PDA

View Full Version : زرد رُت۔۔۔۔۔میری نظم



نورالعین عینی
03-09-2013, 06:20 AM
اپنی ایک نظم نذرمحفل۔۔۔۔

زرد رُت

میرے احساس کی بستی میں
کب سے زرد موسم کا بسیرا ہے
درختِ جاں نے،
جانے کب سے پت جھڑ کے
وہ پھیکے رنگ سارے اوڑھ رکھے ہیں
کہ دشتِ آرزو میں اب
خیالِ یار کی رعنائیاں لے کر
کوئی کونپل نہیں کھلتی
یہ ماہ و سال کی شاخیں
ہوئی بنجر ہیں کچھ ایسے
کہ ان کی کوکھ سے امیدکےپتے
بڑی مشکل سے اگ پائیں !۔
جو اگ آئیں!۔۔
تو جلتی زیست کا تپتا ہوا سورج
انہیں اس شاخ پر ٹکنے نہیں دیتا!۔
ہرا رہنے نہیں دیتا
یہ سوکھے زرد پتے
اب میرے ان سوختہ خوابوں کا مرقد ہیں !۔
جنہیں مایوسیوں کی آنچ نے
تعبیر سے پہلے۔۔
جلا کر راکھ کر ڈالا
میرے مولا!۔
میرے احساس کے ویراں چمن میں کیوں
بہاریں لوٹ آنا بھول بیٹھی ہیں ؟!۔

بےباک
03-09-2013, 10:02 AM
محترمہ نور العین عینی صاحبہ کا شکریہ انہوں نے اردو منظر پر اپنی شاعری سے ہمیں روشناس کرایا ،
کلام بے حد خوبصورت ہے ،شاعری میں سوچ اور لکھنے میں قلم کی گرفت ،الفاظ کا چناؤ ، اس سے اندازہ ہوتا ہے کہ جلد ہی ان کا دیوان طبع ہو گا ،

ان کی ایک اور غزل پیش خدمت ہے ،جو کہ پشاور ڈاٹ کوم پر شائع ہو چکی ہے ،
باذوق قارئین کی نذر ادھر پیش کرتا ہوں
http://urdulook.info/imagehost/image.php?di=VN59

نگار
03-09-2013, 11:35 PM
میرے احساس کے ویراں چمن میں کیوں
بہاریں لوٹ آنا بھول بیٹھی ہیں ؟!۔


بہترین شاعری ارسال کرنے پہ آپ کا شکریہ

نورالعین عینی
03-10-2013, 02:07 AM
محترمہ نور العین عینی صاحبہ کا شکریہ انہوں نے اردو منظر پر اپنی شاعری سے ہمیں روشناس کرایا ،
کلام بے حد خوبصورت ہے ،شاعری میں سوچ اور لکھنے میں قلم کی گرفت ،الفاظ کا چناؤ ، اس سے اندازہ ہوتا ہے کہ جلد ہی ان کا دیوان طبع ہو گا ،

ان کی ایک اور غزل پیش خدمت ہے ،جو کہ پشاور ڈاٹ کوم پر شائع ہو چکی ہے ،
باذوق قارئین کی نذر ادھر پیش کرتا ہوں
http://urdulook.info/imagehost/image.php?di=VN59

بہت شکریہ جناب پسندیدگی اور خوبصورت تبصرے کے لیے۔۔۔
آپ نے میری غزل ڈیزائن کی اسکے لیے بہت مشکور ہوں کہ ہمارے عام سے خیالات کو
اتنا اعزاز بخشا

خوش رہیں

نورالعین عینی
03-10-2013, 02:11 AM
میرے احساس کے ویراں چمن میں کیوں
بہاریں لوٹ آنا بھول بیٹھی ہیں ؟!۔


بہترین شاعری ارسال کرنے پہ آپ کا شکریہ


شکریہ جی شاعری پسند کرنے کے لیے۔۔

ساجد پرویز آنس
05-31-2014, 08:21 PM
سلام عاجزانہ
محترمہ جناب نور العین عینی صاحبہ آپ کا کلام پڑھنے کا اتفاق ہوا ماشاءاللہ کیا خوب قلم چلایا ہے
محترمہ ہماری طرف سے اتنا اچھا کلام پیش داد قبول کیجئے
دراصل اب ہم دل کی بات بتاتے ہیں جب بھی ہم کوئی آزاد نظم پڑھتے ہیں تو ہمیں عجیب سا معلوم ہوتا یوں محسوس ہوتا ہے جیسے اس کلام میں کوئی بحر ہی نہ لیکن یہ بھی کیسے ممکن ہے کوئی بحر ہی نہ ہو
لہذا آپ سے گزارش ہے کہ ہمیں اس کی بحر سے آگاہی دیں تاکہ ہمارے علم میں اضافہ ہو کیونکہ ابھی ھم طفل مکتب ہیں
امید کرتے ہیں کہ آپ ہماری بات کا برا نہیں منائیں گی اور ہماری بات کا جواب ضرور دیں گی
دعا ہے اللہ آپ کو اور زور قلم عطا کرے ہمیں اپنی دعاؤں میں یاد رکھئے
فی امان اللہ

تانیہ
06-03-2014, 10:19 AM
بہت خوب عینی جی
داد قبول کیجئے اور امید کرتے ہیں مزید ایسے ہی اپنے خوبصورت کلام سے نوازتی رہیں گی