگیر چشم و زلف ملی
خونِ فرہاد، برسرِ فرہاد“ قصرِ شیریں پہ اختیار کسے”

حاصلِ مشرب مسیحائی سنگِ تحقیر و مرگِ رسوائی
قامت یار ہو کہ رفعتِ دار ان صلیبوں کا اعتبار کسے
(احمد فراز)

نگار
08-15-2012, 02:55 AM
کون دارائے ملکِ عشق ہُوا کس کو جاگیر چشم و زلف ملی
خونِ فرہاد، برسرِ فرہاد“ قصرِ شیریں پہ اختیار کسے”


زبردست جناب بہت شکریہ

بےلگام
08-15-2012, 06:39 AM
بہت خوب کلاب بھائی