PDA

View Full Version : کیا آس لگائے بیٹھے ہو؟



جاذبہ
01-23-2014, 03:58 PM
کیا آس لگائے بیٹھے ہو.؟


جو ٹوٹ گیا، سو ٹوٹ گیا


کب اشکوں سے جڑ سکتا ہے


جو ٹوٹ گیا، سو چھوٹ گیا

تم ناحق ٹکڑے چن چن کر

دامن میں چھپائے بیٹھے ہو

شیشوں کامسیحا کوئی نہیں


کیا آس لگائے بیٹھے ہو.؟




فیض احمد فیض


http://1.bp.blogspot.com/-xNwZhXNI1JE/UbeXe0AYGAI/AAAAAAAAL94/RQyjysfst14/s320/Broken+Mirror.jpg

بےباک
01-23-2014, 05:04 PM
کب اشکوں سے جڑ سکتا ہے

جو ٹوٹ گیا، سو چھوٹ گیا
تم ناحق ٹکڑے چن چن کر
دامن میں چھپائے بیٹھے ہو
شیشوں کامسیحا کوئی نہیں

کیا آس لگائے بیٹھے ہو.؟





اچھی نظم ہے ، فیض احمد فیض کی شاندار شاعری ، واووووووووو
جزاک اللہ