PDA

View Full Version : پیغمبر اسلام کیخلاف فلم



تانیہ
09-13-2012, 11:31 PM
پاکستان نے پیغمبر اسلام کے بارے میں امریکہ میں بننے والی ایک متنازعہ فلم کے مناظر انٹرنیٹ پر ریلیز کرنے کی سخت مذمت کی ہے اور اسے مکروہ اور نفرت انگیز عمل قرار دیا ہے۔
دفتر خارجہ کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ گیارہ ستمبر 2001 کے سفاکانہ حملوں کی برسی کے موقع پر اس طرح کے مکروہ عمل سے سماجوں اور مختلف عقائد کے ماننے والے لوگوں کے درمیان نفرت، اختلاف اور دشمنی کو ہوا دیتے ہیں۔
ترجمان نے کہا ہے کہ اس عمل سے پاکستان کے لوگوں اور دنیا بھر میں مسلمانوں کے جذبات بری طرح مجروح ہوئے ہیں۔
بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ پاکستان بین العقائد ہم آہنگی کا زبردست حامی ہے اور ہر قسم کی شدت پسندی کی بہرصورت مخالفت کی جانی چاہیے۔
پاکستان نے لیبیا میں اسی متنازعہ فلم کے خلاف پرتشدد احتجاج کے دوران مشتعل ہجوم کے حملے میں امریکی سفیر سمیت چار سفارتی اہلکاروں کی ہلاکت کی بھی سخت مذمت کی ہے۔
دوسری طرف امریکی خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق پیغمبر اسلام کے بارے میں متنازعہ فلم بنانے والے اسرائیلی نژاد امریکی روپوش ہوگئے ہیں۔
اے پی کے مطابق سیم باسل کیلی فورنیا میں پراپرٹی ڈویلپر یعنی بلڈر ہیں اور خود کو اسرائیلی یہودی کے طور پر متعارف کراتے ہیں۔
انہوں نے یہ فلم خود لکھی اور خود ہی اسکی ہدایتکاری کی ہے۔
دو گھنٹے دورانئے کی اس فلم پر پچاس لاکھ امریکی ڈالر لاگت آئی اور یہ پیسے باسل کے مطابق انہوں نے سو سے زیادہ یہودیوں سے جمع کیے۔


bbc urdu (http://www.bbc.co.uk/urdu/pakistan/2012/09/120912_pakistan_condemn_film_tk.shtml)

نگار
09-13-2012, 11:38 PM
فلم بنا کر روپوش ہو گئے ۔ جب امریکہ اسامہ کو کہیں سے بھی نکال باہر کر سکتا ہے جو کسی دوسرے ملک میں تھا تو کیا اپنے ملک میں اس فلم کے ڈائیریکٹر کو نکال نہیں سکتا ؟؟
سب جھوٹ سب کا سب جھوٹ
بے ایمان اور غلیظ یہودی بھلا کیا جانے کے اللہ کا رسول صہ کیا درجہ رکھتا ہے ۔
وہ رسول جس پہ اللہ سلامتی بھیجتا ہے ۔
اور فرشتوں کو بھی حکم کرتا ہے کہ میرے محبوب رسول صہ پہ درود و سلام بھیجا کرو ۔
اس پہ بھی بعض مسلمان کمینے ان کچرے کے ڈھیر یہودیوں کو سچا ثابت کرنے پہ تلے ہوئے ہیں۔
غدار ، کافر لوگ
اللہ سب کے سب کافروں کو تباہ و برباد کر دے
آمین ثمہ آمین
بہت بہت شکریہ تانیہ سسٹر

