PDA

View Full Version : درد جب دل کی سلطنت میں قدم رکھتا ہے



نورالعین عینی
04-10-2013, 05:35 AM
اپنی ایک غزل نذرِمحفل۔۔۔۔۔

غزل

تلخئ غم ہے کہ زہراب میرے ہونٹوں پر
حرف جوں ماہئ بےآب میرے ہونٹوں پر

یوں ہوئے بےسروسامان تیری نگری میں
شکوہ آنے کو ہے بےتاب میرے ہونٹوں پر

درد جب دل کی سلطنت میں قدم رکھتا ہے
ضبط کہہ دیتا ہے آداب میرے ہونٹؤں پر

اجنبی !دل نے تیرے نام بھی کیا کیا رکھے
کیا مچلتے رہے القاب میرے ہونٹوں پر


یا میرے لب پہ تیرا نام ہے آیا ہمدم
یا کوئی کِھل گیا گلاب میرے ہونٹوں پر

حالِ دل ہم نے سنانا تھا کسی روز مگر
شرم رکھے رہی حجاب میرے ہونٹوں پر

ہم ہیں خود اپنی ہی کم مائیگی سے شرمندہ
کیوں رہے شکوۂ احباب میرے ہونٹوں پر

ہم جو بولیں تو کسی درد کی ،محرومی کی
تشنگی ہوتی ہے سیراب میرے ہونٹوں پر

تانیہ
04-10-2013, 05:12 PM
درد جب دل کی سلطنت میں قدم رکھتا ہے
ضبط کہہ دیتا ہے آداب میرے ہونٹؤں پر
واہ واہ

نگار
04-11-2013, 04:23 PM
بہترین شاعری ارسال کرنے پہ آپ کا بہت شکریہ

نورالعین عینی
04-17-2013, 04:58 PM
درد جب دل کی سلطنت میں قدم رکھتا ہے
ضبط کہہ دیتا ہے آداب میرے ہونٹؤں پر
واہ واہ


شکریہ تانیہ جی۔۔سلامت رہیں

نورالعین عینی
04-17-2013, 04:59 PM
بہترین شاعری ارسال کرنے پہ آپ کا بہت شکریہ
شکریہ جناب۔۔۔کلام پسند کرنے کے لیے

باغی
04-22-2013, 01:39 AM
حالِ دل ہم نے سنانا تھا کسی روز مگر
شرم رکھے رہی حجاب میرے ہونٹوں پر
واہ بہت خوب۔۔ ماشاءاللہ

نورالعین عینی
05-19-2013, 10:53 PM
حالِ دل ہم نے سنانا تھا کسی روز مگر
شرم رکھے رہی حجاب میرے ہونٹوں پر
واہ بہت خوب۔۔ ماشاءاللہ
شکریہ جناب پسندیدگی کے لیے
سلامت رہیں