PDA

View Full Version : ایران اور اسرائیل تعلقات، تاریخ کے آئینے میں۔



ابوسفیان
12-15-2012, 02:28 AM
ایران اور اسرائیل تعلقات، تاریخ کے آئینے میں۔ کیا دونوں ممالک میں جنگ ہو سکتی ہے؟

پچھلے ایک لمبے عرصے سے ایران اور اسرائیل جنگ کا چرچہ سننے میں آرہا ہے لیکن کہیں بھی ، کسی بھی میڈیا کے ذرائع نے ابھی تک یہ واضح نہیں کیا کہ جنگ اگر بالفرض ہو بھی سکتی ہے تو اس کی وجہ کیا بنے گی؟ آیا اسرائیل کی سرحدیں ایران سے ملتی ہیں جو سرحدی کشیدگی کو وجہ بنایا جا سکے؟ کیا ایران نے اسرائیل پر حملے کی کوشش کی؟ کیا کوئی اور متنازعہ مسئلہ بنا جو اتنا گھمبیر ہو گیا کہ جنگ کی نوبت آگئی؟ ایسا کچھ بھی نہیں ہے۔ کہیں اس قسم کی کوئی شہادت نہیں ملتی کہ کسی قسم کا کوئی آبی، سرحدی یا زمینی تنازعہ ان دونوں ممالک کے درمیان موجود ہو۔ پھر کس بات کو بنیاد بنا کر اتنے لکمبے چوڑے تجزیے کئے جا رہے ہیں کہ ایران اور اسرائیل کی جنگ نا گزیر ہے۔ سونے پر سہاگہ کہ دونوں ممالک میں جنگی تیاریاں بھی زور و شور سے جاری ہیں۔ ایران روس سے مدد لے رہا ہے تو اسرائیل کا حامی امریکہ ہے۔

اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کیا اسرائیل اور ایران ایک دوسرے کے خلاف ہو سکتے ہیں؟ کیا یہ جنگ کسی مزید بڑی جنگ کا پیش خیمہ نہیں بنے گی۔ ذرا ان تاریخی واقعات پر غور فرمائیں:۔

یہ بات تو آپ جانتے ہی ہیں کہ ایران اور عراق کی ایک جنگ ہو چکی ہے اور یہی کچھ اسرائیل اور عرب کے مابین بھی ہوا تھا۔ فلسطین میں اسرائیلی بربریت تو خیر اب تک جاری ہے۔ ذرا ان واقعات پر غور کریں جو ایران اور عراق جنگ کے دوران پیش آئے تھے۔

▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬ ▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬ ▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬
اکتوبر 1980 کو پیس سے شائع ہونے والے ایک جریدے افریق ایسی نے شائع کیا کہ اسرائیلی فوج اور سویلین ماہرین ایران عراق جنگ کے تیسرے دن ایرانی سٹاف کمانڈوز کی مدد کے لئے تہران پہنچ گئے ہیں۔ اسرائل کے ان ماہرین کا تعلق موساد سے تھا۔

دو نومبر 1980 کو لندن کے ہفت روزہ آبزرور نے یہ خبر شائع کی ایران عراق جنگ میں ایران کی مدد کے لئے اسرائیلی بحری جہاز مسلسل ایران پہنچ رہے ہیں۔

تین نومبر 1980 کو مغربی جرمنی کے جریدے ڈائی وِلٹ نے شائع کیا کہ ایران کی مدد کے لئے اسرائیل نے امریکی اصلحہ خصوصاً ایف 4 لڑاکا تیاروں کے پرزے فراہم کئے۔

چوبیس جولائی 1981 کو کونیکا نے شائع کیا کہ سوویت یونین کے علاقے میں گر کر تباہ ہونے والا اجنٹائنا کا جہاز اسرائیل کی جانب سے جنگی سامان لے کر ایران جا رہا تھا۔
▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬ ▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬ ▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬


اس قسم کے اور بھی کئی واقعات موجود ہیں جو اس بات کی گواہی دیتے ہیں کہ اسرائیل نے عراق ، ایران جنگ میں ایران کا ساتھ دیا۔ اور ساتھ ہی ایران کے حوالے سے بھی ایسی شہادتیں موجود ہیں کہ “اسلامی” ملک ہونے کے باوجود ایران نے عرب، اسرائیل جنگ میں اسرائیل کا ساتھ دیا۔ ایسا ہی ایک واقعہ فلسطین کے ساتھ ہونے والی اسرائیلی جنگ سے پیش کیا جاتا ہے:۔

