PDA

View Full Version : میک اپ کے خطرناک اثرات



جاذبہ
02-19-2014, 11:06 AM
٭میک اپ کے خطرناک اثرات٭

یہ حقیقت اب خفیہ نہیں رہی کہ حُسنِ فانی کو بقائے دوام بخشنے کی خوش فہمی میں پوری دنیا بالخصوص یورپ، امریکہ اور بھارت میں سالانہ اربوں ڈالر خرچ کیے جا رہے ہیں۔
لیکن افسوس! ہزاروں خواہشوں کی طرح یہ خواہش بھی دم نکال دیتی ہے۔ زندہ رہتی ہے تو صرف کاسمیٹک انڈسٹری، جس کے زہریلے کیمیائی مادوں پر مشتمل میک اپ کا سامانِ بالآخر وجودِ زن کے رنگ میں بھنگ ڈال دیتے ہیں۔ پھر نہ بام پر آنے سے موسمِ گُل آتا ہے، نہ رنگِ پیرہن بھاتا ہے اور نہ ہی زلف لہرانے سے خوشبو آتی ہے۔ لیکن گلشن (انڈسٹری) کا کاروبار پھر بھی چلتا رہتا ہے۔
اِس حقیقت سے انکار ناممکن ہے کہ سبھی خواتین اپنے آپ کو خوبصورت بنانے کے لیے سینکڑوں جتن کرتی ہیں، اور یہ اُن کا حق بھی ہے۔ لیکن اگر میں یہ دعویٰ کروں کہ دنیا کی کوئی خاتون ایسی نہیں جو خوبصورتی کے لئے کاسمیٹکس کا استعمال نہ کرتی ہو تو اِس حقیقت سے انکار بھی ناممکن ہے۔
کیا آپ نے کبھی سوچا کہ آپ کے زیرِ استعمال کاسمیٹک شیمپو، کنڈیشنرز، مسکارا، سن اسکرین و موائسچرائزر لوشن اور لپ اسٹک وغیرہ میں کتنے خطرناک و جان لیوا، زہریلے کیمیائی مادے شامل ہیں؟ نہیں تو دل تھام لیں کہ ایک حالیہ سروے نے کاسمیٹک انڈسٹری پر تحقیق کے بعد بتایا ہے کہ ہمارے روزمرہ کے زیرِ استعمال درج ذیل اشیاء میں کتنے خطرناک کیمیکلز شامل ہیں اور ان کا متبادل کیا ہے۔

بال
بہت سے شیمپو اور کنڈیشنرز سلفیٹ (Sulfates) اور پیرابین (Parabens) نامی کیمیائی مادے پر مشتمل ہوتے ہیں جو ہارمونز کو متاثر کرنے کی انتہائی صلاحیت رکھتے ہیں۔
متبادل: روائتی نباتاتی مرکبات مثلاً: آملہ، ریٹھا، سکاکائی وغیرہ بہترین شیمپو و کنڈیشنرز ہیں۔

آنکھیں
چشمِ آہو کے لئے جانے کیا کچھ کیا جاتا ہے۔ پلکوں کی جھالر نمایاں کرنے کے لئے مسکارا ایک عام چیز ہے۔ جو مرکری (پارہ) اور تارکول پر مشتمل ہوتا ہے۔ اول الذکر دماغی ہارمونز کو ڈسٹرب کرتا ہے اور ثانی الذکر جہاں انکھوں کے دیکھنے کی صلاحیت کو متاثر کرتا ہے وہیں کینسر پیدا کرنے کا باعث بھی بنتا ہیں۔ آئی شیڈ Eye Shade کے لئے استعمال ہونے والا کیمیکل ڈائی اوگسین(Dioxane) کا تعلق بھی کینسر جیسی موزی بیماری سے ہے۔
متبادل: روائتی کاجل اور سرمہ بہترین متبادل ہیں۔

جِلد (Skin)
زیادہ تر مشہورِ زمانہ موائسچراز لوشن میں پیرا بینز (Para Bens) نامی کیمیائی مادہ لازمی شامل ہوتا ہے۔ جبکہ بہت سے دھوپ بچاﺅ لوشن (Sun screenes) میں اوکسی بینزوئن (Oxybenzone) لازمی جزو ہوتا ہے۔ یہ دونوں جسمانی ہارمونز میں خلل اندازی کا سبب بنتے ہیں۔
متبادل: خالص زیتون کا تیل بہترین قدرتی لوشن ہے۔

ہونٹ (Lips)
گلابی ہونٹ، خوبصورتی کا معیار ہیں۔ لیکن ٹھہریے! ہو سکتا ہے کے آپ کی پسندیدہ لپ اسٹک، سیسہ (Lead) اور BHA نامی زہریلے کیمیکل پر مشتمل ہو جو کہ طاقتور کینسر پیدا کرنے والے مادے ہیں۔

آخر میں نہایت سنجیدگی اور ادب سے اپنی تمام بہنوں سے گزارش کرونگی کہ بناؤ سنگار اور نین نقش کی دیکھ بھال کرنا اچھی بات ہے لیکن اتنا خیال رہے کہ آپ کا ہر قدم احکامِ الٰہی کے اندر رہتے ہوئے اُٹھے، کیونکہ ظاہری حُسن بھی تب ہی اچھا لگتا ہے جب باطن بھی صاف ہو، بقول شاعر۔۔!

حسنِ صورت چند روزہ، حسنِ سیرت مستقل
اُس سے خوش ہوتی ہیں آنکھیں، اِس سے دل

بےباک
02-19-2014, 05:29 PM
http://ummatpublication.com/2014/02/17/images/story5.gif

جاذبہ
02-20-2014, 11:35 PM
واہ بے باک جی بہت خوب انٹرویو شئیر کیا ہے آپ نے روحانہ صاحبہ کا ۔ بہت کار آمد اور مفید باتیں پتا چلیں ۔

تانیہ
02-22-2014, 12:18 AM
معلوماتی شیئرنگ ۔۔۔۔تھینکس