PDA

View Full Version : بارود والے کبھی درود والوں کو ختم نہیں کرسکتے



نذر حافی
12-25-2012, 02:51 AM
محمد ثروت اعجاز قادری نے پاکستان سنی تحریک ڈسٹرکٹ ویسٹ محمدی کالونی سیکٹر کے تحت محمدی کالونی، ماڑی پور روڈ پر منعقدہ امام احمد رضا خان بریلویؒ کانفرنس سے خصوصی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس ملک اور بالخصوص کراچی میں بنگالی زبان بولنے والوں کے ساتھ ہمیشہ زیادتیاں ہوتی رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ 65 برس سے بنگالی زبان بولنے والوں کا استحصال کیا جاتا رہا ہے، ہمارے دو اصولوں خوف خدا اور عشق رسول پر سنی تحریک کا وجود ہے اور کراچی سے خیبر تک ان دو اصولوں کے پرچم تلے لاکھوں افراد موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بارود والے کبھی درود والوں کو ختم نہیں کرسکتے ہیں۔ پی ایس ٹی کے سربراہ نے کہا کہ سوات میں 146 علماء کرام شہید اور 40 سے زائد مزارات کو شہید کردیا گیا ہے اس کے باوجود وہاں عاشق رسولﷺ کا جذبہ قابل دید ہے۔

انہوں نے کہا کہ احمد رضا خان فاضل بریلوی ؒ نے جب بھی اپنی قلم کا استعمال کیا حضور اکرم (ص) کی محبت کے لئے استعمال کیا۔ انہوں نے کہا کہ احمد رضا نے انگریزوں کی غلامی کی بجائے ان کے سامنے ڈٹ کر مقابلہ کیا اور بدعقیدہ اور بدمذہبوں کے خلاف قلم سے جہاد کیا۔ ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ آج وہی انگریزوں کے پیروکاروں نے اس ملک کو دہشتگردی، ٹارگٹ کلنگ اور بھتہ خوری پر پہنچا دیا ہے، ہماری آسمانی مخلوق یعنی حکمرانوں کو کچھ نظر نہیں آتا۔ انہوں نے کہا کہ آج مدارس، مساجد، تعلیم گاہیں، پولیس اور فوج بھی ان کی دہشتگردی سے بچے ہوئے نہیں ہیں، گذشتہ دنوں پولیو کی مہم چلا کر ہمارے مستقبل کو معذور ہونے سے بچانے والی بہنوں کو شہید کردیا گیا اور انہیں شہید کرنے والوں اور کندھوں پر راکٹ لانچر رکھ کر گھومنے والوں کو ہمارے حکمران تحفظ فراہم کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج ہماری نوجوان نسل ان بدمذہبوں کی شدت پسندی سے دوچار ہے۔ انہوں نے کہا کہ سنی تحریک کا سفر شہادتوں کا سفر ہے اور آج تک ہمارے ہزاروں نوجوانوں، علماء کرام اور قائدین کو دہشتگردی کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے لیکن ہم آج بھی اسلام زندہ باد اور پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگا رہے ہیں۔
محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ اب عوام کو اپنی حفاظت خود کرنی ہوگی کیونکہ یہ حکمران اور انتظامیہ کسی کو نہیں بچا سکتی۔
کانفرنس سے قاری خلیل الرحمان قادری، علامہ سلطان احمد مدنی، پی ایس ٹی کے رہنماء مبین قادری، فہیم الدین شیخ، مولانا کبیر احمد قادری، حافظ عبدالشکور نورانی، مولانا ابو طاہر قادری، مولانا نور العالم اختری، مولانا کمال حسین شامی اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔

بےباک
12-25-2012, 09:53 AM
سنی تحریک والے بھی اب کراچی کے رنگ میں رنگے جا چکے ہیں ،
سنی تحریک بھی ۔ اللہ کرے لشکر جھنگوی اور سپاہ صحابہ کے نقش قدم پر نہ چلیں ، ، ان کا نعرہ بے شک درود ہے مگر ان کے اجتماعات اور بیانات دیکھ کر شدت پسندی کا عنصر غالب دکھائی دینے لگا ہے ،

pervaz khan
12-25-2012, 01:39 PM
اچھی شئیرنگ کا بہت شکریہ