PDA

View Full Version : تِری آنکھوں میں فصلِ ہجر کیسے بو گیا کوئی؟



حبیب صادق
06-10-2014, 11:16 PM
تِری آنکھوں میں فصلِ ہجر کیسے بو گیا کوئی؟

مجھے اپنا بنا کر اب کسی کا ہو گیا کوئی
لہُو جیسے ہوئے ہیں اَشک تیرے کس طرح بولو ؟
بتایا ، چھید میرے دل کے اندر ہو گیا کوئی
سُنو جب چھو لیا آنچل کسی نے تو لگا کیسا ؟
لگا خوشبو کی بارش میں دُکھوں کو دھو گیا کوئی
سُنو اس درد نگری کا کوئی تو بھید بتلاؤ ؟
پلٹ کر پھر نہیں آیا وہاں پر جو گیا کوئی
بتاؤ ہجر میں کاٹے ہیں روز و شب بھلا کیسے؟
لگا ، کانٹوں پہ آنکھیں دھر کے جیسے سو گیا کوئی
بھلا وہ شخص پل بھر کو نظر اب کیوں نہیں آتا؟
سُنو ملنے کی خواہش میں کبھی کا کھو گیا کوئی
***

بےباک
06-11-2014, 05:46 AM
بتاؤ ہجر میں کاٹے ہیں روز و شب بھلا کیسے؟
لگا ، کانٹوں پہ آنکھیں دھر کے جیسے سو گیا کوئی
بھلا وہ شخص پل بھر کو نظر اب کیوں نہیں آتا؟
سُنو ملنے کی خواہش میں کبھی کا کھو گیا کوئی



واہ بھئی واہ ، کیا ذوق شاعری ہے آپ کا ، مان گئے آپ کو