بےباک
09-14-2012, 08:25 AM
یہ یہود اور عیسائی سب ایک مشترکہ مشن پر کام کرتے ہیں ،وہ ہے اسلام دشمنی ۔
ان جاہل لوگوں کو علم نہیں کہ پیارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم پر جو قرآن نازل ہوا وہ حضرت موسی اور عیسی علیہ السلام کی مدح بیان فرماتا ہے ،
جس نبی کے یہ پیرو کار ہیں ، یعنی حضرت موسی علیہ السلام اور حضرت عیسی علیہ السلام ،
ہمارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے ہم مسلمانوں کو حکم دے رکھا ہے کہ سب انبیاء پر ہمارا ایمان اور یقین ہے اور ان میں کوئی فرق نہیں ۔ مگر
یہ کافر لوگ ہیں ، ان کا اپنے انبیاء کی تعلیمات پر ہی یقین نہین اور یہ اسلام اور انبیاء کی توھین کے مجرم ہیں ،
اللہ تعالی ان پر اپنا غضب ضرور نازل فرمائے گا ،
ہم حضرت موسی علیہ السلام اورعیسی علیہ السلام کی نبی اور رسول کی طرح عزت کرتے ہیں اور کرتے رہیں گے ،
اللہ تعالی ان کو اب بھی سمجھنے کی توفیق عطا فرمائے ،کہ وہ خود عذاب کو دعوت دینے والی غلیظ حرکات مت کریں ۔
انا للہ و انا الیہ راجعون ،
اب بھی وقت ہے ٹیری جون اور یہ سیم باسل وغیرہ مجنونوں اور فساد کے مجرموں کو قومی مجرم قرار دے کر سلمان رشدی اور تسلیمہ نسرین وغیرہ غلیظ بندوں کو توہین مذھب اور توھین نبی کا جرم قرار دے کر سزا دی جائے ،

pervaz khan
09-14-2012, 10:41 AM
یہ یہودی اپنی نفرت کا اظہار کبھی کسی کتاب کی شکل میں کبھی فلم یا کوئی نا کوئی شرارت بازی سے اسلام کے خلاف یا رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے خلاف نفرت کا اظہار کسی نہ کسی طریقے سے کرتے رہتے ہیں ۔انہیں پتہ ہے کہ ان کی حفاظت کے لئے امریکہ موجود ہے۔اور جتنی بھی ایسی شرارتیں اٹھتی ہیں امریکہ نے کبھی بھی ان کی مذمت نہیں کی بلکہ ان کے خلاف احتجاج کرنے والوں کے خلاف زہر اگلا ہے۔

tashfin28
09-19-2012, 10:10 PM
امريکی حکومت اسلام مخالف فلم کی سختی سے مذمت کرتی ہے۔


http://www.youtube.com/watch?v=ECPI0QwFX8c


تاشفين – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ
digitaloutreach@state.gov
www.state.gov
https://twitter.com/#!/USDOSDOT_Urdu
http://www.facebook.com/USDOTUrdu

سرحدی
09-20-2012, 02:02 PM
رحمت ہے آپ کا لقب اعلیٰ ہے آپ کا نسب
بخشی عدوّ کو بھی اماں، اسوہ ہے آپ کا عجب

صدقے میں آپکے بنا سارا جہانِ ہست و بود
آپ کی ذات پر سلام ۔۔۔ آپ کی ذات پر درود

*****

آپ ہیں سب کے مقتدا ، آپ کا نام مصطفی
آپ کا چہرہ والضحٰی ، آپ کے ہاتھ ہیں رمٰی
مخفی ہے جبکہ ابتدا ، کون بتائے انتہا
لائے ہیں آپ وہ چراغ جس میں نہیں ذرا بھی دُود
آپ کی ذات پر سلام ۔۔۔ آپ کی ذات پر درود

*****
آپ مکاں تا لامکاں ، آپ ہیں جانِ کل جہاں
صبحِ ازل سے تا ابد سکہ ہے آپ کا رواں
ہر جگہ آپ کا عَلم، ہر جاہے آپ کی اذاں
چاہے زمیں کا فرش ہو چاہے وہ چرخِ کبود
آپ کی ذات پر سلام ۔۔۔ آپ کی ذات پر درود

*****

اونچا ہے آپ کا مقام، ارفع ہے آپ کا پیام
آپ کا ہے بلند نام ، ہوتا ہے تذکرہ مدام
آپ کے داس انسِ و جاں ، قدسی ہیں آپ کے غلام
رحمت ہے آپ کا کلام، رحمت ہے آپ کا وجود
آپ کی ذات پر سلام ۔۔۔ آپ کی ذات پر درود

*****

آپ کی بُو چمن چمن ، آپ کی ضو کِرن کِرن
طبَق طبَق گَگن گگن ، ساری ہے آپ سے پھبن
نازش پہ کیجیے کرم ، کیجیے قبول حرف و فن
آپ عطا ہیں آپ فیض آپ کرم ہیں آپ جود
آپ کی ذات پر سلام، آپ کی ذات پر درود
(محمد حنیف نازش قادری)


