PDA

View Full Version : موبائل فون کی حیرت انگیز سروس: ناقابل تردیدحقیقت



گلاب خان
12-14-2010, 09:10 PM
حال ہی میں موبائل فون کی ایسی حیرت انگیز خدمات منظر عام پر آئی ہیں جس پر یقین کرنا محال ثابت ہورہا ہے۔ ہالی ووڈ کی ’ٹرمینٹر‘ سیریز فلموں جس طرح فلم کا مرکزی کردار جب بھی کسی فرد یا چیز کی طرف دیکھتا ہےتو اس کی نگاہوں کے سامنے اس خاص چیز کے بارے میں تمام تر تفصیلات لکھی ہوئی آجاتی ہیں۔بالکلن اسی طرح موبائل فون کمپنیوں نے یہ سہولت اسمارٹ فونوں میں فراہم کروانے کا منصوبہ تیار کیا ہے۔حالانکہ اسی طرح کی سہولت امریکی فائٹر جیٹ پائلٹ بھی استعمال کرتے ہیں مگر اب جاپانی موبائل فون کمپنیوں نے یہ فیچراسمارٹ فونوں میں فراہم کرنے کا تہیہ کرلیا ہے۔ اس کے ذریعے آپ اپنے ارد گرد موجود چیزوں اور جگہوں کے بارے میں تفصیلات حاصل کرسکتے ہیں۔ اس سہولت کو Augmented Realityیا اضافہ شدہ حقیقت کا نام دیا گیا ہے۔
فرض کریں کہ آپ نے ایک انتہائی جدید عینک لگا رکھی ہے اور جیسے ہی آپ اپنے ارد گرد موجود چیز کے بارے میں تفصیلات حاصل کرنا چاہتے ہیںتوآپ کی نظروں کے سامنے بالکل ٹرمینیٹر کی طرح اس خاص چیز کے بارے میں مطلوبہ معلومات لکھی نظر آنے لگتی ہیں کہ آپ کون سی عمارت کو دیکھ رہے ہیں‘اس کی کتنی منزلیں ہیں اور اس میں کون کون سے دفاتر قائم ہیں وغیرہ وغیرہ۔ بالکل اسی طرح کی سروس جاپان کی دو بڑی موبائل فون کمپنیوں نے اپنے لاکھوں صارفین کو فراہم کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔موبائل فون انسانی زندگی کا ایک بنیادی حصہ بنتے جا رہے ہیںBildunterschrift: Großansicht des Bildes mit der Bildunterschrift: موبائل فون انسانی زندگی کا ایک بنیادی حصہ بنتے جا رہے ہیں لیکن عینک کی جگہ سمارٹ فون کی سکرین اور کیمرہ استعمال ہوگا جبکہ معلومات پر مبنی ایک وسیع آن لائن ڈیٹابیس اس مقصد کے لئے استعمال کی جارہی ہوگی۔ اس کا مقصد دراصل عام انسان کو آسانیاں فراہم کرنے کے لئے انٹرنیٹ کی سہولت سے بھرپور فائدہ اٹھانا ہے۔
جاپان میں موبائل فون سروس فراہم کرنے والی سب سے بڑی کمپنی NTT DoCoMo اگلے ماہ یعنی ستمبر میں "Chkkan Nabi" یعنی ’وجدانی معلومات‘ کے نام سے نئی سروس متعارف کرانے کا ارادہ رکھتی ہے۔ اس کے ذریعے موبائل فون صارفین ٹوکیو، اوساکا اور دیگربڑے جاپانی شہروں میں نہ صرف اپنا مطلوبہ راستہ باآسانی تلاش کرسکیں گے بلکہ دیگر اضافی معلومات بھی حاصل کرسکیں گے۔
این ٹی ٹی ڈوکومو کے ایک اہلکار نے اس سروس کے حوالے سے بتایا: " اگر آپ کسی بینک کی تلاش میں ہیں یا پھر آپ سپر مارکیٹ یا ریسٹورنٹ تک پہنچنا چاہتے ہیں، تو آپ صرف اپنے موبائل فون کیمرے کے ذریعے کسی سڑک، عمارت یا اپنے ارد گرد کسی خاص حصے کو فوکس کیجئے اور آپ کے موبائل کی اسکرین پر آپ کی مطلوبہ معلومات آجائیں گی۔ فرض کریں آپ نے کسی خاص ریسٹورینٹ تک پہنچنا ہے تو آپ کے موبائل اسکرین پر اس کا فاصلہ، سمت، کھلنے کے اوقات وغیرہ نمودار ہوجائیں گے۔ اور تو اور اس ریسٹورینٹ میں اس خاص وقت میں کھانے پینے کے لئے کیا کچھ دستیاب ہے، یہ تمام تفصیلات بھی آپ جان سکتے ہیں۔ مزید یہ کہ اس ریسٹورینٹ تک پہنچنے کے لئے نقشہ بھی آپ دیکھ سکتے ہیں۔"ٹرمینیٹر فلم میں یہ روبورٹس کو ایسی ہی ٹیکنالوجی سے چیزوں کا مشاہدہ کرتے دکھایا گیا تھاBildunterschrift: Großansicht des Bildes mit der Bildunterschrift: ٹرمینیٹر فلم میں یہ روبورٹوں کو ایسی ہی ٹیکنالوجی سے چیزوں کا مشاہدہ کرتے دکھایا گیا تھا۔اس سروس کے لئے اب تک جاپان بھر میں چھ لاکھ مختلف مقامات کی تفصیلات جمع کی جاچکی ہیںجن میں دکانیں، ریسٹورینٹ، ٹرین اسٹیشنز وغیرہ شامل ہیں۔ موبائل صارف اپنی ضرورت کے مطابق ان تمام مقامات کے بارے میں تفصیلات معلوم کرسکتے ہیں۔
جاپان میں کمپیوٹر نقشے تیار کرنے والی ایک کمپنی Zerin کے ساتھ مل کر تیار کی جانے والی اس ٹیکنالوجی میں گلوبل پوزیشنگ سسٹم کے علاوہ نہایت جدید کمپیوٹر سوفٹ ویئر کا استعمال کیا گیا ہے جس کی مدد سے ارد گرد اصل چیزوں پر ان سے متعلق معلومات پر مبنی ورچوئل ٹیگز نمودار ہوجاتے ہیں۔
دنیا بھر میں بہت سے موبائل فون کمپنیاں اسی طرح کی ملتی جلتی سروسز فراہم کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ مثال کے طور پر معروف کمپنی نوکیا ایک مفت سروس فراہم کرنے والی ہے، جس کا نام ’پوائنٹ اینڈ فائنڈ‘رکھا گیا ہے۔ اس میں بھی آپ اپنے موبائل فون کا کیمرہ کسی خاص چیز کی طرف کرکے اس کے بارے میں معلومات حاصل کرسکتے ہیں۔ اس سروس میں آپ مختلف مصنوعات پر درج بار کوڈز کو بھی سکین کرسکتے ہیں۔ جس کے بعد آپ نہ صرف ان کی قیمت، اس کے اجزاءبلکہ اس چیز کے بارے میں لوگوں کی رائے جاننے کے ساتھ ساتھ اسے اپنی شاپنگ لسٹ میں شامل کرسکتے ہیں۔
'ایپل پیل' اور آئی پوڈ:موبائل فون کی دنیا بھی حیرتوں کی دنیا ہے۔ نت نئے ڈیزائن صارفین کو حیرت زدہ کئے ہوئے ہیں۔ کہا جاتا ہے کہ ایپل آئی فون نے موبائل فون کی دنیا کو ایک نئی جہت دی ہے۔اس کے باوجودآئی فون فور میں سگنلوںکے مسئلے سے ایپل پریشان ہے۔اس سلسلے میںکمپیوٹر اور آئی فون تیار کرنے والی کمپنی ایپل نے جب کہا تھا کہ اس کے متعارف کرائے گئے آئی فون فور میں سگنلز کا غائب ہو جانا دراصل ڈسپلے کا مسئلہ ہے مگر حقیقت میں شاید ایسا ہے نہیں۔
دریں اثناءفون سازکمپنی نوکیا نے آئی فون بنانےوالی امریکی کمپنی ایپل پرٹیکنالوجی کی چوری کا الزام لگایا ہے اور امریکی عدالتوں سے رجوع کرنے کا اعلان کیا ہے۔ نوکیا کے مطابق نیا آئی فون اور آئی پیڈ چوری شدہ ٹیکنالوجی سے بنائے گئے ہیں۔
یہاں یہ بھی بتاتے چلیں کہ موبائل فون کی ایجاد اور اس کا استعمال عام ہونے کی وجہ سے برطانیہ میں سرخ رنگ کے اور دنیا بھر میں مشہور وہ ٹیلی فون بوتھ یا ’ریڈ فون باکسز‘ اب اپنی اہمیت کھو چکے ہیں، جو ماضی میں بگ بین کی طرح لندن شہر کی بھی پہچان تھے جبکہ تحفظ ماحول کی جرمن فیڈریشن نے شہریوں کو خبردار کیا ہے کہ وہ موبائل فون، انٹرنیٹ اور وائر لیس فون کے استعمال میں احتیاط سے کام لیں۔

تانیہ
12-21-2010, 09:59 PM
تھینکس فار شیئرنگ.....بہت خوب معلومات دیں