PDA

View Full Version : پاکستانی چینل اور بھارتی پروگرام ،



بےباک
10-02-2012, 04:37 PM
ہمارے وطن کے ٹیلی وژن کے مالکان معلوم نہیں کس طرح بےشرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ، مکمل پروگرام ہی انڈیا کے دکھا رھے ہیں ، ایسا محسوس ہوتا ھے کہ وہ انڈیا کی مشہوری کر رہے ہیں
کوہ نور اور ایکسپریس ٹی وی باقاعدہ ھندوستانی پروگرام نشر کرتے ہیں ، یعنی ٹی وی پاکستانی ہے مگر بانچھ ہے ، ان کا اپنا کوئی مقام نہیں اور نہ اپنی کوئی قیمت ۔ اور وہ اپنے پروگرام بھی نہیں بنا سکتے ، صرف زرد صحافت اور زرد میڈیا ،یعنی پیسوں کے لیے کام کرتے ہیں ۔
ہمارے مشہور ٹی وی چینلز بھی انٹرٹینمنٹ کے نام پر ھندوستانی گانے اور ھندوستانی نیم عریان ایکٹریسوں کے رقص دکھاتے ہیں ، اور پھر بےھودگی کے خلاف خود ہی پروگرام منعقد کرتے ہیں اور کہتے ہیں ہمیں دھرا معیار نہیں اپنانا چاھیے اور ایسے اشتہارات اور انٹرٹینمنٹ کی خبریں بالکل نشر نہیں کرنی چاھیے ، پروگرام کے اختتام کو ابھی چند منٹ نہیں گرزے ہوتے کہ وہ ٹی وی چینل پھر انہی ہی اداکاراون کے بےھودہ رقص نشر کر رہے ہوتے ہیں ، یہ دوغلی پالیسی ہماری حکومتی خامیوں کا منہ بولتا ثبوت ہے ،
یہ خبر ملاحظہ فرمائیے ،
http://www.express.com.pk/images/NP_LHE/20121002/Sub_Images/1101633994-1.gif

انجم رشید
10-02-2012, 06:43 PM
بہت بہت شکریہ بھائی
یہی تو ہمارہ مسلہ ہے کہ یہاں الٹا چور کوتوال کو ڈنٹتا ہے اے کاش ہمیں عقل آجائے کہ دنیا صرف پیسہ ہی نہیں غیرت نام کی بھی کوئی چیز پائی جاتی ہے

اذان
10-03-2012, 08:01 AM
پاکستان میں جب سے میڈیا آزاد ہوا پاکستان میں بہت ہی زیادہ مشکلات پیدا ہو گئی ہے
http://urdulook.info/imagehost/?di=QQQ7

pervaz khan
10-03-2012, 10:37 AM
لیکن جو مالکان ہیں ان چینل کے ان کے لئے پیسہ ہی سب کچھ ہے۔ARY کا پہلا نام تھا پاکستان ٹی وی اور اسکا لوگو قومی پرچم تھا۔شروع شروع میں صرف پاکستانی پروگرام ہی نشر کیے جاتے تھے اس چینل کو حاصل کرنے کے شاید دس یا پندرہ پونڈ مہینے کے تھے،جب یہ مشہور ہوا تو انھوں نے بھارتی پروگرام نشر کرنے شروع کر دئیے۔تو اس کا نام ARY رکھا اورقومی پرچم کے لوگو کی جگہ انھوں نے لوگو بھی بدل دیا اب تو ARY کے تین یا چار چینل ہیں۔شروع شروع میں اس کو لندن سے نشر کیا جاتا تھا۔اب یہ دبہی سے نشر کیے جاتے ہیں

شاہنواز
10-03-2012, 10:48 PM
جی درست فرمایا آب سب نے جپ یہ چینل اسٹارٹ هوۓ تهے که پاکستانی رنگ نمایاں تها وقت گزرنے کے ساته ساته ہماری یادداشت کمزور ہوگئ هے که جب یہ چینل نہیں تهے تو وی سی آر پر انڈین فلمز دیکهی جاتی تهیں جب چینلز آۓ تو سب سے پہلے انڈین چینل آن ہوۓ جب یه زہر عوام کی رگوں میں دوڑ گیا اور انڈین چین پر پاکستان میں پابندی لگائ گئ تو هم عوام چیخ پڑے اور کیبلز آپریٹرز کو ماہانه فیس ادائگی روک دی گئی قصور وار میڈیا هی نہیں ہم عوام بهی ہیں