اللھم صل علی محمد عدد خلقہ و رضا نفسہ وزنۃ عرشہ و مداد کلمٰتہ

آئیے دوستو! عہد کریں کہ ہم اپنی زندگی کو وجہِ تخلیق کائنات سرکارِ دو عالم ، امام الانبیاء حضرت محمد مصطفی صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم (میری جان، مال اور عزت و آبرو آپ پر قربان) کی سنت کی پیروی کریں گے اور حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی شانِ اقدس میں ادنی سے ادنی گستاخی بھی برداشت نہیں کریں گے۔

سرحدی
09-20-2012, 02:25 PM
امريکی حکومت اسلام مخالف فلم کی سختی سے مذمت کرتی ہے۔


http://www.youtube.com/watch?v=ECPI0QwFX8c


تاشفين – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ
digitaloutreach@state.gov
www.state.gov
https://twitter.com/#!/USDOSDOT_Urdu
http://www.facebook.com/USDOTUrdu


جب امریکی حکومت اسلام مخالف فلم بنانے کی مذمت کرتی ہے تو اس کے بنانے والے بدبختوں کو پکڑ کر پھانسی پر چڑھادے، ہمارا احتجاج ختم ہوجائے گا۔

نگار
09-20-2012, 03:23 PM
ایسی آدمی کو بھی بین لگا دینا چاہیئے جو اتنا سب کچھ ہو کر بھی امریکہ کی صفائی کر رہا ہے .
مذمت کرتی ہے صرف اور صرف بکواس ہی کرتی امریکہ
خدا تمام کافروں کو ذلت کی موت مار دے
آمین ثمہ آمین

tashfin28
09-20-2012, 07:53 PM
امريکی حکومت کی اسلام خلاف فلم پر سخت مذمت

فورم پر کچھ ارکان اس غلط سوچ پر يقين رکھتے ہے کہ امریکہ اس فلم کے لئے ذمہ دار ہے جس نے مسلم دنیا میں کافی غم وغصہ کو جنم دیا ہے۔ ميں يہ واضح کرنا چاہتا ہوں کہ امریکی سینئر بشمول امريکی صدر اور وزير خارجہ نے اس اسلام خلاف فلم کی سختی سے مذمت کی ہے۔

جو ممبران اس بات پر بضد ہيں کہ مسلم ممالک ميں بے چينی اور تشدد کی فضا امريکہ کے ليے کسی بھی طرح سودمند ہے وہ يہ نظرانداز کر رہے ہيں کہ تمام تر دھمکيوں اور حملوں کا محور امريکی سفارت خانے، قونصل خانے اور مختلف ممالک ميں تعنيات امريکی سفارتی عملہ ہی ہے۔ میں اس عجیب نظريہ اور سوچ کو سمجھنے سے قاصر ہوں کہ امریکی حکومت جان بوجھ کر اسطرح فلم بنانے کی سرپرستی کرسکتی ہے جس سے مسلم دنیاميں تباہی کی فضا جنم لے سکے۔ امریکی حکومت کيوں کسی ايسے چيز کی حمایت کريگی جو براہ راست سفارتخانوں، سینئر سطح کے سفارت کاروں اورعام امريکی شہريوں کو خطرے میں ڈال سکتا ہے۔

امريکی حکومت کی جانب سے ان آئينی حدود کی وضاحت اور آزادی راۓ کے اظہار کا ذکر جو امريکہ ميں رہنے والے شہريوں کا حاصل ہے اس بات کی غمازی نہيں کرتا کہ ہم کسی بھی زاويے سے اس مواد کی حمايت، تائيد يا پشت پناہی کر رہے ہيں جو موجودہ صورت حال کا سبب بنا ہے۔ بلکہ حقيقت يہ ہے کہ وزير خارجہ ہيلری کلنٹن نے اپنے بيان ميں اس فلم کو "نفرت انگيز" اور "قابل مذمت" قرار ديا ہے۔ صرف يہی نہيں بلکہ انھوں نے تو يہ تک کہا کہ " يہ انتہائ سنکی پن سوچ کی عکاسی کرتی ہے۔ جس کا مقصد اعلی وارفع مذہب کی تحقير کرنا اور اشتعال اور تشدد پر اکسانا ہے"۔

