PDA

View Full Version : وکی لیکس کے بانی جولین اسانج لندن میں گرفتار‘ دستاویزات کا اجرا جاری رہے گا : ترجمان



گلاب خان
12-08-2010, 08:30 PM
لندن (مانیٹرنگ نیوز + بی بی سی ڈاٹ کام) امریکی سفارتی دستاویزات کو افشا کرکے دنیا میں ہلچل مچا دینے والی ویب سائٹ وکی لیکس کے بانی جولین اسانج کو لندن میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔ بی بی سی کے مطابق انتالیس سالہ جولین آسٹریلیا کے شہری ہیں اور انہیں لندن میں میٹروپولیٹن پولیس نے گرفتار کیا‘ ان پر سویڈن میں دو خواتین پر جنسی حملے کا الزام ہے جس سے اسانج انکار کرتے ہیں۔ سکاٹ لینڈ یارڈ کا کہنا ہے اسانج کو گرفتاری کے یورپی وارنٹ کے تحت منگل کو اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ پہلے سے طے شدہ وقت کے مطابق لندن کے ایک تھانے میں پولیس کے سوالوں کا جواب دینے کے لئے آئے۔ بی بی سی کا کہنا ہے ان کو سویڈن کے حوالے کردیا جائے گا۔ جولین اسانج پر ریپ کا بھی الزام ہے یہ تمام الزامات اگست 2010ء کے مبینہ واقعات سے متعلق ہیں۔ جولین اسانج کا کہنا ہے ان کے خلاف کیس سیاسی بنیاد پر قائم کیا گیا ہے۔ اسانج کی گرفتاری کے یورپی وارنٹ سویڈن کی اعلی عدالت کے اس فیصلے کے بعد جاری کئے گئے ہیں جس کے تحت ان کی گرفتاری کے خلاف درخواست مسترد کر دی گئی تھی۔ امریکی وزیر دفاع نے کہا ہے جولین اسانج کی گرفتاری اچھی خبر ہے۔ مانیٹرنگ نیوز کے مطابق برطانوی میڈیا کا کہنا ہے جولین اسانج نے خود رضاکارانہ طور پر گرفتاری دی۔ جولین اسانج کو پولیس سٹیشن طلب کیا تھا جہاں انہوں نے خود کو گرفتاری کے لئے پیش کر دیا۔ دو روز قبل ان کا سوئس اکاﺅنٹ بھی منجمد کر دیا گیا تھا۔ وکی لیکس کے ترجمان نے کہا ہے جولین اسانج کی گرفتاری سے دستاویزات کے اجرا میں کوئی تبدیلی نہیں ہو گی‘ ترجمان کے مطابق دستاویزات کا اجرا لندن یا کسی اور مقام سے کیا جائیگا۔جولین اسانج کو ویسٹ منسٹر کے علاقہ مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں ان کی ضمانت کی درخواست مسترد کر دی گئی۔ جولین کو دوبارہ 14 دسمبر کو عدالت کے سامنے پیش کیا جائے گا۔ جولین اسانج کی گرفتاری کے بعد عمران خان کی سابق اہلی۔ جمائما خان سمیت تین افراد نے ضمانت دینے کی پیشکش کی لیکن برطانوی عدالت نے جولین اسانج کے وکیل کی جانب سے پیش کی جانے والی درخواست ضمانت پہلے ہی مسترد کر دی۔ آسٹریلیا کا سفارتخانہ جولین کو قونصل جنرل تک رسائی فراہم کر رہا ہے۔ اسانج نے الزام کی تردید کی کہ اس نے کسی خاتون سے جنسی زیادتی کی ہے‘ جولین نے کہا وہ اپنی سویڈن حوالگی کا مقابلہ کرے گا۔ جولین اسانج کے ترجمان نے کہا اسانج کی گرفتاری آزادی صحافت پر حملہ ہے۔ سوئس پراسیکیوٹر کا کہنا ہے کہ جولین اسانج پر مقدمہ اور ان کی گرفتاری کا وکی لیکس سے کوئی تعلق نہیں۔ 20 ہزار پاونڈ ضمانت کی پیشکش کرنے والی جمائما خان نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ جولین اسانج کو نہیں جانتیں‘ انہیں پیشکش اس لئے کی کہ معلومات تک رسائی سب کا حق ہے۔