PDA

View Full Version : الیکشن کمیشن نے سیاستدانوں کو ذاتی تنقید سے منع کر دیا



بےباک
04-27-2013, 07:25 AM
الیکشن کمیشن نے سیاستدانوں کو ذاتی تنقید سے روک دیا، سندھ میں تبادلوں اور تقرر پر پابندی 26 اپریل 2013


اسلام آباد(آئی این پی) الیکشن کمیشن نے ایوان صدر کے ترجمان کی جانب سے صدر مملکت آصف علی زرداری کے خلاف ن لیگ سمیت بعض سیاسی جماعتوں کی مخالفانہ بیان بازی اور الزام تراشی کے بارے میں شکایت کا نوٹس لیتے ہوئے سیاسی رہنمائوں اور انتخابی امیدواروں کوہدایت کی ہے کہ وہ ایک دوسرے پر ذاتی تنقید اور الزام تراشیوں سے گریز کریں ورنہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جا سکتی ہے۔ جمعہ کو الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ایک اعلامیہ کے مطابق کمیشن نے انتخابی امیدواروں کو انتخابی مہم اور جلسوں کے دوران ایک دوسرے پرکیچڑ اچھالنے او رذاتی تنقید پر مبنی بیانات اور تقاریر سے روکتے ہوئے کہا ہے کہ ذاتی تنقید اور الزام تراشی انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ہے۔ اس لیے تمام امیدواروں کو ہدایت کی جاتی ہے کہ وہ ایک دوسرے پر ذاتی حملے نہ کریں اگر آئندہ ذاتی تنقید اور الزام تراشی کی گئی تو انتخابی قوانین اور قواعد کے مطابق ایسے امیدواروں کے خلاف کارروائی کی جائے گی ۔ واضح رہے کہ ایوان صدر کے ترجمان فرحت اللہ بابر نے الیکشن کمیشن جا کر سیکرٹری اشتیاق احمد خان سے ملاقات کی تھی اور چیف الیکشن کمشنر کے نام ایک خط ان کے حوالے کیا تھا جس میں کمیشن سے درخواست کی گئی تھی کہ (ن) لیگ اور بعض سیاسی جماعتوں کی جانب سے صدر زرداری کے خلاف الزام تراشیوں کا نوٹس لیا جائے ۔ دوسری جانب الیکشن کمیشن نے سندھ میں سیاسی بنیادوں پر تقرراور تبادلوں کا نوٹس لیتے ہوئے سندھ بھر میں بیورو کریسی اور دیگر سرکاری ملازمین کے تقرر اور تبادلوں پر پابندی عائد کر دی۔ جمعہ کو نوٹیفکیشن کے تحت 2 اپریل کو جاری کیا گیا نوٹیفکیشن واپس لے لیا گیا ہے جس میں کمیشن کی جانب سے صوبائی حکومت کو اختیار دیا گیا تھا کہ وہ صوبے میں آزادانہ او رغیر جانبدارانہ انتخابات کا انعقاد یقینی بنانے کے لیے ضروری تقرر اور تبادلے کر سکتی ہے۔ کمیشن کے نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ یہ پابندی سیاسی جماعتوں کی جانب سے نگران حکومت کی جانب سے کی گئی سیاسی تقرر اور تبادلوں کی شکایات موصول ہونے پر عائد کی گئی تاہم اگر کوئی ضروری تقرر یا تبادلہ ناگزیر ہوا تو الیکشن کمیشن کی اجازت سے کیا جا سکے گا۔