امريکی حکومت کے تمام اعلی عہديداروں کی جانب سے اس ايشو کے حوالے سے واضح بيانات امريکی شہريوں، سول سوسائٹی کے نمانيدگان اور تعليمی ميدان ميں سرکردہ قائدين کی اکثريت کے خيالات کی غمازی کرتے ہيں، جو اس بات پرتو پختہ يقين رکھتے ہيں کہ افراد کواپنی راۓ کے اظہار کا حق حاصل ہے ليکن اس بات کو بھی مانتے ہيں کہ امريکہ ميں بسنے والے مسلمانوں سميت دنيا بھر ميں کئ بلين مسلمانوں کے جذبات اور مذہبی احساسات کو زک پہنچانے کے ليے کيا جانے والا کوئ بھی اقدام قابل نفرت ہے اور اس کی مذمت کی جانی چاہيے۔

ليکن اس کا يہ مطلب ہرگز نہيں ہے کہ طيش ميں آۓ ہوۓ افراد اور احتجاج کے نام پر مظاہرين کو اس بات کا حق حاصل ہو گيا ہے کہ وہ بے گناہ شہريوں کو ہلاک کر ديں جن ميں بيرون ممالک کے تعنيات سفير بھی شامل ہيں۔

تاشفين – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ
digitaloutreach@state.gov
www.state.gov
https://twitter.com/#!/USDOSDOT_Urdu
http://www.facebook.com/USDOTUrdu

admin
09-20-2012, 10:04 PM
تاشفین صاحب مجھے آپ کے انتہائی کمزور کمنٹس دیکھ کر انتہائی دکھ ہوتا ہے کہ آپ اپنی نوکری کا بھرم بھی مکمل طور پر ادا نہیں کر پا رہے..... عجیب طرح کی کیفیت ہے آپ کی ایک بات کی مذمت کرتے ہیں تو ویسی ہی دوسری بات کو آزادی رائے کا نام دے کر اس کی پشت پناہی کرتے ہیں.

آپ نے کہا کہ سویلینز پر یا امریکی سفراء پر حملے کرنا انتہا پسندی ہے تو جناب یہ انتہا پسندی تو آپ نے شروع کی پہلے آپ کے ملک سے آپ کے گھر سے اسلام کے سفیر امن کے سفیرِ اعظم کی ناموس اقدس پر حملہ کر کے لوگوں کو دعوت دی گئی کہ اگر امن کے سفیرِ اعظم کی ناموس پر حملہ ہو سکتا ہے تو اس ملک کے سفراء پر حملہ کرنا کیسے غیر اخلاقی اور متشدد فعل ہو گیا؟

آپ ایک فعل کو آزادی رائے کا نام دے رہے ہیں اور دوسرے فعل کو متشدد و انتہا پسندی کا.... جبکہ لوگوں نے تو دوسری جگہ بھی اپنا آزادی رائے استعمال کیا دونوں جگہ فرق صرف نقل اور اصل کا ہی ہے نقل کا کام آپ کے ہاں سے دکھایا گیا اور اس کا اصل لیبیا اور دوسرے ممالک میں آپ نے دیکھ لیا یا تو دونوں کو اظہارِ رائے کی آزادی کا نام دیں یا پھر دونوں کی مذمت کرتے ہوئے جو مطالبہ آپ اپنے سفراء کی عزت و جان کی حفاظت کا کرتے ہیں وہی مطالبہ ہم آپ سے اسلام کے سفیر اعظم محمد مصطفٰی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی عزت و ناموس کا کرتے ہیں...... آپ اپنے ملک میں ایسے قوانین وضح کریں کہ جو کسی بھی مذہب کے پیشوا کی اہانت کرے یا اس کے عزت و ناموس پر حملہ آور ہو اس کی سزا موت ہو گی ہم اپنے ملکوں میں آپ کے سفیروں کے حوالے سے یہ سزا مقرر کر دیتے ہیں کہ قتل کا بدلہ قتل........

اذان
09-20-2012, 10:41 PM
جزاک اللہ ایڈمن جی
آپ نے بہت اچھا جواب دیا منافقوں کے وکیل کو
لیکن جو آپ نے لکھ دیا اس پر منافق عمل نہیں کر سکتے
کیونکہ اگر مشرک ان باتوں پر عمل کریں گے ۔۔ تو
ہمارے رب نے جو جہنم بنائی ہے ۔وہ کس کے لیے تیار کی ہے۔۔؟؟
وہ یہی بے ایمان کافر ہے جوجہنم کی آگ کے مستحق ہے
اور جہنم کی آگ میں داخل ہو کر مذید اضافہ کریں گے
ان شاءاللہ ۔۔!!!
ہمارے نبی حضرت محمد صلى الله عليه وسلم
کےخلاف کوئی بھی بے غیرت یہودی گستاخی کریں گا
وہ دوزخ کی آگ سے بچ نہیں سکے گا
ان شاءاللہ
http://urdulook.info/imagehost/?di=B38I