ایران میں “اسلامی انقلاب” کے بعد آیت اللہ خمینی نے اس بات کی ضمانت دی کہ سابرہ اور شطیلہ کے کیمپوں میں فلسطینی مسلمانوں کی مدد کے لئے ایرانیوں کو بھیجا جائے گا۔ یا عقدہ بعد میں کھلا کہ صابرہ اور شطیلہ میں مسلمانوں کے خون سے ہولی کھیلنے والے اسرائیلی اور میجر حداد کی سربراہی میں ملیشیائی عیسائیوں کے قصائیوں کے ساتھ ایک تہائی اکثریت ایرانیوں کی تھی۔ اس کے ساتھ ہی ایران نے عرب اسرائیل جنگ میں اسرائیل کو تیل کی ترسیل جاری رکھی اور مسلمان ہونے کے باوجود دشمنانِ اسلام کا ساتھ دیتا رہا۔

اب وقت تبدیل ہوا ہے، احمدی نژاد نے کئی بار دو ٹوک الفاظ میں اس بات کی نشاندہی کی ہے کہ اسرائیل اسلام کا دشمن ہے لیکن کیا ایسی زبانی کلامی باتیں جنگ کا پیش خیمہ ثابت ہو سکتی ہیں؟ کیا کسی بڑی جنگ کی تیاری کی جا رہی ہے؟ اس سلسلے میں حضورِ اقدس ﷺ کی وہ حدیث یاد آتی ہے کہ جس کا مقہوم ہے کہ “فتنہ دجال میں اسلام کے خلاف لڑنے والے یہودیوں میں سے سر ہزار یہودیوں کا ایک ٹولہ ایران کے شہر اصفحان سے نکلے گا”۔ اب موجودہ حالات کو سامنے رکھیں کو یہ بات بھی دیکھنے میں آئی ہے کہ اس وقت دنیا بھر کے یہودی اسرائیل میں جمع ہو رہے ہیں جبکہ ایران میں موجود یہودی کہیں نہیں جا رہے۔ کیا اس سے حدیث میں دی گئی بشارت کا ثبوت نہیں ملتا؟

میڈیا میں پھلے اس جنگ کے پروانے کس شمع کی نظر ہونگے یہ تو وقت ہی فیصلہ کرے گا تاہم یہ بات نظر آتی ہے کہ خطے میں موجود ممالک کو جان بوجھ کر ایک دوراہے پر لایا جا رہا ہے کہاں ان کو کسی ایک کو چننا ہوگا۔ یہ بات یقین سے نہیں کہی جا سکتی کہ ایران اور اسرائیل کے مابین جنگ ہوگی بھی یا نہیں لیکن کیا یہ دونوں ممالک اپنے دیرینہ تعلقات کو ایک جنگ کی نظر کر سکتے ہیں؟ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ یہودی ایک مفاد پرست قوم ہیں اللہ تعالیٰ کے اس قوم پر بہت احسانات ہیں لیکن یہ ہمیشہ سرکشی کے مرتکب پائے گئے ہیں دوسری طرف ایران بھی ہے تو اسلامی ملک لیکن اس کی شاخین بھی دور کہیں جا کر اس اسرائیل سے ملتی ہیں جس کا خواب یہودیوں نے تب ہی دیکھنا شروع کر دیا تھا جب انہیں اس بات کا گمان ہونے لگا تھا کہ عنقریب اسلام کے علاوہ دنیا میں کوئی اور دین نہ ہوگا۔ واللہ عالم بالثواب

ﭢ✄۞︻̷̿┻̿═━一ﭢ✄۞︻̷̿┻̿ ━一ﭢ✄۞︻̷̿┻̿═━一ﭢ✄۞︻̷ ̿┻̿═━一☚☛

نذر حافی
12-15-2012, 08:55 PM
اس جہالت اور تعصب کا کیا علاج کرے کوئی۔خواجے کے گواہ ڈڈو۔۔۔مولف نے جو حوالہ جات پیش کئے ہیں ان سے ہی موصوف کی علمی و قلمی حیثیت کی قلعی کھل جاتی ہے۔۔۔

سقراط
12-16-2012, 01:41 AM
بہت خوب اچھی معلومات ہیں جناب

ابوسفیان
12-16-2012, 04:21 PM
اس جہالت اور تعصب کا کیا علاج کرے کوئی۔خواجے کے گواہ ڈڈو۔۔۔مولف نے جو حوالہ جات پیش کئے ہیں ان سے ہی موصوف کی علمی و قلمی حیثیت کی قلعی کھل جاتی ہے۔۔۔


پسند اپنی اپنی خیال اپنا اپنا
ہر انسان فطری و فکری آزادی کے ساتھ رہتا ہے
ضروری نہیں کے ہرکس و ناکس کے ذوق و معیار سے مطابقت رکھتا ہو !:popcorn: