PDA

View Full Version : وزن کم کریں صحت نہیں



محمدمعروف
05-02-2013, 09:33 AM
زندگی میں ہر چیز کا ایک وقت ہوتا ہے۔ جس طرح زمین کے اندر بیج بونے کا وقت ہوتا ہے۔ وہ اپنے وقت سے پہلے اُگ سکتا ہے نہ وہ وقت سے پہلے پودا بن سکتا کیونکہ وقت کا دورانیہ بہت اہمیت رکھتا ہے۔ ہر چیز کو نیچرل وقت دیا جائے تو ہی فائدہ ہوتا ہے۔ لیکن ہم اپنی جلد بازی سے نہ صرف نقصان اٹھاتے ہیں بلکہ ڈھیر سی مایوسی کا شکار ہو جاتے ہیں۔

اس مایوسی سے بچنے کے لیے ہمیں چاہیے کہ اپنے ’’ارادوں‘‘ اور ’’پلان‘‘ کو پورا وقت دیں۔ وزن کی کمی کے لیے بھی کوئی شارٹ کٹ نہیں ہے کہ جسم پر جتنااضافی وزن ہے وہ راتوں رات کاٹ کر الگ کر دیا جائے۔ خواہش اپنی جگہ مگر نہ تو ہماری زیادہ کھانے کی شدید خواہش قابو میں آتی ہے اور نہ بیکری آئٹمز دیکھ کر آنکھوں میں چمک کم ہوتی ہے۔ انکار کرنے کا تو رواج ہی نہیں ہے۔ اسی لیے وزن نہ تو قابو میں آتا ہے اور نہ مرضی سے کم ہوتا ہے۔

آپ سب قارئین کے لیے اس ماہ کچھ ایسی چیزیں اور اہم باتیں شیئر کروں گی تا کہ آپ کو اندازہ ہو سکے کہ آپ کیا کھا رہے اور کتنا کھا رہے ہیں اور اس میں کیلوریز کتنی ہیں۔نیز اس کا آپ کی صحت پر کیا اثر ہو رہا ہے۔ آپ کو اپنے قد اور وزن کے مطابق کتنی کیلوریز لینی ہیں۔ یہ ضرور معلوم کر کے رکھا کریں۔

سبزیاں سلاد میں ۲ کیلوریز فی چھٹانک، ۶ لحمیات فی چھٹانک، معمولی مقدار چکنائی اور نشاستہ ۰ئ۱ فی چھٹانک ہوتا ہے۔ لوکی : کیلوریز ۴ لحمیات، ۲ئ۰ چکناہٹ معمولی مقدار، کاربوہائیڈریٹس ۱۲۰ چھٹانک۔ کھنب : کیلوریز ۴ پروٹینز، ۰ئ۱ چکناہٹ معمولی مقدار، کاربوہائیڈریٹس ۰ئ فی چھٹانک۔ پیاز کچا : کیلوریز ۱۴ پروٹینز، ۶ئ۱ فیٹس معمولی مقدار، کاربوہائیڈریٹس، ۰ئ۳ چھٹانک۔ مٹر تازہ کچے : کیلوریز ۲ئ۱ فیٹس، ۶۰ پروٹینز، ۲ئ۱۲ کابورہائیڈریٹس، ۴ئ۲۸ فی چھٹانک۔ مٹر اُبلے : کیلوریز ۲۸ پروٹینز، ۴ئ۲ فیٹس، ۰ کاربوہائیڈیٹس، ۴ئ۲ فی چھٹانک۔ آلو کچے : کیلوریز ۵۲ پروٹینز، ۲ئ۱ فیٹس معمولی مقدار، کاربوہائیڈریٹس ۸ئ۱۱ ۔ آلو اُبلے : کیلوریز ۲۴ پروٹینز، ۱ فیٹس معمولی مقدار، کاربوہائیڈریٹس ۲ئ۱۰ فی چھٹانک۔ آلو کے چپس : کیلوریز ۴۲ پروٹینز، ۲ئ۲ فیٹس، ۲ئ۵ کاربوہائیڈریٹس، ۲ئ۱۱ فی چھٹانک۔ لوکی : کیلوریز ۱۰ پروٹینز، ۲ئ۳ فیٹس، کاربوہائیڈریٹس ۰ئ۲ فی چھٹانک۔ مولی : کیلوریز ۸ پروٹینز، ۶ئ۰ فیٹس، کاربوہائیڈریٹس ۸ئ۰ فی چھٹانک۔ شکر قندی ابلی ہوئی کیلوریز ۴۸ پروٹینز، ۶ئ۰ فیٹس بہت کم، کاربوہائیڈریٹس ۶ئ۱ فی چھٹانک۔ اُبلی ہوئی پالک : کیلوریز ۸ پروٹینز، ۶ئ۰ فیٹس، کاربوہائیڈریٹس ۸ئ۰ فی چھٹانک۔ اُبلے ہوئے شلجم : کیلوریز ۶ پروٹینز، ۴ئ۰ فیٹس، کاربوہائیڈریٹس ۴ئ۱ فی چھٹانک۔ کچے ٹماٹر : کیلوریز ۸ پروٹینز، ۶ئ۰ فیٹس، کاربوہائیڈریٹس ۶ئ۱ فیٹس فی چھٹانک۔ بند گوبھی : کیلوریز ۱۴ پروٹینز ۸ئ۱ فیٹس، کاربوہائیڈریٹس ۸ئ۱ ۔ گاجر کچی : کیلوریز ۱۲ پروٹینز، ۴ئ۰ فیٹس، کاربوہائیڈریٹس ۰ئ۳ فی چھٹانک۔ کھیرا : کیلوریز ۶ پروٹینز، ۶ئ۰ فیٹس، کاربوہائیڈریٹس ۰ئ۱ فی چھٹانک۔

چھٹانک سبزیوں کی کیلوریز آپ کے سامنے ہے اور ان کی غذائیت بھی سامنے ہے۔ بیکری کی مصنوعات بن کیلوریز ۱۷۸۔ ۰ئ۵ ،فیٹس۴ئ۳ ، کاربوہائیڈریٹس ۴ئ۳۱ ۔ چاکلیٹ کیک : کیلوریز ۲۵۳ پروٹینز، ۲ئ۳ فیٹس، ۲ئ۱۳ کاربوہائیڈریٹس ۔ کیک میوے دار: کیلوریز ۲۸۰ ،پروٹینز۸ئ۱ ،فیٹس، ۴ئ۱۱ ،کاربوہائیڈریٹس ۴ئ۳۴ ۔ پیسٹری : کیلوریز ۲۰۸ ، پروٹینز۸ئ۱ ، فیٹس۶ئ۸ ، کاربوہائیڈریٹس ۰ئ۳۴ ۔ سوئس رول : کیلوریز ۱۵۴ ، پروٹینز ۰ئ۳ ، فیٹس ۴ئ۱ ، کاربوہائیڈریٹس ۶ئ۳۱ ۔ کافی: کیلوریز ۲۴۲ ، پروٹینز ۲ئ۷ ، کاربوہائیڈریٹس ۲ئ۱۶ ۔ ہارلکس: کیلوریز ۲۲۸ ، پروٹینز صفر، فیٹس صفر، کاربوہائیڈریٹ صفر۔

موٹاپے سے لڑکیوں میں ہائی بلڈپریشر

امریکا میں حال ہی میں کی گئی ایک تحقیق کے نتائج بے حد تو توجہ طلب ہیں۔ خاص طور پر نوجوان لڑکیوں کے لیے اس میں سوچنے کی کئی باتیں ہیں۔ اس تحقیق کے مطابق لڑکوں کی نسبت نوجوان لڑکیوں میں موٹاپے کے باعث بلند فشارِ خون میں مبتلا ہونے کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے۔ بلند فشارِ خون آگے جا کر امراضِ قلب اور دل کے دورے کی وجہ بنتا ہے۔ سترہ سو نوجوان پر کی گئی تحقیق سے پتا چلا ہے کہ لڑکوں کی نسبت لڑکیوں میں بلند فشارِ خون کے امکانات تین گنا تھے۔

برٹش ہارٹ فائونڈیشن نامی تنظیم کے ترجمان کا نے ایک نئی بات کہی ہے کہ برطانیہ میں اس وقت ہر تیسرا نوجوان موٹاپے کا شکار ہے۔ تحقیق کے دوران ضلعی سطح پر اسکولوں میں کیے گئے سرورے میں ۱۳ سے ۷۱ برس کے درمیان کے نوجوانوں کے فشارِ خون کا جائزہ اور طبی معائینے کیے گئے۔ ان کے قد اور وزن کے تناسب کا ریکارڈ بنایا گیا جسے ’’باڈی ماس انڈیکس‘‘ یا بی ایم آئی کہا جاتا ہے۔ ان نوجوانوں میں دو طرح کے خون کا دبائو پایا گیا۔

ایک ڈیاسٹولیک پریشیر جس میں شریانوں میں دبائو کم رہا۔ دوسری قسم سیسٹولیک بلڈ پریشر تھی جس میں خون کا دبائو زیادہ ہوتا ہے۔ اس دوران جب دل کی دھڑکن بڑھتی ہے تو شریانوںمیں خون کا بہائو تیز ہو جاتا ہے۔ سیسٹولیک پریشیر کی زیادتی امراضِ قلب اور دل کے دورے کی وجہ بنتی ہے۔اللہ تعالیٰ آپ سب کو اپنی حفاظت میں رکھے۔ علم، تحقیق، جستجو اور معلومات سبھی ہمارے لیے نعمت کے درجے میں ہیں، نعمت کا حق یہ ہے کہ اسے سمجھا جائے اور اس میں اپنے لیے راستہ نکالا جائے۔
نو شین ناز
بشکریہ:
http://urdudigest.pk/2013/02/wazan-kam-karain-sehat-nahi-2/#

سیما
05-03-2013, 12:55 AM
بہت شکریہ
آپ نے کافی مہنت کر کے لکھا :290::popcorn::treeswing:

محمدمعروف
05-03-2013, 09:50 AM
بہت شکریہ
آپ نے کافی مہنت کر کے لکھا :290::popcorn::treeswing:

افسوس آپ نے محنت لکھنے کیلئے بھی محنت نہیں کی

محمدمعروف
05-03-2013, 09:50 AM
میں نے یہ سار کچھ صرف چند سیکنڈ میں کیا ہے ۔