نذر حافی
09-21-2012, 12:10 AM
کراچی میں امریکی قونصلیٹ پر " محمد رسول اللہ" صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کا پرچم لہرانے اور سید علی رضا تقوی کو گولی لگنےکی خبر میں نے پڑھی اور سنی تومجھے شدت سے احساس ہواکہ ہماری اس چھوٹی سی دنیامیں یوں تو ہر شئے کی ایک انتہااور حد ہے لیکن شایددوہرے پن،دوغلے پن اور دوہرے معیار کی کوئی انتہانہیں۔جو قوم دوہرے پن اور دوہرے معیار کی عادی ہوجائے اسے ذلت و رسوائی کی گھاٹیوں سے کوئی نہیں نکال سکتا۔
جیساکہ آپ جانتے ہیں کہ امریکی پادری کی"مسلمانوں کی معصومیت" نامی فلم منظر عام پر آنے کے بعد ہر روز اس کے خلاف احتجاج میں اضافہ ہی ہوتاچلاجارہاہےاور اب تک شاید دنیاکا کوئی ہی ملک یا خطہ ایسا ہوگا جس کے رہنے والوں بالخصوص مسلمانوں نے اس فلم کی مذمت نہ کی ہو۔
ممکن ہے آپ اسے " لوگوں کی بیداری قراردیں"اور یہ بھی ممکن ہے کہ آپ اسے "ناموس پیغمبر صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم" کی خاطر مسلمانوں کی یکجہتی قراردیں۔
آپ اس فلم کے خلاف موجودہ احتجاجی تحریک کو جو مرضی نام دیں،آپ جتنے مرضی جلوس نکالیں،ہزاروں ٹائر جلائیں،گھنٹوں لمبی لمبی تقریریں کریں،ہرملک اور شہر کا پہیہ جام کریں،ہر ریاست میں سول نافرمانی کا اعلان کریں لیکن آپ کے پاس کوئی ضمانت نہیں کہ غیرمسلم دانشوروں اور میڈیا کی طرف سےآئندہ پیغمبرِ اسلام کی شان میں گستاخی نہیں کی جائے گی۔۔۔؟
جی ہاں آپ کے پاس کوئی ضمانت نہیں۔۔۔؟
آپ جائیے۔۔۔کسی سے ضمانت مانگ کر دیکھ لیجئے آپ کو احساس ہوجائے گا کہ اس امر کی ضمانت ملنا ناممکن ہے۔۔۔
سوچئے ضرور سوچئے آخر کیاوجہ ہے کہ دنیا میں ڈیڑھ ارب سے زیادہ بسنے والے مسلمان اپنے پیغمبر ؐکی ناموس کے تحفظ کی ضمانت نہیں دے سکتے۔ اس سے بڑھ کر افسوس کی بات یہ ہے کہ ہمارے پاس دوسروں کو کافر ثابت کرنے اور قتل کرکے جنّت میں جانے کی گارنٹی تو موجود ہے لیکن ناموس پیغمبر کے لئے کوئی گارنٹی و ضمانت نہیں۔
جب آپ شیعہ اور سنّی ،پنجابی اور پٹھان،عربی اور عجمی،ہندی اور پاکستانی،کشمیری اور افغانی ،کالے اور گورے نیز وڈیرے اور کمّی سے بالاتر ہوکر سوچیں گے تو تب آپ کو اس سوال کا جواب خود بخود مل جائے گا ۔
آپ جان جائیں گے کہ دنیامیں ایک بڑی اکثریت رکھنے کے باوجود ہمارے پاس اپنے پیغمبر کی ناموس کی حفاظت کے لئے کوئی ضمانت اور کوئی گارنٹی کیوں موجودنہیں۔
آپ سوچیں گے توآپ کو اسلامی دنیا کی آستین میں سانپ اور مسلمانوں کے ہاں دوہرا معیار صاف دکھائی دے گا۔آپ سوچیں تو سہی کہ کیا یہ "مسلمانوں کی معصومیت" نامی فلم اس لئے بری ہے کہ اس کا بنانے والا ایک عیسائی پادری ہے یاپھر اس لئے بری ہے کہ اس میں معراج انسانیت اور ختمی المرتبت کی شان میں گستاخی کی گئی ہے۔۔۔؟
اگرآپ کے نزدیک اس فلم کی مخالفت کا معیار" ختمی المرتبت کی شان میں گستاخی ہے"۔۔۔ تو پھر انصاف سے بتائیے کہ ۔۔۔

کیا اولیائے کرام کے مقدس مزارات پر دھماکے کر نے سے حضور کی اہانت نہیں ہوتی؟
کیا بے گناہ لوگوں کو قرآن مجید کی آیات پڑھ پڑھ کر جانوروں کی طرح ذبح کردینے سے قرآن اور پیغمبر کی توہین نہیں ہوتی؟
کیا مسجدوں میں نمازیوں کو گولیاں ماردینے سے اسلام اور پیغمبر اسلام کی اہانت نہیں ہوتی؟
کیا بیت المقدس پر یہودیوں کے قبضے اورفلسطینیوں کی در بدری کے باوجود ہمارے مسلم حکمرانوں کے ،صہیونی نیزامریکی و یورپی آقاوں کے ساتھ جام چھلکانے سے اسلام اور پیغمبر اسلام اہانت نہیں ہوتی؟
کیا اپنے آپ کو طالبانِ اسلام کہنے والوں کے ہاتھوں بچیوں کے سکول بند کرانے اور عورتوں کو مجمع عام میں پیٹنے سے اسلام اور پیغمبرِ اسلام کی رسوائی نہیں ہوتی؟
آپ جس بھی مذہب اور جس بھی مکتب سے تعلق رکھتے ہوں اپنے ضمیر سے پوچھئے کہ عورتوں اور بچوں کی چیخ وپکار کے درمیان، " کلمہ گو مسلمانوں کو" کلمہ پڑھتے ہوئے ، بسوں سے اتار کر موت کے گھاٹ اتار دینے سے اسلام اور پیغمبرِ اسلام کی شان میں اضافہ ہوتاہے یا توہین ہوتی ہے۔۔۔؟
امریکی پادری ٹیری جونز اور اس کے ہمنواوں کو یہ جرات صرف اسی لئے ہوئی ہے کہ وہ ہمارے دوہرے معیار اور دوہرے پن سے آگاہ ہیں۔وہ جانتے ہیں کہ جب مسلمان خودہر روز پیغمبرِ اسلام کی توہین کرکے "مجاہد اسلام" طالبانِ اسلام " اور "خادم حرمین شریفین" رہ سکتے ہیں اور کوئی ان کا کچھ نہیں بگاڑ سکتاتو پھر انہیں مسلمانوں کے احتجاجات اور جلوسوں کو خاطر میں لانے کی کیا ضرورت ہے۔
آج ناموس رسالت پر اپنی جان قربان کرنے والے " سید علی رضا تقوی" کا خون ہم سے کہہ رہاہے کہ اے فرقوں اور علاقوں،نعروں اور تنظیموں،قبیلوں اور ٹولوں میں بٹے ہوئے مسلمانو!اگر ناموس رسالت کے تحفظ کے لئے مخلص ہوتو میری طرح ظاہر و باطن کو ایک کردو،جس کے نام کا کلمہ پڑھتے ہو اس کے نام پر جان دے دو،جس کی امّت کہلاتے ہو اسی کی محبت کو زندگی کا معیار قرار دو، چاہے گستاخ رسول کوئی بھی ہو اس کی سزا ایک ہی مقرر کرو۔۔۔بصورت دیگر نعرے لگاتے رہو اور احتجاج کرتے رہو!
یقین جانیں ہمارے دوغلے پن،دوہرے معیار اورکھوکھلے احتجاجوں کو دیکھ کر ٹیری جونز ہنستا اور سید علی رضا تقوی روتاہوگا چونکہ دونوں جانتے ہیں کہ جو قوم دوہرے پن اور دوہرے معیار کی عادی ہوجائے اسے ذلت و رسوائی کی گھاٹیوں سے کوئی نہیں نکال سکتا۔

بےباک
09-23-2012, 11:33 AM
کراچی میں امریکی قونصلیٹ پر " محمد رسول اللہ" صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کا پرچم لہرانے اور سید علی رضا تقوی کو گولی لگنےکی خبر میں نے پڑھی اور سنی تومجھے شدت سے احساس ہواکہ ہماری اس چھوٹی سی دنیامیں یوں تو ہر شئے کی ایک انتہااور حد ہے لیکن شایددوہرے پن،دوغلے پن اور دوہرے معیار کی کوئی انتہانہیں۔جو قوم دوہرے پن اور دوہرے معیار کی عادی ہوجائے اسے ذلت و رسوائی کی گھاٹیوں سے کوئی نہیں نکال سکت۔ ۔
اللہ تعالی مرحوم کو شہداء کے ساتھ آخرت میں اٹھائے گا اور اس کے درجات بلند فرمائے گا ، ان شاءاللہ [/php]


سوچئے ضرور سوچئے آخر کیاوجہ ہے کہ دنیا میں ڈیڑھ ارب سے زیادہ بسنے والے مسلمان اپنے پیغمبر ؐکی ناموس کے تحفظ کی ضمانت نہیں دے سکتے۔ اس سے بڑھ کر افسوس کی بات یہ ہے کہ ہمارے پاس دوسروں کو کافر ثابت کرنے اور قتل کرکے جنّت میں جانے کی گارنٹی تو موجود ہے لیکن ناموس پیغمبر کے لئے کوئی گارنٹی و ضمانت نہیں۔
جب آپ شیعہ اور سنّی ،پنجابی اور پٹھان،عربی اور عجمی،ہندی اور پاکستانی،کشمیری اور افغانی ،کالے اور گورے نیز وڈیرے اور کمّی سے بالاتر ہوکر سوچیں گے تو تب آپ کو اس سوال کا جواب خود بخود مل جائے گا ۔
آپ جان جائیں گے کہ دنیامیں ایک بڑی اکثریت رکھنے کے باوجود ہمارے پاس اپنے پیغمبر کی ناموس کی حفاظت کے لئے کوئی ضمانت اور کوئی گارنٹی کیوں موجودنہیں۔
آپ سوچیں گے توآپ کو اسلامی دنیا کی آستین میں سانپ اور مسلمانوں کے ہاں دوہرا معیار صاف دکھائی دے گا۔آپ سوچیں تو سہی کہ کیا یہ "مسلمانوں کی معصومیت" نامی فلم اس لئے بری ہے کہ اس کا بنانے والا ایک عیسائی پادری ہے یاپھر اس لئے بری ہے کہ اس میں معراج انسانیت اور ختمی المرتبت کی شان میں گستاخی کی گئی ہے۔۔۔؟

بہت خوب ۔ جزاک اللہ

tashfin28
09-27-2012, 08:14 PM
اسلام مخالف فلم اور امريکی موقف

ایک بار پھر، ميں اس فورم پر تمام معزز اراکین کو واضح کرانا چاہتاہوں کہ امريکی حکومت کا اس ويڈيو سے کوئی تعلق نہيں ہے اور ہم اس ميں ديۓ گۓ پيغام اور اس کے مواد کو قطعی طور پر مسترد کرتے ہيں۔ امريکہ کی مذہبی رواداری سے وابستگی ہماری قوم کے آغاز کے زمانہ سے ہی ہے۔

ہمارے ملک ميں تمام مذاہب کے پيروکار بشمول لاکھوں مسلمان بستے ہيں اور ہم اہل مذہب کی انتہائی عزت اور قدر کرتے ہيں۔ ہمارے ليۓ، بالخصوص ميرے ليۓ يہ ويڈيو نہايت نفرت انگيز اور قابل مذمت ہے۔ يہ انتہائی شرانگيز سوچ کی عکاسی کرتی ہے۔ جس کا مقصد اعلی وارفع مذہب کی تحقير کرنا اور اشتعال اور تشدد پر اکسانا ہے، لیکن اس معاملے میں کسی صورت بھی ہميں تشدد کا راستہ اختيار نہيں کرناچاہئے-

يہ ویڈیو نہ صرف دنیا بھر کے مسلمانوں کيلۓ بلکہ ساتھ ساتھ امریکہ کيلۓ بھی ایک توہین ہے۔ يہ عظیم مذہب کافی مضبوط ہے کہ شرانگيز اور برے ارادوں کے ساتھ ایک واحد فرد کی جانب سے بنائے جانے والے غيراخلاقی اورایک جارحانہ ویڈیو کا سامنا کرسکيں۔

تاشفين – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ
digitaloutreach@state.gov
www.state.gov
https://twitter.com/#!/USDOSDOT_Urdu
http://www.facebook.com/USDOTUrdu